fbpx

ایران کا سرکاری ٹی وی ہیک،روحانی پیشوا خامنہ ای کی پھانسی کا مطالبہ

تہران: ایران کے سرکاری براڈکاسٹنگ کارپوریشن کے ٹیلی وژن چینل کو ہیک کرکے مخالف رہنماؤں کی تصاویر نشرکرنے کے ساتھ ساتھ روحانی پیشوا خامنہ ای کی پھانسی کا مطالبہ کیا گیا۔

باغی ٹی وی :"ٹائمز آف اسرائیل "کے مطابق ایران کے سرکاری ٹیلی وژن پر اچانک حکومت مخالف عوامی مجاہدین گروپ کے رہنما مسعود رضوی اور ان کی اہلیہ مریم رضوی کی تصاویر نشر کی گئیں اسی دوران سرکاری چینل میں ایک کارٹون بھی دکھایا گیا جس میں روحانی پیشوا خامنہ ای کو سرعام پھانسی دینے کا مطالبہ کیا گیا تھا جب کہ پس پردہ ایک شخص کی آواز بھی سنائی دیتی ہے جو مسعود رضوی زندہ باد اور خامنہ ای مردہ باد کے نعرے لگا رہا ہے۔

مجاہدینِ خلق تحریک نے سرکاری ٹیلی وژن ہیک ہونے اور اپنے رہنما کی تصویر نشر ہونے پر کوئی تبصرہ نہیں کیا تاہم سوشل میڈیا پر ایک اکاؤنٹ سے ہیکرز نے ایرانی سرکاری ٹی وی کو ہیک کرنے کا اعتراف کیا گیا۔

پیرس میں مقیم” ایم ای کے” کے ترجمان، شاہین گوبادی نے دی ایسوسی ایٹڈ پریس کو بتایا: "ہمیں، آپ کی طرح، صرف اس مسئلے کے بارے میں مطلع کیا گیا تھا انہوں نے براہ راست ذمہ داری قبول کیے بغیر کہاکہ ایسا لگتا ہے کہ یہ MEK کے حامیوں اور حکومت کے ریڈیو اور ٹیلی ویژن اسٹیشنوں میں مزاحمتی یونٹوں نے کیا ہے انہوں نے اپنے دعوے کی تائید کے لیے کوئی ثبوت پیش نہیں کیا۔

یوکرین امریکہ اور نیٹو کے ہاتھ کا کھلونا بن گیا:روس : :خطے میں جنگ ہوئی تو…

ہیکر نے ایران کے سرکاری ٹیلی ویژن کی ایک بڑی خلاف ورزی کی نمائندگی کی، طویل عرصے سے یہ خیال کیا جاتا تھا کہ وہ اسلامی جمہوریہ کی انٹیلی جنس شاخوں، خاص طور پر اس کے سخت گیر پاسداران انقلاب کے ارکان کے زیر کنٹرول اور آپریٹ ہیں۔ ایسا واقعہ برسوں سے پیش نہیں آیا۔


ادھر ایران کے سرکاری چینل کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ چینل کو 10 سیکنڈ کے لیے ہیک کیا گیا سخت سیکیورٹی اور بروقت ردعمل کے باعث فوری طور پر چینل کا کنٹرول حاصل کرلیا گیا۔

امریکہ نے اپنے شہریوں کو متحدہ عرب امارات کا سفرکرنے سے روک دیا