fbpx

اسرائیل میں ایرانی بھرتی کی کوشش دہشت گردی، عوام ہوشیاررہیں، بینیٹ

تل ابیب: سوشل میڈیا پر خود کو یہودی ظاہر کرنے والے ایرانی ایجنٹ کو امریکی مخالف معلومات فراہم کرنے پر 5 اسرائیلی مرد اور ایک خاتون کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔

باغی ٹی وی : ٹائمز آف اسرائیل کے مطابق اسرائیلی سیکورٹی ایجنسی شِن بیت نے 5 اسرائیلیوں کو ایرانی ایجنٹ سے امریکا کی اندرونی معلومات بذریعہ سوشل میڈیا شیئر کرنے پر گرفتار کیا ہے۔

امریکہ سرحدوں سے فوج ہٹالے ورنہ نتائج سنگین ہوں گے، روس کی دھمکی

میڈیا رپورٹس میں پانچوں اسرائیلیوں کو ایران سے ہجرت کرکے آئے یہودی یا ان کی اولادوں میں سے بتایا گیا ہے شِن بیت کے مطابق جس ایرانی سے رابطہ رکھا گیا اس نے اپنا فیس بُک پر نام رام بود نامدار ظاہر کیا اور واٹس ایپ کے ذریعے رابطے میں رہتا تھا۔

اسرائیل کی داخلی سلامتی کی ذمہ دار سکیورٹی ایجنسی شین بیت کے مطابق ملزمان نے اسرائیل میں اسٹریٹجک لحاظ سے اہم مقامات کی تصاویرلی تھیں۔ان میں تل ابیب میں امریکی قونصل خانہ بھی شامل ہےانھوں نے سیاست دانوں کے ساتھ تعلقات استوار کرنے کی کوشش کی، مختلف مقامات پرسکیورٹی انتظامات کے بارے میں معلومات فراہم کیں اور دیگر جرائم کا ارتکاب کیا ہے۔

شِن بیت کا اپنے بیان میں کہنا تھا کہ یہ واقعہ اسرائیل میں جاسوسی نیٹ ورک قائم کرنے کے منصوبوں کا پردہ فاش کرتا ہے۔ بیان میں یہ بھی کہا گیا کہ جو مواد ایرانی ایجنٹ کو فراہم کیا گیا، اس میں تل ابیب میں امریکی سفارتی مشن، الیکشن کے پولنگ اسٹیشن، ایک شاپنگ مال اور وزارت داخلہ کی اندرونی تصاویر شامل تھیں۔

شین بیت کا کہنا تھا کہ اس جاسوسی رنگ کو چلانے والے ایرانی کارندے نے ایک ملزم کو اپنی فارسی زبان بہتربنانے اور اسرائیل کی دفاعی افواج کے انٹیلی جنس یونٹ میں شامل ہونے کے لیے قائل کرنے کی کوشش کی تھی۔

تین نوجوانوں سے شادی شدہ خاتون کا چوتھے’محبوب‘ پرجنسی زیادتی کامقدمہ،عدالت نے کیا فیصلہ سنایا؟

بیان میں یہ بھی بتایا گیا کہ 57 سالہ خاتون 4 سال سے ایرانی ایجنٹ سے رابطے میں تھیں اور ایک انفارمیشن کے بدلے 5000 ڈالرز وصول کیا کرتی تھیں۔ فراہم کی گئیں انفارمیشن میں فوجی تقریبات اور اپنے بیٹے کے فوجی شناختی کارڈ کی تصاویر بھی شامل تھیں۔

ایجنسی نے اس رنگ کے پس پردہ ایرانی کارندے کی شناخت رام بود نامدار کے نام سے کی ہے اس نے تہران میں مقیم یہودی ہونے کا ڈراما کیا تھا۔

شین بیت کے ایک عہدہ دار کے مطابق’’ایرانی انٹیلی جنس ایجنٹوں کی جانب سے اسرائیلی شہریوں تک پہنچنے کی کوششوں میں اضافہ ہواہے تاکہ ایسی انٹیلی جنس اکٹھی کی جا سکے جس کے ذریعے اسرائیل کے خلاف جنگ میں (ایران) کی مدد کی جاسکے‘‘۔

وزیراعظم نفتالی بینیٹ نے جاسوسی کا رنگ توڑنے کی کارروائی پرشین بیت کی تعریف کی ہے ایک بیان میں کہا کہ اسرائیل ایران کے خلاف مہم جاری رکھے ہوئے ہے ہم ایرانی پاسداران انقلاب کی جانب سے اسرائیلی شہریوں کی بھرتی کی واضح اور مسلسل کوششیں ملاحظہ کر رہے ہیں-

چین کو سبق سکھا دیا ہے،اب شاید وہ دوبارہ غلطی نہ کرے:بھارتی آرمی چیف

’ایرانی ایجنٹ نے 5 اسرائیلی خواتین کو کیسے بھرتی کیا‘؟

اسرائیل نے ایران کے لیے جاسوسی کے مقصد سے خواتین کو بھرتی کرنے کی ایرانی کوشش کا انکشاف کیا ہے اسرائیلی داخلی سلامتی سروس "شن بیٹ” کے مطابق مقامی میڈیا نےبدھ کو بتایا کہ رامبود نامدار نامی ایک ایرانی ایجنٹ نے دعویٰ کیا کہ وہ یہودی ہےاس نے اسرائیلی خواتین سے بات چیت کرنے اور انہیں انٹیلی جنس مشنز کے لیے بھرتی کیا۔

