fbpx

نوجوان بیٹے کو انصاف دلانے کی جنگ لڑنے والی سعیدہ خاتون چل بسیں

نوجوان بیٹے اور سانحہ بلدیہ کے متاثرین کو انصاف دلانے کی جنگ لڑنے والی سعیدہ خاتون کینسر سے جنگ ہار گئیں

سانحہ بلدیہ متاثرین ایسوسی ایشن کی چیئرمین سعیدہ خاتون کو گزشتہ روز گزشتہ روز سپرد خاک کردیا گیا 2012 کے سانحہ بلدیہ فیکٹری میں سعیدہ خاتون کا نوجوان اکلوتا بیٹا بھی جانبحق ہوا تھا سترہ سالہ ایان سمیت دیگر متاثرین کو انصاف دلانے کا بیڑا سعیدہ خاتون نے اٹھایا تھا گزشتہ کئی ماہ سے سعیدہ خاتون کینسر کے موذی مرض میں مبتلا تھیں، سعیدہ کے نماز جنازہ میں مقامی افراد کثیر تعداد میں شریک ہوئے، بعد ازاں مقامی قبرستان میں انکی تدفین کی گئی،

کراچی کے علاقے بلدیہ ٹاون میں 11 ستمبر 2012 کو خوفناک آتشزدگی کا واقعہ پیش آیا تھا، جس میں 260 کے قریب ملازمین جل کر خاکستر ہوگئے تھے۔ بعد ازاں سانحہ بلدیہ کی جے آئی ٹی رپورٹ میں انکشاف کیا گیا تھا کہ فیکڑی میں آتشزدگی کا واقعہ پیش نہیں آیا بلکہ 20 کروڑ روپے بھتہ نہ دینے پر بلدیہ فیکٹری کو آگ لگائی گئی۔ عبدالرحمان بھولا نے اپنے بیان میں اعتراف کیا تھا کہ اس نے حماد صدیقی کے کہنے پر ہی بلدیہ فیکٹری میں آگ لگائی تھی،

سانحہ بلدیہ، تفتیشی افسر کے بیرون ملک جانے پر پابندی عائد

سانحہ بلدیہ،عدالت نے فیصلہ سنا دیا،رحمان بھولا ،زبیر چریا کو سزائے موت، ایم کیو ایم رہنما بری

سانحہ بلدیہ فیکٹری ،مجرموں نے سندھ ہائی کورٹ میں سزا چیلنج کردی

سانحہ بلدیہ،لگتا ہے بڑی مچھلیوں کو تحفظ دیا گیا ہے، عدالت

واضح رہے کہ 22 ستمبر کو اے ٹی سی کراچی نے سانحہ بلدیہ کیس کا فیصلہ سنایا تھا،رحمان عرف بھولا پر فیکٹری کو آگ لگانے کا الزام ثابت ہو گیا،انسداد دہشت گردی عدالت نے رحمان بھولا اور زبیر چریا کو سزائے موت سنا دی گئی اے ٹی سی کراچی نے ایم کیو ایم کے رہنما روَف صدیقی کو بری کردیا،سانحہ بلدیہ کیس میں 400گواہان کے بیانات ریکارڈ کیے گئے عدالت نے ادیب خانم ،علی حسن قادری ،عبد الستارکو بھی بری کردیا ،اس کے علاوہ باقی چار ملزمان کو سہولت کاری میں سزا سنائی گئی ہے،سزا پانے والے سہولت کاروں میں ارشد محمود ، فضل، شاہ رخ اورعلی احمد شامل ہیں

اے ٹی سی کراچی نے سانحہ بلدیہ کیس کا فیصلہ 8سال بعد سنایا گیا تھا،آگ لگانے کی اہم وجہ فیکٹری مالکان سے مانگا گیا بھتہ تھا،رحمان عرف بھولا اورزبیر چریا پر فیکٹری کو آگ لگانے کا الزام ثابت ہوا،2014میں فیکٹری مالکان ارشد بھائیلہ، شاہد بھائیلہ اورعبدالعزیز دبئی چلے گئے