fbpx

شادی سے انکار،14 سالہ لڑکی کے ساتھ کیا گیا گھناؤنا کام ،پھر لاش چھوڑ دی کھیت میں

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق شادی سے انکار پر 14 سالہ لڑکی کو گلا دبا کر قتل کر دیا گیا

واقعہ بھارت میں پیش آیا جہاں شادی سے انکار پر چودہ سالہ لڑکی کی جان لے لی گئی، لڑکی کاپڑوسی اس سے شادی کرنا چاہتا تھا لیکن والدین نے شادی سے انکار کر دیا، ملزم نے لڑکی کو گھر سے اغوا کر لیا، والدین نے تھانے میں مقدمہ درج کروایا،پولیس نے لڑکی کی تلاش شروع کی تو ایک ہفتے بعد لڑکی کی لاش ملی

پولیس نے لڑکی کا پوسٹ مارٹم کروایا تو لڑکی کے ساتھ زیادتی کی بھی تصدیق ہوئی، پولیس حکام کے مطابق کاروائی کرتے ہوئے ملزم کو گرفتار کر لیا گیا ہے،ملزم لڑکی کا پڑوسی ہی تھا جو اس سے شادی کرنا چاہتا تھا لیکن لڑکی اور اسکے والدین شادی پر راضی نہیں تھے، ملزم سونو بنجارا نے لڑکی کو اغوا کیا اور ایک ہفتہ تک اپنے پاس رکھ کر اسے زیادتی کا نشانہ بناتا رہا ، بعد ازاں اسکا گلہ دبا کر قتل کر دیا اور لاش کھیتوں میں پھینک دی، پولیس کے مطابق ملزم بھی اس واقعہ کے بعد گھر نہیں تھی جب سے لڑکی لاپتہ ہوئی تھی اسلئے ہمارا شک بھی اسی طرف ہی گیا، ملزم کو جب گرفتار کیا گیا تو اس نے اعتراف جرم کر لیا،حاجی پورہ میں گنے کے کھیت میں ملزم نے لڑکی کی لاش کو چھوڑ دیا تھا اور خود فرار ہو گیا تھا،

لڑکی کے والد کے مطابق ملزم نے شادی کے لئے ہمیں دھمکیاں بھی دیں لیکن ہم نے انکار کیا کیونکہ ملزم کی عمر زیادہ تھی اور کام کاج بھی نہیں تھا، لڑکی کے والدین نے مطالبہ کیا کہ ملزم کو سخت سے سخت سزا دی جائے اور ہمیں انصاف فراہم کیا جائے

جب تک مظلوم کوانصاف نہیں مل جاتا:میں پیچھے نہیں ہٹوں‌ گا:مبشرلقمان بھی نورمقدم کے وکیل بن گئے

آج ہمیں انصاف مل گیا،نور مقدم کے والد کی فیصلے کے بعد گفتگو

انسانیت کے ضمیرپرلگے زخم شاید کبھی مندمل نہ ہوں،مریم نواز

مبارک ہو، نور مقدم کی روح کو سکون مل گیا، مبشر لقمان جذباتی ہو گئے

نور مقدم کیس میں سیشن کورٹ کا فیصلہ خوش آئند ہے ،اسلامی نظریاتی کونسل

ٹویٹر پر جعلی اکاؤنٹ، قائمہ کمیٹی اجلاس میں اراکین برہم،بھارت نے کتنے سائبر حملے کئے؟