نامدار نے ان میں سے 5 خواتین کو سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ’فیس بک‘ کے ذریعے ان سے رابطہ کیا رابطوں کا مقصد ایران کے لیے خفیہ مشن انجام دینے کے لیے انہیں یار کرنا تھا ان خواتین نے وسطی اسرائیل میں فیس بک کے ذریعے نامدار رابطہ کیا مگر اس کے بعد نامدار نے انہیں وٹس ایپ کے ذریعے رابطہ کرنے کو کہا-

نامدار نے ان سے کئی بار ’ویڈیو کال‘ کے ذریعے بات بھی کی لیکن انہوں نے یہ کہتے ہوئے اپنا چہرہ دکھانے سے انکار کر دیا کہ ان کے فون کا کیمرہ ٹوٹ گیا ہے ان میں سے کچھ کو شبہ تھا کہ وہ ایرانی انٹیلی جنس افسر ہو سکتا ہے وہ اس سے بات کرتی رہیں اور پیسوں کے عوض اس کی درخواستیں پوری کرنے پر راضی ہو گئیں۔

شمالی کوریا کی ہائپرسونک میزائل تجربہ کرنے کی تصدیق،کم جونگ نے تجربے کا مشاہدہ کیا

شن بیٹ نے عندیہ دیا کہ اس آپریشن کو پولیس کے تعاون سے ناکام بنایا گیا، اور ان پانچ خواتین کو گرفتار کر لیا گیا جن سے اس وقت تفتیش جاری ہےان میں سے کچھ پر فرد جرم بھی عائد کی گئی ہے تاہم ملزمان کے وکیل کی جانب سے جمع کرائی گئی درخواست کے بعد عدالتی فیصلے کے ذریعے ان کے نام شائع کرنے سے روک دیا گیا تھا۔

بینیٹ کی عوام سے ہوشیاررہنے کی اپیل

اسرائیل کی جانب سے ایران کے لیے جاسوسی کی خاطرخواتین شہریوں کو بھرتی کرنے کی ایرانی کوشش کے انکشاف کے بعد وزیراعظم نفتالی بینیٹ نے ایک میٹنگ کی میں اسے ’دہشت گردی‘ کی کارروائی قرارد یا ہے-

بینیٹ نے جنرل سیکیورٹی سروس اور پولیس کے ارکان کی تعریف کی جس کے لیے انہوں نے ایک کامیاب آپریشن قرار دیا جس کی وجہ سے ملک کو نشانہ بنانے والی دشمنانہ دہشت گردی کی کارروائی کو ناکام بنایا گیا۔

سعودی عرب میں اونٹوں کے لئے دنیا کا پہلا اوپن ائیرلگژری ہوٹل توجہ کا مرکز بن گیا

انہوں نے مزید کہا کہ ان کا ملک ایران کے خلاف مسلسل حالت جنگ میں ہےایرانی پاسداران انقلاب کی جانب سے اسرائیلی شہریوں کو بھرتی کرنے کی کوششیں واضح ہو چکی ہیں انہوں نے شہریوں پر زور دیا کہ وہ چوکنا رہیں یہ کوششیں صرف سیکیورٹی اور انٹیلی جنس کے شعبے تک ہی محدود نہیں ہیں بلکہ ان میں اسرائیل اور اسرائیلی معاشرے پر اثر انداز ہونے کی کوششیں شامل ہیں جس کا مقصد ملک میں پولرائزیشن، تنازعات اور سیاسی استحکام کو غیر مستحکم کرنا ہے۔

انہوں نے شہریوں سے ان کوششوں کے خلاف ہوشیار رہنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ یہ ممکن ہے کہ آپ جو معلومات استعمال کرتے ہیں یا سوشل میڈیا کے ذریعے شیئر کرتے ہیں ان کے پیچھے ایرانی ہیں۔

واضح رہے کہ اسرائیل اور ایران میں طویل عرصے سے ایک دوسرے سے مخاصمت چل رہی ہے اور تل ابیب تہران کو اپنے وجود کے لیے سب سے بڑا خطرہ سمجھتا ہے دونوں ملک برسوں سے ایک دوسرے کے خلاف باقاعدگی سے حملوں کی دھمکیوں کا تبادلہ کرتے رہتے ہیں۔اس کے علاوہ ایک دوسرے کے خلاف تخریب کاری کے حملوں کے الزامات بھی لگاتے رہتے ہیں بھرتی کی یہ کوشش دونوں ممالک کےدرمیان بالواسطہ تنازعہ کےاندر آتی ہے جس نے حالیہ برسوں میں ایک سائبر کردار اختیار کر لیا ہےاس کا رخ سائبر بحری قزاقی اور جہازوں کی جنگ کے ساتھ ساتھ ایران میں حساس مقامات پر کچھ حملوں کی طرف بڑھ گیا ہے۔

تائیوان کا جدید ترین ایف 16طیارہ لاپتا، تلاش جاری

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!