ورلڈ ہیڈر ایڈ

بے حسی کی انتہا،سرگودہا کے ڈاکٹر مسیحا نہیں جلاد ہیں

سرگودھا(نمائندہ باغی ٹی و ) بے حسی کی انتہا، ٹی ایچ کیو اسپتال بھاگٹانوالہ میں علاج کے لیے آنے والے مریض کو ڈرپ لگائی اور کرسی پر بٹھا کر ڈرپ اسی کے ہاتھ میں تھما دی، مریض کئی گھنٹے ڈرپ ہاتھ میں لیے بیٹھا رہا، ڈپٹی کمشنر سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔ تفصیلات کے مطابق 23 جنوبی کا رہائشی محمد رمضان علاج معالجہ کے لیے ٹی ایچ کیو اسپتال بھاگٹانوالہ آیا جہاں پر ڈاکٹروں نے اسے ڈرپ لگائی اور انسانیت کی تذلیل کرتے ہوئے بیڈ پر جگہ دینے کے بجائے ریسپشن کے قریب کرسی پر بیٹھاتے ہوئے ڈرپ اس کے ہاتھ میں تھما دی، محمد رمضان کئی گھنٹے تک ڈرپ ہاتھ میں بیٹھا رہا، ڈرپ ختم ہونے کے بعد ڈاکٹروں نے ڈرپ اتاری اور اسے گھر جانے کا بول دیا، اہل علاقہ نے ٹی ایچ کیو ہسپتال کے عملہ کی اس بے حسی پر ڈپٹی کمشنر آسیہ گل سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اس واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے ہسپتال انتظامیہ کے خلاف سخت کاروائی عمل میں لائیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.