fbpx

چار ماہ سے زنجیروں میں جکڑا بچہ مدرسے سے بازیاب ،کون کون ہوا گرفتار

چار ماہ سے زنجیروں میں جکڑا بچہ مدرسے سے بازیاب ،کون کون ہوا گرفتار

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق پنجاب کے ضلع چکوال کی تحصیل تلہ گنگ میں قائم ایک مقامی مدرسہ میں چار ماہ سے زنجیروں میں جکڑے 14 سالہ طالب علم کو سٹی پولیس نے بازیاب کر کے مدرسہ کے انچارج قاری اور بچے کے والد کو گرفتار کر لیا

وزیراعلیٰ کی تلہ گنگ آمد پر ایسا کیا ہوا کہ صحافی بھی احتجاج پر مجبور ہو گئے

پولیس تھانہ سٹی نے اطلاع ملنے تلہ گنگ شہر میں قائم ایک مدرسہ میں چھاپہ مار کر زنجیروں سے جکڑے 14 سالہ طالب علم فیضان عامر کو بازیاب کرا کر مہتمم مدرسہ قاری رشید کو گرفتار کر لیا – طالب علم فیضان عامر کے مطابق وہ قاری رشید کے تشدد کے وجہ سے اس مدرسہ میں نہیں پڑھنا چاہتا تھاجس پر گزشتہ چار ماہ سے اس کو زنجیروں سے باندھ کر رکھا گیا – موقع سے گرفتار ہونے والے قاری رشید کا کہنا تھا کہ بچے کو اس کے والد کی مرضی سے زنجیروں میں جکڑا –

جیل جا کر بڑے بڑے سیدھے ہو جاتے ہیں، مریم نواز بھی جیل جا کر”شریف” بن گئیں

ن لیگی باز نہ آئے، عدالت میں بھی چوری.؟.مریم نواز کو عدالت نے کیا کہا؟

کاش چینی صدر کی تقلید میں 500 سیاسی شخصیات کو جیل بھیج سکتا ،وزیراعظم

قاری رشید کے بیان پر کہ بچے کو اس کے والد عامر اقبال کی مرضی پر زنجیروں سے جکڑا ہے – سٹی پولیس نے بچے کے والد عامر اقبال کو بھی گرفتار کر کے ان کےخلاف 342/109 دفعات کے تحت مقدمہ درج کر لیا

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.