ڈاکٹر حمزہ صدیقی ایک ایماندار مسیحا ، ملازمت سے استعفے کے ساتھ ہی 3 سال کی تنخواہ واپس کردی

لاہور: ہمیشہ حسن ظن ہی رکھنا چاہیے ، پانچوں انگلیاں برابر نہیں ہوتیں ، اطلاعات کےمطابق پنجاب کے سابق سرکاری ڈاکٹر نے ایمانداری کی نئی مثال قائم کر دی، ملازمت سے استعفیٰ دینے والے ڈاکٹر نے 3 سال کی تنخواہ صوبائی حکومت کو واپس کر دی۔

ذرائع کے مطابق اس حوالے سے محکمہ صحت کو لکھے گئے ایک خط میں ڈاکٹر حمزہ صدیقی نے کہا کہ وہ مارچ 2015 میں ڈسٹرکٹ ہیڈ کوراٹر اسپتال شیخوپورہ میں میڈیکل آفیسر کی حیثیت سے تعینات تھے، تاہم انہوں نے دسمبر 2015 میں استعفیٰ دے د یا اور بیرون ملک چلے گئے۔

ذرائع کےمطابق ڈاکٹر حمزہ صدیقی کے مستعفی ہونے اور ملک سے باہر چلنے جانے کے باوجود بھی تنخواہ باقاعدگی سے ان کے اکاؤنٹ میں آتی رہی۔ڈاکٹر صدیقی کے مطابق 3 سال بعد ملک واپس آنے پر اکاؤنٹ چیک کیا تو اس میں 34 لاکھ روپے موجود تھے، جسے دیکھ کر وہ حیران رہ گئے۔جبکہ بعض لوگوں کا کہنا ہے کہ حمزہ صدیقی کی ایمانداری اپنی جگہ لیکن محکمے نے بھی تو نااہلی دکھائی کہ وہ استعفے کے باوجود تنخواہ بھیجتا رہا

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.