fbpx

کورونا کی مفت فراہمی:امریکی صدرکا 50 کروڑ ویکسین خریدنے کا اعلان

امریکی صدر جوبائیڈن نے کورونا ویکسین کی 50 کروڑ سے زیادہ خوراکیں خریدنے کا اعلان کیا ہے-

باغی ٹی وی : اس سے قبل امریکہ نے آئندہ سال جون تک ترقی پذیر ملکوں میں تقسیم کے لیے فائزر اور بائیو این ٹیک ویکسین کی 50 کروڑ خوراکیں خریدنے کا اعلان کیا تھا آج کے اعلان کے بعد خریدی جانے والے ویکسینز کی خوراکوں کی کل تعداد ایک ارب ہو جائے گی، جسے دنیا کے کم آمدن والے ملکوں میں تقسیم کیا جائے گا۔

حکومتی اعلان سے قبل اپنی ایک ٹوئٹ میں امریکی وزیر خارجہ اینٹنی بلنکن نے کہا کہ ہم نے اب تک امریکی عوام کو جتنی ویکسین لگائی ہیں، اس سے 3 گنا زیادہ ہم دنیا کو فراہم کریں گے۔

یہ ہماری دنیا کے لیے ایک فیصلہ کن دہائی ہےجو ہمارے مستقبل کا لفظی تعین کرے گی جوبائیڈن

بائیڈن نے ویکسین کے اضافی خوراکیں مفت فراہم کرنے سے متعلق اعلان کورونا کے ورچوئل سربراہی اجلاس کے دوران کیا، جو اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس کے احاطے سے باہر منعقد کیا گیا تھا۔

بائیڈن نے عالمی ادارہ صحت کے ہدف کا حوالہ دیا جس میں اگلے سال تک دنیا کی کم از کم 70 فی صد آبادی کو ویکسین لگانے پر زور دیا گیا ہے، ساتھ ہی ادارے نے دیگر دولت مند ملکوں پر زور دیا ہے کہ اس ضمن میں وہ بھی آگے بڑھیں، انفیکشن پر قابو پانے کے لیے دنیا بھر میں ویکسین لگانے کے ضروری اقدام میں مدد فراہم کریں۔

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے، بائیڈن نے کہا کہ امریکہ نے اب تک 100 سے زیادہ ملکوں میں ویکسین کی 16 کروڑ ڈوز تقسیم کی ہیں، یہ تعداد مجموعی طور پر باقی دنیا کی جانب سے تقسیم کی جانے والے تمام ڈوزز سے کہیں زیادہ ہیں-

کورونا جنرل اسمبلی اجلاس میں پہنچ گیا:وزیر صحت کا ٹیسٹ مثبت :ملنے والے خوش نصیب بن…

انہوں نے کہا تھا کہ "ہم اس سال بڑی عالمی وبا سے نمٹ رہے ہیں ہم نے اس تباہ کن وبائی بیماری سے بہت کچھ کھو دیا ہے جو دنیا بھر میں زندگیوں کا دعویٰ کرتا رہتا ہے اور ہمارے وجود پر بہت زیادہ اثر انداز ہوتا ہے۔ ہم سوگ منا رہے ہیں لاکھوں لوگ ، ہر قوم کے لوگ ، ہر پس منظر سے۔ ہر موت ایک انفرادی دل کی دھڑکن ہے۔

انہوں نے مزید کہا تھا کہ یہ "ہماری دنیا کے لیے ایک فیصلہ کن دہائی ہے” جو "ہمارے مستقبل کا لفظی تعین کرے گی۔”

وبائی مرض پر ، بائیڈن نے پوچھا تھا کہ "کیا ہم جان بچانے کے لیے مل کر کام کریں گے ، کوویڈ 19 کو ہر جگہ شکست دیں گے ، اور اگلی وبا کے لیے اپنے آپ کو تیار کرنے کے لیے ضروری تناؤ لیں گے ، کیونکہ وہاں کوئی اور ہوگا۔ ہمارے اختیار میں جب زیادہ خطرناک قسمیں پکڑ لیتی ہیں؟ ”

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے اپنے پہلے خطاب میں صدر بائیڈن نے کہا تھا کہ امریکہ ماضی کی جنگیں جاری رکھنے کے بجائے آگے کی طرف دیکھے گا۔

ایران جوہری پروگرام پر اپنے وعدے پورے کرے تو امریکہ بھی مثبت جواب دے گا…