خواجہ سعد رفیق نے عدالت میں معافی مانگ لی

0
46

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق احتساب عدالت لاہور میں پیرا گون سٹی کیس کی سماعت ہوئی

عدالت نے وکلا کی عدم حاضری پر برہمی کا اظہارکیا،عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ اپنے چیمبرز میں عدالتیں لگا لیں پھر،خواجہ سعد رفیق عدالت میں پیش ہوئے تو عدالت نے استفسار کیا کہ آپ کا وکیل کون ہے؟ جس پر خواجہ سعد رفیق کا کہنا تھا کہ میرا وکیل امجد پرویز جبکہ سلمان رفیق کا اشتر اوصاف ہے،

عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ٹرائل کا معاملہ بہت نازک ہوتا ہے،آج تحریری حکم میں پابند کروں گا کہ اگلی سماعت پر وکلا کی پیشی کو یقینی بنایا جائے،خواجہ سعد رفیق نے کاغذی غلطی پر معافی مانگ لی

عدالت نے اشتر اوصاف کے جونیئروکیل پر برہمی کا اظہار کیا اور کہاکہ درخواست پر ٹمپرنگ کی گئی ہے،آپ کو معلوم ہونا چاہیے اسکے کیا نتائج ہو سکتے ہیں، عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ آئندہ سماعت پر وکیل پیش نہ ہوئے تو جرح کریں گے،

عدالت نے کیس کی سماعت 2 دسمبر تک ملتوی کر دی،

واضح رہے کہ خواجہ برادران کو 17 مارچ کو سپریم کورٹ نے رہا کرنے کا حکم دیا تھا،خواجہ برادران پر فرد جرم عائد کی جا چکی ہے۔عدالت نے ریفرنس کے 3 ملزموں ندیم ضیاء، عمر ضیاء اور فرحان علی کو اشتہاری قرار دے رکھا ہے جنہوں نے پیراگون سوسائٹی میں سادہ لوح شہریوں سے 59 کروڑ کا فراڈ کیا ہے۔

آپ نے بحث مکمل کرنی ہے یا باہر جانا ہے؟ عدالت کے استفسار پر خواجہ سعد رفیق نے کیا کہا؟

لاہور کی احتساب عدالت نے 4 ستمبر کو مسلم لیگ ن کے رکن قومی اسمبلی خواجہ سعد رفیق اور ان کے بھائی خواجہ سلمان رفیق کے خلاف پیراگون ہاؤسنگ سوسائٹی میں بے ضابطگیوں پر دائر ریفرنس میں فرد جرم عائد کی تھی۔ خواجہ سعد رفیق اور خواجہ سلمان رفیق نے صحت جرم سے انکار کیا تھا۔

میں ملنے گئی تو زرداری وہیل چیئر سے اٹھے، پولیس نے کہا دفعہ ہو جاؤ، آصفہ بھٹو

آصف زرداری کا طبی معائنہ، کونسی بیماری اور ڈاکٹر نے کیا تجویز کیاِ؟

واضح رہے کہ 11 دسمبر کو لاہور ہائی کورٹ نے مسلم لیگ ن کے رہنماؤں خواجہ سعد رفیق اور ان کے بھائی سلمان رفیق کی عبوری ضمانت خارج کردی تھی، جس کے بعد نیب نے دونوں بھائیوں کو حراست میں لے لیا تھا۔

Leave a reply