fbpx

وفاقی دارالحکومت میں بھی کرونا وائرس کا مشتبہ کیس سامنے آ گیا

وفاقی دارالحکومت میں بھی کرونا وائرس کا مشتبہ کیس سامنے آ گیا

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق اسلام آباد کے پمز اسپتال میں کورونا وائرس کا مشتبہ کیس آگیا،وائرس سے متاثرہ مشتبہ نوجوان ووہان کی یونیورسٹی میں زیرتعلیم ہے،نوجوان کواسپتال کے ایچ آئی وی کرٹسی سینٹر منتقل کردیاگیا.

چین کے شہر ووہان کے رہائشی میلی کرونا وائرس کی علامات پر سروسز اسپتال لاہور میں داخل کر لیا گیا،میلی چند روز قبل چین کے شہر ووہان سے پاکستان آیا تھا،چینی شہری میلی کا کرونا وائرس میں مبتلا ہونے کا خدشہ ہے،چینی شہری میلی کو ڈاکٹرز نے کچھ ٹیسٹ تجویز کیے گئے ہیں, چینی شہری کے ٹیسٹ کے نمونے حاصل کرلیے گئے ، رپورٹس کے بعد حقائق سامنے آئیں گی،

پاکستان میں کرونا وائرس کی تصدیق کے لئے لیبارٹری موجود نہیں، مریضوں کے خون کے نمونے ہانگ کانگ بھجوائے جائیں گے

قبل ازیں پنجاب کے شہر ملتان میں کرونا وائرس کے شبے میں چینی شہری کو نشتر ہسپتال منتقل کر دیا گیا، مریض کے خون کے نمونے لیبارٹری بھجوا دیئے گئے۔ 40 سالہ فینگ فین ملتان میں انڈسٹریل اسٹیٹ پروجیکٹ پر کام کر رہا ہے جبکہ چند روز قبل ہی چائنا کے شہر ووہان سے واپس لوٹا ہے جسے کرونا وائرس کے شبے میں نشتر ہسپتال کے آئسولیشن وارڈ میں منتقل کر دیا گیا ہے جبکہ اس کے خون کے نمونے لیبارٹری بھجوا دیئے گئے ہیں

پاکستان میں خون کے ٹیسٹ کے ذریعے کرونا وائرس کی موجودگی پتہ چلانے کی سہولت موجود نہیں ہے۔ مشتبہ افراد کے خون کے نمونے ہانگ کانگ بھیجے گئے ہیں تاکہ تصدیق ہوسکے کہ ان میں یہ وائرس ہے یا نہیں۔ کرونا وائرس کا معاملہ سنگین ہے کیونکہ یہ چین میں پھیلا اور چین سے پاکستان آمد و رفت ہے۔

چینی ماہرین کے مطابق متاثرہ شخص کے قریب جانے سےوائرس منتقل ہو سکتا ہے،کرونا وائرس متاثرہ مریض کی کھانسی یا چھینک سے دوسرے شخص تک پہنچتا ہے،سینما،انٹرنیٹ کیفے اور شاپنگ سینٹرزسے خاص طور پر پرہیز کیا جائے،کھانسی یا چھینکوں کے بعد چھوئی ہوئی تمام اشیاء کو جراثیم کش محلول سے صاف کریں، کرونا وائرس کی موجودگی کی تصدیق کے بعد سرجیکل ماسک کا استعمال کریں،

کرونا وائرس، چین میں ہلاکتوں میں اضافہ ،کتنے پاکستانی چین میں ہیں ؟ ترجمان دفتر خارجہ نے بتا دیا

دوسری جانب قومی ادارہ صحت کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس سانس کی ایک بیماری ہے،کورونا وائرس کا آغاز دسمبر 2019 میں چین سے ہوا ،کورونا وائرس جاپان،تھائی لینڈ،جنوبی کوریا اورامریکہ میں پھیل چکا ہے

دوسری جانب انکشاف ہوا ہے کہ پاکستان میں کرونا وائرس کی تشخیص کے حوالہ سے کوئی سہولت موجود نہیں، دو چینی باشندوں کے خون کے نمونے بیرون ملک بھجواے جائیں گے جہاں سے ان کی رپورٹ آئے گی، اس میں تین دن لگ سکتے ہیں،