کنگنا رناوت کے خلاف مذہبی فسادات کرانے کے الزام میں مقدمہ درج

بالی وڈ کی متنازع اداکارہ کنگنا رناوت اور ان کی بہن رنگولی چنڈیل کے خلاف بھارتی ریاست مہارا شٹر کے شہر ممبئی کی پولیس نے مذہبی فسادات کرانے کے الزامات میں مقدمہ دائر کردیا۔

باغی ٹی وی : بھارتی اخبار انڈین ایکسپریس کی رپورٹ کے مطابق پولیس نے اداکارہ کنگنا رناوت اور ان کی بہن رنگولی چنڈ یل کے خلاف ہفتے کےروز سہ پہر کو ایک میٹروپولیٹن عدالت میں پیش کردہ نجی شکایت کی بنا پر باندرا میں ایف آئی آر درج کی ۔

اداکارہ اور ان کی بہن کے خلاف مذہبی فسادات کرانے، زبان، رنگ اور نسل کی بنیاد پر مختلف برادریوں کو نشانہ بناکر ان میں فسادات کرانے کے الزامات کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

ممبئی میٹروپولیٹن میجسٹریٹ کی عدالت میں منور علی سید نامی کاسٹنگ ڈائریکٹر اور فٹنیس ٹرینر نے دخواست دی تھی کہ اداکارہ کی جانب سے گزشتہ چند ماہ سے کی جانے والی ٹوئٹس سے مذہبی فسادات پیدا ہونے کا خدشہ ہوگیا ہے۔

پولیس کے مطابق ، ایف آئی آر میں کہا گیا ہے کہ بہنوں نے اپنے ٹویٹس کے ذریعے ، ہندوستان کے آئین اور مہاراشٹر حکومت کے امیج کو بدنام کرنے ، مسلمانوں کے جذبات کو مجروح کرنے اور ہندوؤں اور مسلمانوں کے مابین تفریق پیدا کرنے کی کوشش کی۔

منور علی سید کا کہنا تھا کہ کنگنا رناوٹ اور ان کی بہن کی جانب سے زبان، ریاست، رنگ، نسل اور مذہب کی بنیاد پر لوگوں میں فسادات کروانے کی کوشش جیسی ٹوئٹس کی جا رہی ہیں۔

درخواست گزار نے عدالت کو بتایا کہ دونوں بہنیں با لی وڈ انڈسٹری پر بھی سنگین الزامات لگا رہی ہیں جب کہ کنگنا رناوٹ ہندو مسلم فسادات کروانے کی کوشش کر رہی ہیں اس لیے ان کے خلاف مقدمہ دائر کرنے کا حکم دیا جائے۔

منور علی سید کی درخواست پر مقامی عدالت نے ممبئی پولیس کو حکم دیا کہ اداکارہ اور ان کی بہن کے خلاف نسلی و مذہبی فسادات کروانے سمیت دوسرے لوگوں کے جذبات مجروح کرنے کی دفعات کے تحت مقدمہ دائر کیا جائے۔

عدالتی احکامات کے بعد باندرا پولیس اسٹیشن نے کنگنا رناوٹ اور ان کی بہن رنگولی چنڈیل کے خلاف لوگوں کو بھڑکانے، دوسروں کے جذبات مجروح کرنے اور نسلی و مذہبی فسادات کرانے کی کوشش جیسے الزامات کے تحت فرسٹ انفارمیشن رپورٹ (ایف آئی آر) درج کردی۔

ڈپٹی کمشنر پولیس (زون IX) ابھیشیک تریموکے نے بتایا کہ مقدمہ دائر ہونے کے بعد اب تفتیشی افسر اداکارہ اور ان کی بہن کے خلاف لگائے گئے الزامات کے ثبوت اکھٹے کریں گے اور دونوں بہنوں کے سوشل میڈیا اکاؤنٹس کا ریکارڈ حاصل کیا جائے گا۔

پولیس نے بتایا کہ عدالت کے سامنے دائر شکایت میں کہا گیا ہے کہ رناوت برادریوں میں تفریق پیدا کر رہی ہے اور فرقہ وارانہ منافرت پھیلارہی ہے”۔ عدالت نے جمعہ کے روز بہنوں کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کا حکم دیا تھا۔

دوسری جانب کنگنا رناوت کے وکیل نے اداکارہ اور ان کی بہن کے خلاف مقدمہ دائر ہونے کو آزادی اظہار رائے پر قدغن قرار دیا اور کہا کہ ان پر غلط الزامات کے تحت مقدمہ دائر کیا گیا تاہم وہ الزامات کا عدالت میں اچھے طریقے سے دفاع کریں گے۔

خیال رہے کہ کنگنا رناوت با لی وڈ میں اقربا پروری جیسے مسائل سمیت فلم انڈسٹری میں خواتین کا استحصال کیے جانے پر بھی کھل کر بات کرتی آئی ہیں علاوہ ازیں کنگنا رناوت بالی وڈ شخصیات کی جانب سے منشیات کے استعمال کی باتیں بھی کرتی آئی ہیں جب کہ حالیہ چند ماہ میں انہیں مسلم مخالف ٹوئٹس بھی کرتے ہوئے دیکھا گیا۔

بالی وڈ کو نشہ آور اور گندگی قرار دینے پر 2 بھارتی نیوز چینلز کے خلاف مقدمہ درج

کنگنا رناوت کے خلاف کسانوں کی توہین کرنے پر مقدمہ درج

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.