fbpx

ہنزہ میں مسافر کوچ الٹ گئی، 13 فرانسیسی سیاحوں سمیت 15افراد زخمی

ہنزہ میں سمائر نگر کےقریب مسافر کوچ الٹ گئی،حادثے میں غیر ملکی سیاحوں سمیت 15 افراد زخمی ہوگئے، سیاحوں کا تعلق فرانس سےہے۔ریسکیو ذرائع کے مطابق حادثہ سمائر نگر کے قریب پیش آیا جس کے نتیجے میں13غیر ملکی سیاحوں سمیت 15افراد زخمی ہوگئے۔

زخمیوں کو علی آباد اسپتال منتقل کردیا گیا ہے جہاں ان کی حالت خطرے سے باہر بتائی جارہی ہے۔شیشپر گلیشیئر سے پانی کے اخراج کے باعث شاہراہ قراقرم بند ہونے اورپل گرنےکی وجہ سےمتبادل روڈ استعمال کیا جا رہاہے

ادھر اس سے پہلے موسم گرم ہوتےہی ہنزہ کےعلاقےحسن آبادمیں شیشپر گلیشیئر میں بننے والی جھیل سے پانی کا اخراج شروع ہوگیا۔پانی کی سطح میں مسلسل اضافے کے باعث شاہراہ قراقرم پر بنا حسن آباد پل گرگیا۔

ڈپٹی کمشنر ہنزہ عثمان علی کے مطابق پانی کی سطح میں مسلسل اضافے اور دباؤ کے باعث شاہراہ قراقرم سے آبادی کو ملانے والا حسن آباد پل گر گیا جبکہ شاہراہ قراقرم کا آدھا کلومیٹرکا حصہ بھی متاثر ہوا ہے۔انہوں نے بتایا کہ حسن آبادگاؤں میں خطرے کے باعث تین گھرانوں کو محفوظ مقام پر منتقل کردیاگیاہے۔

ادھر کنڈ ملیر پکنک منانےکی غرض سے جانے والے خاندان کو ریسکیو کرلیا گیا۔ایس ایس پی لسبیلہ کے مطابق خاندان کراچی سے سپت بیچ پر راستہ بھٹک گیا تھا، راستہ بھٹکنے والے افراد میں خواتین اور بچوں سمیت 11 افراد شامل ہیں۔

ایس ایس پی لسبیلہ کا کہنا ہےکہ لاپتہ افراد کی تلاش کے لیے پولیس ٹیم کنڈ ملیر روانہ کی گئی تھی، ریگستانی علاقے میں پھنسے افرادکو پانی اور کھانا فراہم کر دیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق متاثرہ خاندان سڑک کے کنارے موٹر سائیکلیں کھڑی کرکےسپت بیچ گیا اور واپسی پر راستہ بھول گیا، یہ انتہائی مشکل علاقہ ہے ، ریت کے طوفان کی وجہ سے اکثر اس علاقے میں لوگ راستہ بھول جاتے ہیں ، اس دوران ان کے پاس کھانے پینے کا سامان ختم ہوگیا، شدید گرمی میں بھوک پیاس سے بچوں اور دیگر افراد کی حالت غیر ہوگئی جب کہ موبائل فون کے سگنل نہ ملنے سے ان افراد کا کسی سے رابطہ بھی نہیں ہو پایا ۔

خوش قسمتی سے ا یک فرد کا موبائل فون پر کراچی رابطہ ہوا، جس کے بعد پولیس ،کوسٹ گارڈ ، ایدھی فاؤنڈیشن اور علاقے کی ایک معزز شخصیت سردار رشید پھورائی نے علاقے میں بڑے پیمانے پر متاثرہ خاندان کی تلاش کا کام شروع کیا اور کئی گھنٹے کی تلاش کے بعد متاثرہ خاندان کو ریسکیو کر لیا گیا۔

ڈی ایس پی اوتھل کے مطابق اندھرا ہونے کی وجہ سے ان افراد کی موٹرسائیکلوں کو تلاش نہیں کیا جاسکا۔ادھر ایس ایس پی لسبیلہ کا کہنا ہے کہ متاثرہ خاندان کو اوتھل منتقل کیا جار رہا ہے ۔

ان افراد کا تعلق لیاری اور دنبہ گوٹھ ملیر سے ہے، ان کا آخری رابطہ آج دن میں تقریباً تین بجے کراچی میں گھر والوں سے ہوا تھا جس کے بعد رابطہ نہ ہونے پر اہلخانہ نے حکومت بلوچستان،کوسٹ گارڈ اورپولیس سے فوری مددکی اپیل کی تھی۔