fbpx

فضائی سفر کے دوران ایئرلائن کے کھانے سے نکلے پتھر

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق بھارت کی ایئر لائن ایئر انڈیا آجکل خبروں میں بہت زیادہ ہی سامنے آ رہی ہے

ایئر انڈیا میں دو واقعات ایسے پیش آ چکے ہیں کہ مسافر نے خاتون پر پیشاب کر دیا، اب ایئر انڈیا کے بارے میں ایک اور سچ سامنے آیا ہے، دوران سفر مسافروں کو جو کھانا دیا گیا اس میں سے پتھر برآمد ہوئے ہیں، ایئر انڈیا کی جانب سے مسافروں کو معیاری کھانا نہیں دیا جا رہا، کھانے میں سے پتھر برآمد ہونے پر ایک خاتون نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر پتھروں کی تصویریں شیئر کر دیں اور اپنی شکایت بھی لکھ دی،

ٹویٹر پر خاتون نے ٹویٹ کرتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ ایئر انڈیا کی فلائٹ میں دیئے گئے کھانے میں اسے پتھر کا یہ ٹکڑا ملا اس نے کرو ممبر کو بھی اطلاع دی تا ہم کرو ممبر نے اس پر ناراضگی کا اظہار کیا ہے، کرو ممبر نے بات بھی نہیں سنی، اس طرح کی لاپرواہی بالکل بھی قابل قبول نہیں ہے، خاتون کی جانب سے ٹویٹ کرنے کے بعد ایئر انڈیا نے جواب دیا اور لکھا کہ ہم کیٹرنگ ٹیم کے سامنے معاملات رکھیں گے، اس مسئلے کو دیکھنے کے لئے کچھ وقت دیں،

بین الاقوامی فیڈریشن آف پائلٹس اینڈ ائیرٹریفک کنڑولرز طیارہ حادثہ کے ذمہ داروں کو بچانے میدان میں آ گئی

شہباز گل پالپا پر برس پڑے،کہا جب غلطی پکڑی جاتی ہے تو یونین آ جاتی ہے بچانے

وزیراعظم کا عزم ہے کہ پی آئی اے کی نجکاری نہیں ری سٹکچرنگ کرنی ہے،وفاقی وزیر ہوا بازی

دوسری جانب فضائی سفر میں مسافر نے خاتون پر پیشاب کر دیا تھا، اس مسافر کی شناخت شنکر کے طور پر ہوئی جس کی عمر 34 برس ہے، شنکر کو اس بیہودہ حرکت پر کمپنی نے کام سے نکال دیا ہے،شنکر مشرا کو دہلی پولیس نے بنگلورو سے گرفتار کیا ہے،، شنکر کے دوبارہ فضائی سفر پر پابندی عائد کی جا چکی ہے، واقعہ پر ایئر انڈیا کے سی ای او نے خاتون سے معافی مانگی ہے جبکہ چار کیبن کریو، پائلٹ کو بھی تحقیقات میں شامل کرتے ہوئے نوٹس جاری کیا گیا ہے کہ انہوں نے کیوں اطلاع نہیں دی، اور بات کو کیوں چھپایا، سی ای او ایئر انڈیا کا کہنا ہے کہ جو لوگ فلائٹ رولز پر عمل نہیں کریں گے ان کے خلاف ضروری کارروائی کی جائے گی،امریکہ میں قائم مالیاتی سروس کمپنی ویلز فارگو جہاں شنکر مشرا کام کرتے تھے انہوں نے انہیں برطرف کر دیا ہے۔

اس واقعہ کی تفصیلات تب سامنے آئیں جب ایک خاتون نے ایئر انڈیا کے گروپ چیئرمین کو خط لکھا اور تفصیلات سے آگاہ کیا ، ایئر انڈیا گروپ کے چیئرمین این چندر شیکرن کو خط ملنے کے بعد واقعہ کی تحقیقات کا آغاز کر دیا گیا ہے، واقعہ کا مقدمہ بھی درج کر لیا گیا ہے جبکہ جہاز میں دوران سفر خاتون پر پیشاب کرنیوالے مسافر پر فضائی سفر کے لئے پابندی عائد کر دی گئی ہے،سول ایوی ایشن کے ڈی جی نے واقعہ کی مکمل رپورٹ طلب کر لی ہے،