اسلام آباد میں جلسے کی اجازت، انتظامیہ نے کڑی شرائط رکھ دیں

0
17
نواز شریف کو ان کے حلقے میں ہرا دوں گا،عمران خان

اسلام آباد میں جلسے کی اجازت، انتظامیہ نے کڑی شرائط رکھ دیں

پی ٹی آئی جلسہ اور دھرنے کی اجازت کے لیے این اوسی سے متعلق کیس اسلام آباد انتظامیہ نے جلسے، دھرنے کا این او سی جاری کرنے کے لیے 39 شرائط رکھ دیں

اسلام آباد انتظامیہ نے 4 صفحات پر مشتمل پر شرائط نامہ تیار کرلیا ،انتظامیہ کی جانب سے شرط میں کہا گیا ہے کہ چیئرمین تحریک انصاف عمران خا ن بیان حلفی پر دستخط کریں ،جلسے کی اجازت ایک دن کے لیے ہوگی،لاؤڈ اسپیکر کا استعمال ممنوع ہو گا، جلسے میں مذہب سے متعلق بیانات بازی سے گریز کیا جائے جلسے میں کسی قسم کےاسلحے کی نمائش پر پابندی ہوگی،جلسے اورمارچ میں کسی قومی یا پارٹی پرچم نذر آتش نہ ہو،پی ٹی آئی کے اسٹیج پر کون موجود ہوگا یہ بھی انتظامیہ کی اجازت سے مشروط ہوگا، چیئرمین تحریک انصاف عمران خا ن بیان حلفی پر دستخط کریں ،

دوسری جانب پی ٹی آئی جلسہ و دھرنے کے لیے این او سی جاری کرنے سے متعلق کیس اسلام آباد انتظامیہ نے اپنا جواب ہائیکورٹ میں جمع کروا دیا اسلام آباد انتظامیہ نے پی ٹی آئی کے سری نگر ہائی وے پر جلسے کی مخالفت کر دی ،اسلام آباد انتظامیہ نے ایڈووکیٹ جنرل کے ذریعے تحریری جواب ہائی کورٹ میں جمع کروا دیا، تحریری جواب میں کہا گیا کہ بنیادی حقوق کے تحفظ کے لیے پی ٹی آئی کو ان کی مرضی کی جگہ پر جلسے کی اجازت نہیں دی جا سکتی،پی ٹی آئی کو جلسے کے لیے سری نگر ہائی وے کے بجائے ٹی چوک کی متبادل جگہ پر جلسے کی پیشکش کی سری نگر ہائی وے پر جلسے کی اجازت مانگی جا رہی ہے جس پر لاکھوں شہری سفر کرتے ہیں، سری نگر پائی وے بلاک ہونے سے مشرقی علاقے اور آزاد جموں و کشمیر سے رابطہ منقطع ہو جائے گا،پی ٹی آئی سے پوچھا کہ دھرنا کب ختم کریں گے جس کا کوئی جواب نہیں دیا گیا، واضح ہے کہ وہ اسلام آباد میں شہریوں کی نقل و حرکت روکنا چاہتے ہیں،پہلے بھی پی ٹی آئی نے سپریم کورٹ کو مختص مقام پر پر امن احتجاج کی یقین دہانی کرائی،مظاہرین یقین دہانی کے خلاف ریڈ زون میں داخل ہوئے اور پراپرٹیز کو بھی نقصان پہنچایا، پی ٹی آئی مظاہرین نے درختوں کو جلایا، پولیس اہلکاروں کو زخمی کیا، خدشہ ہے کہ پی ٹی آئی مظاہرین پھر جلسے کی شرائط نہ مان کر ریڈ زون داخل ہوں گے،

واضح رہے کہ تحریک انصاف کے لانگ مارچ کا آج ساتواں روز ہے، تحریک انصاف کے لانگ مارچ کا آغاز جمعہ کو لاہور سے ہوا تھا، گزشتہ روز عمران خان نے گوجرانوالہ میں خطاب کیا اور پھر واپس لاہور آ گئے،آج گکھڑ سے دوبارہ لانگ مارچ کا آغاز ہوگا،جہاں عمران خان خطاب کریں گے ، اطلاعات کے مطابق حقیقی آزادی مارچ کے نئے شیڈول کے مطابق شرکاء 10 نومبر کو راولپنڈی پہنچیں گے اور 11 نومبر کو تمام پاکستان سے قافلے اسلام آباد پہنچیں گے

آج جمعرات کو وزیر آباد سے گجرات تک کا سفر طے کیا جائے گا جمعے کو گجرات سے لالہ موسیٰ تک لانگ مارچ پہنچے گا لانگ مارچ ہفتے کو لانگ مارچ کھاریاں سے ہو کر سرائے عالمگیر پہنچے گا اتوار کوسرائے عالمگیر سے لانگ مارچ جہلم پہنچے گا

ٹی وی دیکھا تو بیٹی صدف کی تصویر دیکھ کر کلیجہ پھٹ گیا۔ صدف کی ماں کی گفتگو

 صدف نعیم کے شوہر سے پی ٹی آئی رہنماؤں نے زبردستی دستخط کروائے ہیں،

عمران خان کی تعزیت کیلئے صحافی صدف نعیم کے گھر آمد 

کامونکی،لانگ مارچ کی کوریج کرنیوالے صحافیوں پر پولیس کا تشدد

پی ٹی آئی نے جلسے کی اجازت کیلئے اسلام آباد ہائیکورٹ سے رجوع کر لیا

عمران خان کا لانگ مارچ، مولانا فضل الرحمان نے حکومت کو پیغام دے دیا

Leave a reply