حمزہ شہباز کی درخواست ضمانت کی سماعت کے دوران وکیل کا اہم انکشاف

حمزہ شہباز کی درخواست ضمانت کی سماعت کے دوران وکیل کا اہم انکشاف
باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق لاہور ہائی کورٹ میں حمزہ شہباز کی درخواست ضمانت پر سماعت ہوئی

جسٹس سردار محمد سرفراز ڈوگر اور جسٹس اسجد جاوید گھرال پر مشتمل بنچ نے حمزہ شہباز کی درخواست ضمانت پر سماعت کی ،وکیل حمزہ شہباز نے عدالت میں کہا کہ پہلی بارجب ہائیکورٹ نے ضمانت مسترد کی اس وقت ریفرنس فائل نہیں ہوا تھا،جن بنیادی وجوہات پر پہلے ضمانت خارج ہوئی وہ ریفرنس میں موجود ہی نہیں،گرفتاری وجوہات میں کہا ملازمین اکاؤنٹس میں بیرون ممالک سے ایک ارب وصول کیے ریفرنس میں حمزہ کو شہبازشریف کا بے نامی دار قراردیا گیا،ریفرنس سے پہلے نیب نے کہیں بھی حمزہ کیلئے بے نامی دارکا لفظ استعمال نہیں کیا

لاہور ہائیکورٹ میں نیب نے حمزہ شہبازکی ضمانت کی مخالفت کردی ۔نیب نے عدالت میں جمع کروائے گئے جواب میں کہا ہے کہ حمزہ شہبازکی درخواست ضمانت مسترد کی جائے، حمزہ شہبازکی پہلے ہی درخواست ضمانت خارج ہوچکی،حمزہ شہباز نے منی لانڈرنگ کی اورناجائزاثاثے بنائے،حمزہ شہبازکے کیس میں غیرمعمولی حالات نہیں ہیں۔

نیب نے لاہور ہائیکورٹ میں جمع کروائے گئے جواب میں مزید کہا کہ حمزہ شہبازنے درخواست کے ساتھ کوئی ثبوت لف نہیں کیے،حمزہ شہبازکے نیب پرلگائے گئے الزامات مفروضوں پرمبنی ہیں،نیب کی جانب سے استدعا کی گئی کہ عدالت حمزہ شہبازکی درخواست ضمانت مسترد کرے۔

واضح رہے کہ رمضان شوگرملز کیس میں حمزہ شہباز کی ضمانت 6 فروری کو منظورہوئی تھی جبکہ حمزہ شہباز کی آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں درخواست ضمانت مسترد کر دی گئی تھی، حمزہ شہباز کوٹ لکھپت جیل میں قید ہیں، نیب نے انہیں لاہور ہائیکورٹ سے ضمانت کی درخواست مسترد ہونے پر گرفتار کیا تھا.

حمزہ شہباز کا فرنٹ مین بن گیا نیب میں وعدہ معاف گواہ،بیان ریکارڈ کروا دیا

مریم نواز کے وکلاء نے ہی مریم نواز کی الیکشن کمیشن میں مخالفت کر دی، اہم خبر

صرف اللہ کوجوابدہ ،کوئی کچھ بھی رائے رکھےانصاف کے مطابق فیصلہ دیں گے، عدالت کےحمزہ کیس میں ریمارکس

نیب نے احتساب عدالت میں رپورٹ جمع کروائی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ شہبازشریف فیملی نے اپنے مختلف ملازموں کے ناموں پرکمپنیاں بنا رکھی ہیں،منی لانڈرنگ کی رقوم بے نامی کمپنیوں میں منتقل کی جاتی رہیں ،اور ان بے نامی کمپنیوں سے شریف فیملی کے اکاؤنٹس میں رقم منتقل ہوتی رہی. نیب رپورٹ میں مزید کہا گیا کہ نیب کو 10 غیرملکی منی ایکس چینجرزکا ریکارڈمل چکاہے، شہبازشریف، حمزہ،سلمان کوبرطانیہ کی 4 منی ایکس چینج سے رقوم منتقل ہوئیں، دبئی کی 6 منی ایکس چینج سے بھی رقوم منتقل کی گئیں۔ نیب رپورٹ کے مطابق شہبازشریف فیملی کو 10 کمپنیوں سے 37 کروڑبھیجے گئے.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.