fbpx

اٹلی کا ایمیزون اور ایپل پر200 ملین یوروجرمانہ عائد

اٹلی نے ایمیزون اور ایپل پرغیرمسابقتی رویہ اپنانے کے الزام میں 225 ملین ڈالر کا جرمانہ عائد کردیا ہے۔

باغی ٹی وی : "اے پی” کے مطابق اٹلی کی اینٹی ٹرسٹ اتھارٹی واچ ڈاگ نے امریکی ٹیک کمپنیوں ایپل اورایمیزون کو ایپل اور بیٹس کی مصنوعات کی فروخت میں مسابقتی مخالف تعاون کے الزام میں مجموعی طور پر 200 ملین یورو($ 225 ملین) سے زیادہ کا جرمانہ کیا ہے۔

اطالوی مسابقتی اتھارٹی نے منگل کو کہا کہ ایک تحقیقات سے پتا چلا ہے کہ ایمیزون اور ایپل کے درمیان 2018 میں ایک معاہدہ ہوا، جس کے تحت دونوں کمپنیوں نے ایک دوسرے کے ساتھ مصنوعات کی فروخت میں مقابلہ نہ کرنےکا فیصلہ کیا تھا۔

جس کی وجہ سے اٹلی میں ایمیزون کی ویب سائٹ پر صرف مخصوص ری سیلرز کو اشیاء فروخت کرنے کی اجازت دی گئی۔ اطالوی حکام کے مطابق، اس عمل سے مارکیٹ میں غیرمسابقتی روحجان کو فروغ ملا ہے۔

واچ ڈاگ نے کہا کہ کمپنیوں کے درمیان معاہدے تحت صرف منتخب بیچنے والوں کو ہی ایمازون کی ویب سائٹ پر ایپل اور بیٹس کی مصنوعات فروخت کرنے کی اجازت دی گئی تھی۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ یورپی یونین کے قوانین کی خلاف ورزی ہے اور قیمتوں پر مسابقت کو متاثر کرتا ہے۔

واچ ڈاگ نے ایپل پر 134.5 ملین یورو ($151.32 ملین) جرمانہ اور ایمیزون پر 68.7 ملین یورو ($77.29 ملین) جرمانہ عائد کیا اس نے انہیں پابندیاں ختم کرنے اور ری سیلرز کو "غیر امتیازی انداز” میں رسائی دینے کا بھی حکم دیا۔

ایپل نے 3 ماہ بعد ہی شیاؤمی سے دنیا کی دوسری بڑی کمپنی کا اعزاز چھین لیا

دوسری جانب ایپل اور ایمیزون دونوں نے کہا کہ وہ اپیل کریں گے۔

ایمیزون نے کہا کہ "مجوزہ جرمانہ غیر متناسب اور بلاجواز ہے۔” "ہم ICA کی اس تجویز کو مسترد کرتے ہیں کہ ہمارے اسٹور سے فروخت کنندگان کو چھوڑ کر ایمیزون کو فائدہ ہوتا ہے، کیونکہ ہمارا کاروباری ماڈل ان کی کامیابی پر انحصار کرتا ہے۔

ایپل کمپنی نے کہا کہ وہ اطالوی مسابقتی اتھارٹی کا احترام کرتی ہے "لیکن یقین ہے کہ ہم نے کچھ غلط نہیں کیا ہے۔”

ایپل نے کہا کہ منتخب ری سیلرز کے ساتھ مل کر کام کرنے سے صارفین کی حفاظت میں مدد ملتی ہے کیونکہ یہ یقینی بناتا ہے کہ مصنوعات حقیقی ہیں۔

ایپل نے کہا، "غیر حقیقی مصنوعات کمتر تجربہ فراہم کرتی ہیں اور اکثر خطرناک ہو سکتی ہیں۔” "ہمارے صارفین حقیقی مصنوعات کی خریداری کو یقینی بنانے کے لیے، ہم اپنے ری سیلر پارٹنرز کے ساتھ مل کر کام کرتے ہیں اور ہمارے پاس دنیا بھر کے ماہرین کی ٹیمیں ہیں جو قانون نافذ کرنے والے اداروں، کسٹمز اور تاجروں کے ساتھ مل کر اس بات کو یقینی بنانے کے لیے کام کرتی ہیں کہ ایپل کی صرف حقیقی مصنوعات ہی فروخت کی جائیں۔”

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!