کلبھوشن یادیو نے نظر ثانی کی اپیل دائر کرنے سے انکار کیا،ایڈیشنل اٹارنی جنرل

0
45

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق ایڈیشنل اٹارنی جنرل احمد عرفان نے کہا ہے کہ کلبھوشن یادیو پاکستان کے خلاف سرگرمیوں میں ملوث رہا،

اسلام آباد میں ایڈیشنل اٹارنی جنرل احمد عرفان اور ڈی جی جنوبی ایشیا نے نیوز کانفرنس کی ہے،احمد عرفان کا کہنا تھا کہ بھارتی ایجنٹ نے تخریب کاری کی کارروائیوں میں ملوث ہونے کا اعتراف بھی کیا،عالمی عدالت کے فیصلے کے مطابق پاکستان نے اقدامات کیے، کلبھوشن یادیو نے نظر ثانی کی اپیل دائر کرنے سے انکار کیا،پاکستان کا قانون فیصلے کااز سرنو جائزہ لینے کی اجازت دیتا ہے،

احمد عرفان کا مزید کہنا تھا کہ انسانی ہمدردی کی بنیادپر پاکستان نے کلبھوشن کی اہلخانہ سے ملاقات کروائی،پاکستان عالمی عدالت انصاف کے فیصلے پر عمل درآمد کے لیے تیار ہے,بھارت کودوسری قونصلررسائی کی پیشکش کی،پاکستان میں قانون کے مطابق بھارتی وکیل کلبھوشن کا مقدمہ نہیں لڑ سکتا،پاکستان بھارتی قونصلیٹ کوکئی بار کلبھوشن کی اپیل کے لیے خط لکھ چکاہے،

ڈی جی جنوبی ایشیا زاہد حفیظ کا کہنا تھا کہ پاکستان اپنی عالمی ذمہ داریوں سےبخوبی آگاہ ہے،پاکستان کا قانون فیصلے کاازسرنوجائزہ لینے کی اجازت دیتاہے،

واضح رہے کہ بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کو 3 مارچ 2018ء کو پاکستان ایران سرحدی علاقے سے گرفتار کیا گیا تھا، یہ بھارتی جاسوس بھارتی نیوی کا حاضر سروس افسر اور ”را“ کے ایجنٹ کے طور پر کام کر رہا تھا۔ کلبھوشن یادیو کی گرفتاری پر حکومت پاکستان نے بھارتی سفیر کو طلب کرکے انڈین جاسوس کے غیر قانونی طور پر پاکستان میں داخلے اور کراچی اور بلوچستان میں دہشت گردی میں ملوث ہونے پر باضابطہ احتجاج کیا۔ اس کے بعد کلبھوشن یادیو کے اعترافی بیان کی ویڈیو جاری کی گئی۔

کلبھوشن کی گرفتاری کے ایک ماہ بعد اپریل 2018ء میں اس کے خلاف دہشتگردی کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا، جس کے بعد پاکستان کی فوجی عدالت نے کلبھوشن یادیو کو دہشتگردی کی سرگرمیوں میں ملوث ہونے کا مجرم قرار دیتے ہوئے سزائے موت سنا دی۔

گزشتہ برس مئی میں بھارت نے اپنے جاسوس کلبھوشن یادیو کی پھانسی رکوانے کے لیے عالمی عدالت انصاف میں درخواست دائر کی تھی۔ 15 مئی کو بھارتی درخواست پر سماعت کا آغاز ہوا،نیدرلینڈز کے شہر دی ہیگ میں قائم عالمی عدالت اںصاف نے بھارت کی درخواست پر اٹھارہ سے اکیس فروری تک اس مقدمے کی سماعت کی تھی

کلبھوشن یادیوتک قونصلر رسائی، بھارت مان گیا

کلبھوشن بھارتی بحریہ کا حاضر سروس افسر ہے، صدر عالمی عدالت انصاف کا اعتراف

Leave a reply