fbpx

ماں نے موبائل پر گیمز کهیلنے سے روکا تو بچے نے ماں کو ہی مار ڈالا

ماں نے موبائل پر گیمز کهیلنے سے روکا تو بچے نے ماں کو ہی مار ڈالا:

باغی ٹی وی : نئی دہلی کے ایک علاقے لکھنو میں بیٹے کو جب ماں نے موبائل پر گیمز کهیلنے سے روکا تو اس پر بیٹا بہت غصے میں آ کر اپنی ماں کو ہی مار ڈالا پھر اس واقعے کے بعد ماں کی لاش کے پاس پورے 3 روز تک بیٹھا رہا ۔

بھارتی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق اس بچے کی عمر 16 سال تھی ۔جب اس بچے نے اپنوں ہاتھوں سے یہ سب کیا تو اس کے بعد 3 روز لاش کے پاس بیٹھے رہنے کے بعد جب لاش کی بدبو اس سے برداشت نہ ہوئی تو بچے نے فوری طور پر پولیس کو اس خبر سے آغاہ کیا ۔

جب پولیس نے اس سارے واقعے کی تفتیش کی تو 16 سالہ بچے نے جھوٹی کہانی بنا کر پولیس والوں کے سامنے پیش کر دی ۔لیکن پولیس نے تفتیش جاری رکھی تاہم دو سے ڈھائی گھنٹے کے بعد بچے نے اپنے جرم کا اعتراف کر ہی لیا ۔کہ اس سب واقعے کے پیچھے یہ خود تھا ۔

پولیس نے جب پورا واقعہ سنانے کو کہا تو بچے نے بتایا کہ ماں نے گیم کهیلنے سے جب منع کیا تو میں نے ماں کو مار دیا اور 3 دن تک لاش کے قریب بیٹھا رہا تھا ۔اور بہن کو کمرے میں بند کر دیا تھا بچے ۔کا باپ بھارتی فوج کا افسر ہے۔ جوکولکتہ میں تعینات ہے۔ سارا واقعہ سننے کے بعد پولیس نے لڑکے کو گرفتارکرلیا ہے۔