کیا 20 پولنگ کے علاوہ باقی پولنگ اسٹیشن پر آپکی امیدوار جیت نہیں رہی؟ چیف الیکشن کمشنر کا سوال؟

0
39

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق الیکشن کمیشن میں این اے 75 ڈسکہ ضمنی الیکشن کیس کی سماعت ہوئی

ن لیگی وکیل سلمان اکرم راجہ نے کہا کہ جہاں پریذایڈنگ افسران غائب ہوئے وہاں پولنگ کی شرح 86،80 فیصد رہی ،چیف الیکشن کمشنر نے کہا کہ آپ نے کہا شہری علاقوں میں ٹرن آؤٹ کم رہا، 20پولنگ اسٹیشن پر80فیصد رہا،بیس پولنگ اسٹیشن کے فارم 45 لیے ہیں ،پریزائیڈنگ آفیسر اور آپ کے فارم ایک جیسے ہیں، ن لیگی وکیل نے کہا کہ پی ٹی آئی والوں نے کہا یہ ڈنڈے سوٹے کا الیکشن ہے، چیف الیکشن کمشنر نے وکیل سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ گاوَں میں ویسے بھی ڈنڈے سوٹے چلتے ہیں،

سلمان اکرم راجہ نے کہا کہ الیکشن کمیشن کے پاس اختیارات ہیں کہ معاملے کی تہہ تک تحقیقات کریں  ممکن نہیں کہ 20پی او کے فون بند ہوں،پولیس کا وائرلیس کام نہ کرے،حیران کن ہے کہ چیف سیکرٹری کان مبربند ہوجا ئے،حیران کن ہے کہ چیف سیکرٹری چیف الیکشن کمشنر کے رابطےمیں نہ آئے، این اے 75 میں انتظامیہ اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کی کمزوری تھیوکیل نے سماعت میں الیکشن کمیشن کی پریس ریلیز پڑھ کر سنائی ،ن لیگ نے مطالبہ کیا کہ ان سازش کرنے والوں کو قرار واقعی سزا دیں،ایسا عمل کبھی بھی پاکستان کی انتخابی تاریخ میں نہیں ہوا،

چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ نے سلمان اکرم راجہ سے سوال کیا کہ کیا 20 پولنگ کے علاوہ باقی پولنگ اسٹیشن پر آپکی امیدوار جیت نہیں رہی؟ جس پر ن لیگی وکیل نے جواب دیا کہ ہم جیت ضرور رہے ہیں لیکن ہماری جیت کو بہت کم کیا گیا ہے۔

مسلم لیگ ن کی این اے 75 سے امیدوار نوشین افتخار نے چیف الیکشن کمشنرکو درخواست کی تھی جس پر چیف الیکشن کمشنر نے نتائج روک دیئے،نوشین افتخار کی جانب سے دی گئی درخواست میں کہا گیا ہے کہ انتخابات میں 23 پولنگ ا سٹیشن کا عملہ انتخابی نتائج سمیت غائب ہے،اب تک 335 اسٹیشنوں کےنتائج مرتب کیے گئے ہیں،ریٹرننگ افسر نے پریزائیڈانگ افسران اور عملے کی بازیابی پر بے بسی کا اظہارکیا مسنگ نتائج کے حوالے سے شکوک شبہات پائے جاتے ہیں،مسنگ 30 پولنگ اسٹیشنوں کے نتائج معطل کرکے ان کا فرانزک آڈٹ کروایاجائے،الیکشن کمیشن کی طرف سے پوری صورتحال کے جائزے تک نتیجہ روک دیاجائے،مسنگ 23 اورڈسکہ سٹی کے 36 پولنگ ا سٹیشنوں میں دوبارہ انتخابات کروائے جائیں

پولنگ ایجنٹس پولنگ بیگ سمیت لا پتہ ہوئے، عمران خان پر مقدمہ ہونا چاہئے،مریم اورنگزیب

این اے 75 کے337 پولنگ سٹیشنزکے نتائج بدلے یا نہیں؟ دوران سماعت اہم انکشاف

این اے 75،پی ٹی آئی کی استدعا ، دوران سماعت چیف الیکشن کمشنر کا بڑا اعلان

ہمارے لوگ شہید ہوئے، کن شہروں سے غنڈوں کو لایا گیا،علی اسجد ملہی کا اہم انکشاف

ڈی ایس پی نے مجھ پر تشدد کیا اور میری چادر کھینچ لی،یہ لڑائی میری نہیں بلکہ، نوشین افتخار برس پڑی

ن لیگ جو الیکشن جیتے وہ ٹھیک ہے، جو ہارے وہاں دھاندلی،شبلی فرازبرس پڑے

معاملہ خراب کرنے کا الزام نہ لگائیں تحقیقات کریں،رانا ثناء اللہ کا چیلنج

ن لیگ کے افتخار الحسن عرف ظاہرے شاہ کے انتقال سے خالی ہونیوالی نشست این اے 75 ڈسکہ پر رات ساڑھے چار بجے تک زبر دست مقابلہ چل رہا تھا ، ادھر این اے 75 ڈسکہ میں سارا دن کشیدگی کا ماحول رہا، موٹر سائیکل سوار افراد کھلے عام جدید اسلحہ لیے سڑکوں پر دندناتے رہے، پولنگ کے دوران لڑائی جھگڑے کے واقعات بھی ہوئے اس دوران ایک پولنگ سٹیشن پر جھگڑے کے بعد فائرنگ سے 2 افراد جاں بحق اور 10 زخمی ہوگئے۔

پاکستان مسلم لیگ نون کے رہنما احسن اقبال نے ڈسکہ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ این اے 75 میں جعلسازی کے ساتھ نتائج بنائے گئے، پریذائیڈنگ آفیسرز کو اغوا کیا گیا، انکوائری ہونے چاہیے کہ کن لوگوں نے یہ کام کیا، ان پولنگ سٹیشنز میں دوبارہ پولنگ ہونی چاہیے۔

ڈسکہ میں جو کچھ ہوا ہے اس پر مٹی نہ ڈالی جائے،ن لیگی وکیل کے دلائل

Leave a reply