ایلون مسک پر258 بلین ڈالرہرجانے کا مقدمہ دائر

0
28

نیویارک:ایلون مسک پر258 بلین ڈالرہرجانے کا مقدمہ دائر ،اطلاعات کےمطابق ہالی ووڈ اداکار جانی ڈیپ کے ایمبر ہرڈ کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ جیتنے کے بعد ارب پتی ایلون مسک پر ڈوجکوئن کوسپورٹ کے لیے 258 بلین ڈالر ہتک عزت کا مقدمہ دائر کیا گیا ہے۔

اس درخواست میں یہ موقف اختیار کیاگیا ہے کہ ڈجکوئن ایک فرضی کردارنے سرمایہ کاری کی جس کی وجہ سے اس میں بہت سے لوگوں کو بہت زیادہ مالی نقصان پہنچا اوراس سارے نقصان کے ذمہ دار ایلون مسک ہیں ،اطلاعات ہیں کہ ان وجوہات کو بنیاد بنا کر ارب پتی اور اس کی کمپنیوں Tesla اور SpaceX کے خلاف $258 بلین کا مقدمہ دائر کیا۔

ایلون مسک کا رواں سال انسان نما روبوٹ متعارف کرانے کا اعلان

ایلون مسک کے خلاف مقدمہ دائر کرنے والے کیتھ جانسن کہتے ہیں کہ ڈوجکوئن میں سرمایہ کاری کرنے کے بعد اس نے پیسہ کھو دیا،

وہ نیویارک کی ایک عدالت میں دائر کی گئی اپنانقطہ نظربیان کرتے ہوئے کہا کہ اس میں سرمایہ کاری کرنے کا جھانسہ دیا گیا اورپھر 2019 سے dogecoin میں سرمایہ کاری کرکے نقصان اٹھایا ہے۔

ایلون مسک نے ٹویٹرخریدنے کی ڈیل ختم کرنے کی دھمکی دے دی

جانسن کا اندازہ ہے کہ جب سے مسک نے ورچوئل کرنسی کو فروغ دینا شروع کیا ہے، سرمایہ کاروں کو تقریباً 86 بلین ڈالر کا نقصان ہوا ہے۔ وہ چاہیں گے کہ مسک سرمایہ کاروں کو اس رقم کی واپسی کرے، نیز ہرجانے کی مد میں دگنی رقم 172 بلین ڈالرز بھی ادا کرے

جانسن کا کہنا ہے کہ ان کا خیال ہے کہ مسک نے اس کی تشہیر کے ذریعے “Dogecoin کی قیمت، مارکیٹ کیپ اور تجارتی حجم” میں اضافہ کیا۔

یاد رہے کہ اس سے پہلے سابقہ ​​​​ہالی ووڈ پاور جوڑے کے درمیان چھ ہفتے کے قانونی جھگڑے کے بعد، ایک امریکی جیوری نے ڈیپ کو 10 ملین امریکی ڈالرسے زائد ہرجانے سے نوازا،

ٹویٹر پر موجود جعلی اکاؤنٹس کا ڈیٹا دیا جائے، ایلون مسک کا مطالبہ

Leave a reply