وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی زیر صدارت اہم اجلاس

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی زیر صدارت اہم اجلاس ہوا ہے جس میں انہوں نے کہا ہے کہ سلامتی کونسل میں مسئلہ کشمیر کا جانا پاکستان کی بہت بڑی کامیابی ہے .ہم اہم ملکوں سے رابطہ بھی کر رہے ہیں تاکہ مسئلہ کشمیر پر دنیا کو آگاہ کیا جائے.

واضح رہے کہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پاکستان تنازعہ کشمیر کے پرامن حل کے حق میں ہے اور اس کے لیے پاکستان نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں یہ مسئلہ اٹھایا ہے اور پرامن حل کیلئے جدوجہد بھی کرے گا۔ انہوں نے واضح کیا کہ بھارت اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے اجلاس کی مخالفت کر رہا ہے تاہم بین الاقوامی برادری کے ایک بڑا حصہ کشمیریوں کی نسل کشی کی نریندر مودی کی سوچ کی حقیقت سے آگاہ ہو چکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت نے پوری مقبوضہ وادی جموں و کشمیر کو جیل میں تبدیل کر دیا ہے جہاں پر اطلاعات تک رسائی ناممکن بنا دی گئی ہے۔ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ مسلم امہ اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) کی جانب دیکھ رہی ہے تاکہ وہ آگے بڑھے اور معصوم کشمیریوں کی مدد کرے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے عوام اور مسلح افواج پوری طرح مسئلہ کشمیر پر متحد ہیں۔

، بھارت نے کشمیرپر اپنے غاصبانہ قبضے کو روا رکھتےہوئے کشمیر کی خصوصی حیثیت والے آرٹیکل 370 کو تبدیل کر کے کشمیر کو اپنا حصہ بنا لیا جس کے بعد خطے میں شدید کشیدگی پیدا ہوگئی. اس سلسلے میں لائن آف کنٹرول پر گولہ باری بھی جاری ہے . دنیا میں اس وقت یہ دیکھا جا رہا ہےکہ خطے میں اب صورت حال کدھر جارہی ہے .ایسی صوت حال میں بھارتی وزیر کا یہ بیان دینا کہ ہم ایٹم ہتھیاروں کے استعمال سے پیچھے نہیں ہٹیں گے. کشمیدگی اور ہوا دینے والی بات ہے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.