fbpx

طالبان نے مزید 200 غیر ملکیوں کے انخلاء پر رضامندی دیدی امریکی حکام کا دعویٰ

افغانستان میں امریکی فوجیوں کے انخلا کے لئے طالبان کی جانب سے امریکا کو 31 اگست کی انخلا کی ڈیڈ لائن دی گئی تھی جس پر امریکہ نے انخلا مکمل کر لیا تھا تاہم متعدد لوگ ابھی بھی افغانستان میں رہ گئے ہیں-

باغی ٹی وی : غیر ملکی میڈیا کے مطابق جن کے بارے میں امریکی حکام نے دعویٰ کیا ہے کہ افغانستان میں 31 اگست کے بعد رہ جانے والے غیر ملکیوں کے انخلاء پر طالبان رضا مند ہوگئے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق افغانستان میں رہ جانے والے ان غیر ملکیوں میں 200 امریکی اور دیگر ممالک کے لوگ شامل ہیں انخلا کے لیے امریکی اور دیگر غیر ملکی شہری بذریعہ چارٹر پرواز افغانستان سے نکلیں گے۔

سی ون تھرٹی طیارہ خوراک لیکر کابل پہنچ گیا

امریکی حکام کا یہ بھی کہنا ہے کہ طالبان پر امریکیوں و غیر ملکیوں کے اس انخلا کے لیے امریکی نمائندۂ خصوصی زلمے خلیل زاد نے دباؤ ڈالا ہے۔

یاد رہے کہ 31 اگست کو امریکا کے انخلا کے بعد چنر روز قبل طالبان نے افغانستان کی نئی حکومت کا اعلان کر دیا ہے، نئی اسلامی حکومت کےسربراہ محمداحسن اخوند جبکہ ملا عبدالغنی برادر اور ملا عبدالسلام حنفی نائب سربراہ ہوں گے۔

طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے کابل میں نیوز کانفرنس کرتے ہوئے افغانستان کی نئی حکومت کا اعلان کیا تھا ذبیح اللہ مجاہد نے بتایا کہ ملا امیر خان متقی وزیر خارجہ ،سراج حقانی وزیر داخلہ جبکہ مولوی محمد یعقوب مجاہد کو وزیر دفاع مقرر کیا گیا ہے مولوی عبدالحکیم عدالتی امورکودیکھیں گے،ملا ہدایت اللہ وزیر مالیات ، ملاخیر اللہ وزیر اطلاعات اورقاری دین محمدحنیف قائم مقام وزیرخزانہ ہوں گے۔

پاکستان اورافغانستان کے درمیان تجارت پاکستانی روپے میں کرنے کا فیصلہ

دوسری جانب آج وزیراعظم عمران کی ہدایت پر سی ون تھرٹی طیارہ خوراک لیکر کابل پہنچ گیا پاکستانی سفیر منصور احمد خان نے کابل ائیر پورٹ پر سامان وصول کیا ،افغانستان بھیجی جانے والی امدادی سامان میں آٹا گھی سمیت دیگر شامل ہیں ،کابل میں پاکستانی سفیر منصور احمد خان کا کہنا ہے کہ پاکستان خوراک اور ادویات افغانستان بھیج رہا ہے۔ افغان بھائیوں ،بہنوں کے لیے پاکستان کی انسانی امداد آنے والے دنوں میں بھی جاری رہے گی

افغانستان کے لیے امداد تھری سی ون تھرٹی طیارے میں امداد روانہ کی گئی تھی خوراک اور ادویات کی کھیپ افغان عوام کی امداد کے لیے روانہ کی گئی تھی ،پاکستان کا کہنا ہے کہ پاکستان مشکل گھڑی میں افغانستان کے ساتھ ہے پاکستان نے عالمی برادری سے افغانستان کے لیے انسانی ہمدردی کی بنیاد پر امداد کی اپیل بھی کی

پاکستانی وزارت خارجہ کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ تین سی 130 طیاروں کے ذریعہ امدادی سامان افغانستان روانہ کیا جا رہا ہے اور فوری امدادی اشیاء کی ہوائی جہاز کے ذریعہ روانگی کے بعد مزید امدادی سامان زمینی راستے سے بھجوانے کا سلسلہ جاری رہے گا-

افغانستان میں طالبان کی حکومت،پاکستان توجہ کا مرکز بن گیا، آج بھی اہم شخصیت آ رہی…

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!