fbpx

ملک وقوم کی خاطرجان قربان کرنے والوں کوسلام :نیشنل ایکشن پلان کےمطابق آگےبڑھنا ہے:وزیراعظم

اسلام آباد:ملک وقوم کی حفاظت کی خاطرجان قربان کرنے والوں کوسلام:نیشنل ایکشن پلان کے مطابق آگے بڑھنا ہے،اطلاعات کے مطابق آج وزیراعظم کی زیرصدارت نیشنل ایکشن پلان کے حوالے سے اہم اجلاس ہوا، جس میں وزیراوعظم عمران خان نے سب سے پہلے اس وطن عزیز اورقوم کی حفاظت کی خاطر قربانیاں دینے والوں‌ کوخراج تحسین پیش کرتے ہوئے سلام پیش کیا ہے

اجلاس میں وزیراعظم نے مسلح افواج ، پولیس، انٹیلی جنس ایجنسیوں کی قربانیوں کو خراج تحسین پیش کیا۔

وزیراعظم کی زیرصدارت اجلاس میں نیشنل ایکشن پلان کی ایپکس کمیٹی نے پرتشدد اور انتہا پسندی سے نمٹنے کے اقدامات پر فوری عملدرآمد کا فیصلہ کیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت نیشنل ایکشن پلان کی ایپکس کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ، ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید، مشیر قومی سلامتی معید یوسف، وفاقی وزرا چوہدری، شاہ محمود، شیخ رشید اور شوکت ترین نے شرکت کی۔

اعلامیے کے مطابق اجلاس میں افغانستان کی صورتحال اور ملک پر اس کے ممکنہ مضمرات کا جائزہ لیا گیا، کمیٹی نے نیشنل ایکشن پلان کے قلیل، وسط اور طویل مدتی اہداف سمیت ملکی داخلی صورتحال کا بھی جائزہ لیا۔

اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ اجلاس میں سائبر سکیورٹی، جاسوسی اور سکیورٹی چیلنجز سے نمٹنے کے لیے مختلف اقدامات پر فوری عملدرآمد کا فیصلہ کیا گیا ہے، اس کے علاوہ اجلاس میں عدالتی اور سول اصلاحات سے متعلق اقدامات پر بھی فوری عملدرآمد کا فیصلہ کیا گیا۔

اعلامیے کے مطابق اجلاس میں ہر ہدف کے لیے کارکردگی کے معیار اور ٹائم لائنز دینے، نیشنل کرائسز انفارمیشن مینجمنٹ سیل قائم کرنے کا فیصلہ کیا گیا، وزارت داخلہ اور وزارت اطلاعات کرائسز مینجمنٹ سیل کی نگران ہوں گی۔

اعلامیے کے مطابق پرتشدد اور انتہا پسندی سے نمٹنے کے اقدامات پر فوری عملدرآمد کا فیصلہ کیا گیا جب کہ قومی سلامتی کوبراہ راست متاثر کرنے والے عوامل سے نمٹنے کے اقدامات پر بھی عملدرآمد کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

اعلامیے میں بتایا گیا ہےکہ سی پیک اورنان سی پیک پرکام کرنے والے غیرملکیوں کی سکیورٹی یقینی بنانے کا فیصلہ کیا گیا ہے، سی پیک بالخصوص چینی باشندوں کی فول پروف سکیورٹی یقینی بنائی جائےگی۔

اعلامیے کے مطابق داخلی سلامتی یقینی بنانے کے لیے تمام ممکنہ اقدامات کیے جائیں گے اور شرپسندوں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا۔