راولپنڈی؛ دو سال قبل کیئے گئے قتل کو حادثاتی موت کا ڈھونگ رچانے والا ملزم گرفتار

0
36
اغوا برائے تاوان کے مقدمہ میں ملوث ملزم کا 7 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور

گئےراولپنڈی میں دو سال قبل پمز میں قتل کیئے گئے شخص کو حادثاتی موت کا ڈھونگ رچانے والا ملزم گرفتار کرلیا گیا.

راولپنڈی میں کرائے دارنے کروڑوں روپے کی جائیداد ہتھیانے کیلئے چار سگے بھائیوں کو راستے سے ہٹا دیا۔ 3 کو قتل کیا اور ایک لاپتہ ہے۔ سی سی ٹی وی کی فوٹیج میں 27 ستمبر کو فرار ہوتا ہوا رکشہ ڈرائیو عمران جب مشکوک گھبراہٹ پر پولیس نے پکڑا تو لرزہ خیز کہانی سامنے آگئی۔ راولپنڈی پولیس کے مطابق دوران تفتیش گرفتاری پر ملزم نے گھناؤنا منصوبہ بے نقاب کردیا ہے۔
مزید یہ بھی پڑھیں؛ والدین بے دھیانی میں 5 سالہ بچے کوغلط سکول میں اتار کر روانہ ہو گئے
آرمی چیف کی امریکی سیکریٹری دفاع،مشیر برائے قومی سلامتی اور ڈپٹی سیکریٹری آف اسٹیٹ سے ملاقات
مریم نواز آج لندن روانہ
ملزم ماجد نامی شخص کو قتل کرکے فرار ہو رہا تھا۔ جو 19 جولائی 2022 کو قتل کیے گئے اپنے بھائی ساجد کے کیس کا مدعی بھی تھا۔ انکے تیسرے بھائی ارشد کو 2 سال پہلے پمز میں قتل کرکے موت حادثانی ہونے کا ڈھونگ رچایا گیا۔ پولیس کے مطابق مقتول 3 لیکن اس خونی کھیل کا ماسٹر مائند ایک ہی ملزم مقتولین کا کرائے دار جاوید اکرام تھا۔ دو سال میں 3 بھائیوں کو راستے سے ہٹانے والے جاوید اکرم نے چوتھے بھائی واجد کو 11 سال پہلے نشے کی لت لگا دی تھی جس کے بعد وہ لاپتہ ہوگیا۔

لالچی کرائے دار کے اس گھناؤنے منصوبے کی بنیاد پیر ودھائی کے محلہ اسلام پورہ میں تقریباً 96 کروڑ روپے مالیت کی جائیداد بنی۔ ایس ایس پی آپریشنز راولپنڈی پولیس وسیم ریاض کا کہنا ہے کہ مقتولین کی وہاں پر تقریباً 7 سے 8 کینال جائیداد ہےجس کی قیمت کروڑوں میں بنتی ہے۔ مقتولین کے لواحقین کا کہنا ہے ملزم عمران نہ پکڑا جاتا توماسٹر مائنڈ جاوید اپنا مکروہ مقصد حاصل کرنے کے قریب پہنچ چکا تھا۔ ملزم نے اپنی پلاننگ میں عمران کو شامل کیا جبکہ عمران نے عامر نامی شخص سے اسلحہ حاصل کیا۔ پولیس تینوں کو گرفتار کرچکی ہے۔

Leave a reply