شوکت یوسفزئی نے 28 روزوں کے بعد عید منانے کا بوجھ وزیر اعظم کے کندھوں‌ پر ڈال دیا

وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری کے بیان کے بعد خیبر پی کے، کے وزیر اطلاعات شوکت یوسفزئی نے 28 روزوں کے بعد عیدالفطر منانے کا بوجھ وزیر اعظم عمران خان کے کندھوں پر ڈال دیا اور کہا ہے کہ خیبر پختونخوا میں عید کا فیصلہ عمران خان کی مشاورت سے کیا تھا. 3 دن کے بعد ایک روزے کا کفارہ ادا کیا جائے گا۔

باغی ٹی وی کی رپورٹ‌ کے مطابق شوکت یوسف زئی کا نجی‌ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ مرکزی رویت ہلال کمیٹی نے رمضان کا چاند دیکھنے میں غلطی کی جس کی وجہ سے ایک دن تاخیر سے روزے شروع ہوئے تاہم اب اس کا ازالہ کرتے ہوئے عید وقت پر منائی گئی ہے. ان کا کہنا تھا کہ خوشیوں بھرے تہوار کے بعد ایک روزے کا کفارہ ادا کیا جائے گا۔ شوکت یوسفزئی نے کہاکہ خیبر پی کے میں اس سے قبل دو سے تین عیدیں ہوتی تھیں لہٰذا حکومت کے اعلان کا مقصد صوبے میں ایک عید منانا تھا۔

صوبائی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ ہمیں چاند کے مسئلے کو حل کرنا ہوگا. ماضی میں‌ کسی نے اس مسئلے کی طرف توجہ نہیں دی لیکن اب ہمیں ایک بات پر متفق ہونا ہو گا.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.