کشمیر کے بعد بھارت میں مسلمانوں کودبانے کی گھناؤنی سازش ہوئی بے نقاب

بھارت میں مسلمانوں کودبانے کی گھناؤنی سازش امریکی میڈیا نے بے نقاب کر دی ،مودی سرکار صرف مقبوضہ کشمیر میں مسلمانوں کی اکثریت کم کرنا نہیں چاہتی بلکہ پورے بھارت سے مسلمانوں کا نام ونشان مٹانے کے درپے ہے

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق امریکی میڈیا نے انکشاف کیا ہے کہ غیرملکی مہاجرین کےنام پرمسلمانوں کوحراست میں لینےکی تیاریاں کی گئی ہیں ،مودی کےفاشسٹ اقدامات سےبھارت میں مسلمان خوف کاشکارہیں، ہزاروں افرادکوغیرقانونی تارکین وطن قرار دے کرحراست میں لیاجاچکا ہے.

امریکی میڈیا کا کہنا ہے کہ ‏زیرحراست افرادمیں بھارتی فوج کےسابق مسلمان اہلکاربھی شامل ہیں،آسام میں ایک ہی گھرکےکچھ افرادبھارتی اور کچھ مہاجرقراردے دئیے گئے، اب تک 35 لاکھ مسلمانوں سےبھارتی شہریت چھین لی گئی،‏مسلمان اپنےخاندان والوں سےالگ ہونے کے ڈرسےخودکشیاں کرنےلگے

امریکی میڈیا کے مطابق آسام میں مودی کےمخالفین کوگرفتارکیاجارہاہے،مودی سرکارمذہب کی تبدیلی کیخلاف بھی بل پیش کرنےجارہی ہے،‏تاریخ کی نصابی کتابوں سےبھی مسلمانوں کونکالاجارہاہے،بھارت میں کئی ریاستوں کوخصوصی حیثیت حاصل ہے، لیکن کشمیر کاانضمام صرف مسلم اکثریت ہونےکی بناپرکیاگیا.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.