ڈیپارٹمنٹل کرکٹ نہ ہونے کی وجہ سے میچ فکسنگ بڑھنے کا خدشہ ہے:جاوید میانداد

0
36

کراچی :پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان جاوید میانداد نے ڈیپارٹمنٹل کرکٹ نہ ہونے کی وجہ سے میچ فکسنگ بڑھنے کا خدشہ ظاہر کردیا ہے۔

نجی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان اور لیجنڈری کرکٹر جاوید میانداد کا کہنا ہے کہ ڈیپارٹمنٹل کرکٹ کے خاتمے سے کھلاڑیوں کو خوف ہے کہ انہیں مالی تحفظ حاصل نہیں۔ان کا کہنا تھا کہ یہی وجہ ہے کہ کھلاڑیوں نے مواقع سے فائدہ اٹھانے کی کوشش کی ہے اور مالی تحفظ نہ ہونے کی وجہ سے ہی وہ ناجائز طریقے سے پیسے کمانے کی جانب راغب ہوئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ میں نے پہلے بھی اس حوالے سے اپنی آواز بلند کی ہے اور آج بھی بحالی کے حق میں ہوں کیونکہ ڈیپارٹمنٹل کرکٹ کا مقصد کھلاڑیوں کو معاشی آسودگی فراہم کرنا ہوتا ہے تاکہ وہ اپنے کھیل پر بھرپور توجہ دے سکیں۔

جاوید میانداد کہتے ہیں ماضی میں بڑے بڑے کرکٹرز کے پاس بھی کوئی ذریعہ معاش نہیں ہوتا تھا جبکہ اس دور میں کرکٹ میں بھی اتنا پیسہ نہیں ملا کرتا تھا۔

سابق کپتان کا کہنا تھا کہ دنیائے کرکٹ میں عظیم کارنامے انجام دینے والے لٹل ماسٹر حنیف محمد کو بھی کچھ نہیں ملا، ان تمام صورت حال کے بعد ہی سابق ٹیسٹ کپتان عبدالحفیظ کاردار نے ملک میں ڈیپارٹمنٹل کرکٹ کو متعارف کروایا۔انہوں نے مزید کہا کہ ملک میں ڈیپارٹمنٹل کرکٹ کو کاؤنٹی کرکٹ جیسی حیثیت حاصل تھی جس سے کھلاڑی خود کو ذہنی طور پر محفوظ تصور کیا کرتے تھے لیکن آج سینکڑوں کرکٹرز روٹی تک کو ترس رہے ہیں۔

Leave a reply