ہماری قوم، کنفیوژن کی شکار قوم ہے، شہریار آفریدی

0
38

وفاقی وزیر شہریار خان آفریدی نے اسلامک ریسرچ یونیورسٹی میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ یوم آزادی 2021 دنیا جو بے یقینی پر اعمتاد کرتی ہے، قوموں کا عروج اور زوال، ہم دنیا میں اس قدر ڈوب چکے ہیں، ہمیں اب عروج اور زوال کا پتہ نہیں ہے، کیونکہ ہم ذات میں ڈوبے ہوئے ہیں، ہر شخص اپن میں ڈوبا ہوا ہے، اس نے دنیا کو ان کے آسرے چھوڑا جو آنے والی نسلوں اور یوتھ کو ذہنی طور پر کنٹرول کررہے ہیں.

شہریار آفریدی نے مزید کہا ہے کہ آج یوم آزادی کیلئے بڑے نعرے لگائے جا رہے ہیں، جھنڈے، جھنڈیاں، پرچم، کیا اس سے قومیں بنتی ہیں، قومیں کیسے بنتی ہیں، قومیں تب بنتی ہیں جب ایک ماں اپنی اولاد کیلئے سب کچھ قربان کرنے کیلئے تیار ہوتی ہیں، پھر وہ ماں بنتی ہے، آنے والی قوم کا ہر شخص کنفیوزکردیا گیا ہے، ہمیں ہر معاملے میں کنفیوز کردیا گیا ہے، آج امت کہاں پر ہے، دنیا آج امت کا مذاق اڑا رہی ہے، ہم لکیر کے فقیر ہوگئے ہیں، دنیا آرٹیفیشل ٹیکنالوجی کا استعمال کررہی ہے، دنیا نے تمام قوموں کو اپنے ہاتھ میں لے لیا ہے، میں چاہوں یا نہ چاہوں اندھی تقلید کررہا ہوں، آنے والا وقت آپ کی آنے والی نسلوں کا مستقبل بنائے گا.جو سوتے رہے، کنفیوز رہے، وہ کچھ نہیں کر پائیں گے.

Leave a reply