fbpx

چکوال میں انسانیت سوز واقعہ کی ویڈیو وائرل ہونے پر مقدمہ درج،ملزم گرفتار

چکوال کے علاقہ چوکی بشارت کی حدود میں انسانیت سوز  واقع پیش آیا جس نے انسانیت کو شرما کر رکھ دیا۔

ضلع چکوال میں گزشتہ روز انسانیت سوز ہونے والے واقعہ کی ایف آئی آر جس میں ایک شخص پر ایسا تشدد کیا گیا جس سے الفاظ میں بیان نہیں کیا جا سکتا ،چکوال کے علاقہ چوکی بشارت کی حدود میں پیش آنے والا انسانیت سوز واقعہ کے بعد پولیس حکام نے واقعہ کا نوٹس لے لیا

آڑ کے رہائشی 30 سالہ مدثر کی بیوہ شمائلہ زوار سے شادی کی بات چل رہی تھی جس کا خاوند 4 سال قبل وفات پا گیا تھا اسی سلسلہ میں رشتہ کی بات کرنے کے غرض سے مدثر شمائلہ کے گھر پہنچا جہاں پہلے سے موجود شمائلہ کے رشتہ داروں نے مدثر کو پکڑ لیا اور گھسیٹ کر گھر کے اندر لے گئے جہاں اس کے کپڑے اتار کر مرچوں سے بھرا ڈنڈا اس کے نفس مخصوص برائے پاخانہ میں ڈال کر اسے اذیت دیتے رہے ،

غیر انسانی سلوک اور وائرل ویڈیو پر ڈی پی او چکوال محمد بن اشرف نے سخت نوٹس لیا، واقعہ میں ملوث 09 نامزد ملزمان کے خلاف فوری مقدمہ درج کرلیا گیا. ڈی پی او چکوال کا کہنا ہے کہ ملزمان کی فوری گرفتاری کے لیے 03 خصوصی ٹیمیں تشکیل دی گئیں.چکوال پولیس نے ریڈز کرکے 04 مرکزی ملزمان کو گرفتار کرلیا مرکزی گرفتار شدہ ملزمان میں خالد محمود ولد عبدالرزاق، ثاقب حسین ولد ساجد حسین، فیصل ریاض ولد محمد ریاض اور سلیمان منظور ولد منظور حسین شامل ہیں

ڈی پی او چکوال کا کہنا ہے کہ بقایا ملزمان کی گرفتاری کیلئے بھی ریڈ کئے جارہے ہیں جنکو بھی جلد ہی گرفتار کرکے انصاف کے کٹہرے میں کھڑا کیا جائیگا. انسانیت سوز واقعہ میں ملوث ملزمان کسی بھی رعایت کے مستحق نہیں اور نہ ہی انسان کہلانے کے لائق ہیں۔واقعہ میں ملوث ملزمان کو قانون کے مطابق قرار واقعی سزا دلوائی جائے گی۔

اچھی نوکری کا جھانسہ دے کر غیر ملکی لڑکی سے کیا گیا گھناؤنا کام

سرگودھا سے 151 لڑکیاں بازیاب،21 قحبہ خانوں سے ملیں،ڈی پی او کا سپریم کورٹ میں بیان

معذور لڑکی کی نعش قبر سے نکال کر بیحرمتی،ملزمان گرفتار نہ ہو سکے

50 ہزار میں بچہ فروخت کرنے والی ماں گرفتار

ایم بی اے کی طالبہ کو ہراساں کرنا ساتھی طالب علم کو مہنگا پڑ گیا