آخر کیوں ہماری سڑکیں مقتل گاہ بن چکی ہیں ؟تجزیہ۔ شہزاد قریشی

0
36
qureshi

عمران خان پر قاتلانہ حملہ منصوبہ تھا؟ سازش تیار کہاں ہوئی اس حملے میں کون لوگ شامل تھے؟ اب ایک نئی بحث کا آعاز ہو گا۔ جے آئی ٹی بنے گی ۔ کمیشن بنے گا، تحقیقات ہوگی ۔ تحقیقاتی ٹیمیں تشکیل دی جائیں گی۔ چند روز میڈیا ٹویٹر پر بیان جاری ہوں گے۔ سوال یہ ہے کہ پھر کیا ہوگا؟ قیام پاکستان سے لے کر تاد م تحریر ایسے کئی دلخراش واقعات رونما ہوئے کہاں گئی اُن کی تحقیقاتی رپورٹیں ؟ ملکی تاریخ ایسے واقعات سے بھری پڑی ہے۔ قائد اعظم محمد علی جناح زندگی اور موت کی جنگ لڑرہے تھے تب کیا ہوا تھا؟ کراچی پہنچنے تک جہاز میں کم آکسیجن والے سلنڈر کی تحقیقات کا کیا ہوا؟ محترمہ فاطمہ جناح کی زندگی اُن کی لازوال خدمات اور حب الوطنی کے اعتراف میں غدار وطن کا تمغہ ملنا ۔1951 میں راولپنڈی میں لیاقت علی خان کا قتل اور پھر قتل کرنے والے کا موقع پر ہی قتل۔ پھر بھٹو کو پھانسی ۔ جنرل ضیاء الحق کے جہاز کا فنی خرابی کے باعث کریش ہونا ۔ گورنر سندھ حکیم سعید شہادت کا واقعہ ۔ سابق وزیراعظم محترمہ بے نظیر بھٹو کا دہشت گردی کا سکار ہونا ۔ نواب اکبر بگٹی پر غداری کا الزام پر شہادت ۔ پھر بے نظیر بھٹو کا بطور وزیراعظم کراچی میں مرتضیٰ بھٹو کا سڑک پر لاش دیکھ کر رونا چیخنا۔ کراچی میں صلاح الدین ممتاز صحافی کا قتل عام ، کراچی سے خیبر تک لاتعداد صحافیوں کا قتل عام ، سابق صدر مشرف دور حکومت میں دہشت گردوں کے ذریعے پاک فوج ، پولیس اور عوام کا قتل عام ۔ یہ سارے واقعات ایک طرف زندگی کی بے ثباتی کی داستان بیان کرتے ہیں تو دوسری طرف زندہ انسانوں کی خود غرضی پر سوالات بھی اٹھاتے ہیں۔

ز ندہ لوگوں کو نظر انداز کرنے سے لے کر مرنے کے بعد اکیس توپوں کی سلامتی دینے تک مجبور اور بے بس عوام کی لاشوں کی بے حرمتی تک کی داستانیں طویل ہیں۔ وطن عزیز مین عشروں سے یہ سلسلہ چل رہا ہے۔ کچھ دنوں مہینوں تک میڈیا ،سوشل میڈیا پر بحث جاری رہتی ہے اور پھر بس ۔ ہمارا المیہ یہہ ے کہ ہم سانحات کا پس منظر جاننے کی بجائے ایک دوسرے پر الزامات لگانا شروع کردیتے ہیں۔ عمران خان پر قاتلانہ حملے کا پس منظر کیا پس پردہ کیا ہے آخر کیوں ہماری سڑکیں مقتل گاہ بن چکی ہیں ان سڑکوں پر ملک کے نامور شخصیات کو قتل کردیا جاتا ہے اب سابق وزیراعظم کو نشانہ بنایا گیا۔ کیا کبھی کوئی آزاد تحقیقاتی کمیشن پورا سچ اس ملک کے عوام کے سامنے لاپائے گا؟

Leave a reply