کراچی اورلاہورمیں طوفانی بارشیں جاری

0
55

کراچی::لاہور:::کراچی اورلاہورمیں طوفانی بارشیں جاری ،اطلاعات کے مطابق کراچی کے مختلف علاقوں میں تیز بارش کا سلسلہ جاری ہے، اور موسم خوشگوار ہوگیا ہے۔کراچی کے مختلف علاقوں میں تیز بارش کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے، جس کے بعد موسم بھی خوشگوار ہوگیا ہے۔

اس وقت شہر میں ملیرماڈل کالونی، گلشن حدید، ملیر، ماڈل کالونی، گلشن حدید، بحریہ ٹاؤن، شارع فیصل، اسٹیل ٹاؤن، سپر ہائی وے دنبہ گوٹھ، میمن گوٹھ اور گڈاپ میں تیز بارش ہورہی ہے۔

دوسری جانب بارش کے باعث سڑکوں اور گلیوں میں بارش کا پانی ایک بار پھر جمع ہونا شروع ہوگیا ہے، جس کے باعث عوام کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔

شدید بارش کے باعث کراچی سے ٹرینوں کی آمدرفت میں بھی تاخیر ہورہی ہے، اور ترجمان ریلوے کا کہنا ہے کہ پاکستان ریلوے عوام سے تکلیف کے لیے معذرت خواہ ہے۔

ترجمان ریلوے کے مطابق بارش کے باعث قراقرم ایکسپریس 03:30 کے بجائے شام 04:15 پر روانہ ہوگی، پاک بزنس ایکسپرس 04:00 کے بجائے شام 05:40 پر روانہ ہوگی، 43 آپ شاہ حسین ایکسپرس 07:30 کے بجائے 08:00 بجے روانہ ہوگی، جب کہ بقیہ تمام ٹرین اپنے مقررہ اوقات پر روانہ ہوں گی۔

محکمہ موسمیات کی جانب سے جاری تازہ الرٹ کے مطابق آئندہ دنوں کے دوران 10سے 13اگست2022 میں مزید مون سون بارشیں جاری رہیں گی۔

محکمہ موسمیات کے مطابق مون سون ہوائیں ملک میں مسلسل داخل ہو رہی ہیں جبکہ 10 اگست (بدھ) سے مون سون ہوائیں زیادہ شدت کے ساتھ ملک میں داخل ہونگی۔ جس کے باعث 9 اگست کے دوران کشمیر،اسلام آباد، شمال مشرقی پنجاب، بالائی خیبرپختونخوا، مشرقی بلوچستان اور جنوب مشرقی سندھ میں تیز ہواؤں اور گرج چمک کے ساتھ بارش اور چند مقامات پر وقفے سے موسلادھار بارش کا امکان ہے۔

جب کہ 10سے 13 اگست کے دوران کشمیر، گلگت بلتستان، اسلام آباد، پنجاب، خیبرپختونخوا، سندھ اور بلوچستان میں تیز ہواؤں اور گرج چمک کے ساتھ بارش اور کہیں کہیں وقفے سے موسلادھار بارش کا امکان ہے۔

بارشیں،سندھ میں 93 اموات اور 59 افراد زخمی ہوئے،وزیراعلیٰ سندھ

8 سے 12 اگست کے دوران موسلا دھار بارش کے باعث راولپنڈی، اسلام آباد، پشاور، نوشہرہ، مردان، فیصل آباد،لاہور اور گوجرانوالہ میں نشیبی علاقے زیر آب آنے کا خطرہ ہے۔ اس دوران موسلا دھار بارش کے باعث راولپنڈی، اسلام آباد ، شکر گڑھ، سیالکوٹ، نارووال، ایبٹ آباد،مانسہرہ، دیر ،کرک،بنوں، لکی مروت، کشمیر مقامی ندی نالوں میں طغیانی کا خدشہ ہے۔

رپورٹ کے مطابق 11سے 13 اگست کے دوران موسلادھار بارش کے باعث کراچی، ٹھٹھہ، بدین،حیدرآباد، دادو، جام شورہ، سکھر، لاڑکانہ، شہید بینظیرآباد اور میرپور خاص میں نشیبی علاقے زیر آب آنے کا بھی اندیشہ ہے۔

لاہور

لاہور کے مختلف علاقوں میں اتوار 7 اگست کو کہیں ہلکی تو کہیں تیز بارش نے گرمی کی چھٹی کردی۔

مون سون بارشیں،سیلابی ریلے جنوبی پنجاب کے علاقوں میں داخل

مغل پورہ، ہربنس پورہ، رائے ونڈ روڈ، ٹھوکرنیاز بیگ، وحدت روڈ، گلبرگ، گڑھی شاہو ، جیل روڈ ، ڈیفنس ،کوٹ لکھپت، ٹاؤن شپ، جوہر ٹاؤن میں ہلکی اور تیز بارش ریکارڈ کی گئی۔ جس سے حبس کا زور ٹوٹ گیا، دوپہر کو لاہور کا درجہ حرارت 29 سنٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا، جب کہ شہر میں ہوائیں سترہ کلو میٹر فی گھنتہ کی رفتار سے چل رہی ہیں۔

محکمہ موسمیات کے مطابق مون سون اسپیل کے تحت شہر میں آئندہ دو روز میں مزید بارشوں کا امکان ہے۔

شہر کے مختلف علاقوں میں بادل برستے ہی نشیبی علاقے زیرآب آ گئے۔ نشیبی علاقوں میں پانی جمع ہونے سے شہریوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔

کراچی:حب ڈیم میں پانی کی سطح بلند ہو گئی،آئندہ تین روز میں مزید بارشیں، اربن فلڈنگ

بلوچستان

مون سون کے باعث قلعہ سیف اللہ، لورالائی، بارکھان، کوہلو، موسی خیل، شیرانی، سبی، بولان، قلات، خضدار، لسبیلہ، آواران، تربت،پنجگور، پسنی، جیوانی، اور ماڑہ، گوادر اور ڈیرہ غازی خان کے برساتی اور مقامی ندی نالوں میں طغیانی آسکتی ہے۔

خیبر پختونخوا

اس دوران کشمیر، خیبرپختونخوا کے پہاڑی علاقوں، گلیات ، مری ،چلاس، دیا میر، گلگت، ہنزہ، استور اور اسکردو میں لینڈ سلائیڈنگ کا خدشہ ہے۔صوبائی حکومتوں کی جانب سے مسافروں اور سیاحوں کو موسمی حالات کو مدنظر رکھ کر سفر کرنے کی ہدایت کی گئی ہے، انتظامیہ کا کہنا ہے کہ اس دوران مسافر مزید محتاط رہیں۔

Leave a reply