فلسطین میں حاضر ہوں تحریر : راجہ ارشد

0
26

بات کروں گا وزیر خارجہ کے حالیہ دورے کی۔
ارض فلسطین میں حاضر ہوں
یہ وہ نعرہ ہے جو کپتان کے سپاہی نے کفر کی دہلیز پے بڑی جرآت کے ساتھ بلند کیا۔
بس واضح ہوا کہ کپتان ہی ہے
جو میری اور ہر پاکستانی کے امیدوں پر پورا اترا۔یہی نہیں بلکہ اب عالم اسلام کی امیدیں بھی کپتان سے وابستہ ہو چکیں ہیں۔

اس وقت ہر پاکستانی کی یہ آرزو تھی۔بلکہ میں تو کچھ یوں کہوں گا کہ امت مسلمہ کے ہر فرد کی خواہش تھی کہ کوئی تو ہو جو ڈٹ کر مقابلہ کرئے ۔جو دیار غیر میں کھڑا ہو کر ان کو للکار سکے۔ جو شیر کی طرح دھاڑے اور مسلمانوں کے دل کی آواز بن سکے۔ایک ایسا رہنما جس کی زبان سے ادا ہونے والا حرف ہر پاکستانی اور ہر مسلمان کے دل کی آواز بن جائے۔

آفرین ہے سبز ہلالی پرچم والے اسلامی جمہوریہ پاکستان
عالمی سطح پر پاکستان نے فلسطیںن کا مقدمہ جس دلائل، جرآت اور مہارت کے ساتھ لڑا اور جیتا۔
اسرائیل کو جس طرح للکارا بلکہ اقوام عالم میں ننگا کر کے بھر پور انداز میں آئینہ بھی دکھایا ۔

یہاں پے یہ کہنا چاہوں گا کہ ایک بات تو واضح ہو گئی کہ عمران خان کا مشن صرف پاکستان کو اٹھانا نہیں بلکہ عالم اسلام کو اٹھانا ہے۔
انسانیت کو تذلیل سے بچانا اور انسانیت کی بقا کی جنگ لڑنا ہے۔

ہمارے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا سی این این کو دیا گیا انٹرویو پاکستانیوں کے لئے باعث فخر ہے۔بلکل صاف ستھرے اور دو ٹوک الفاظ میں بین الاقوامی دہشتگرد کا اصل چہرہ دنیا کو دکھایا۔

اس وقت پوری دنیا کو یہ بات بہت اچھی طرح سے سمجھ جانی چاہیے کہ پاکستان کی باگ ڈور بلکہ عالم اسلام کے تاریخ کے دیانت دار ترین اور مخلص ترین ہاتھوں میں ہے۔
عالمی قوتوں کی صفوں میں بھونچال آ چکا اور سب پر لرزہ طاری ہے۔

میرے عزیز ہم وطنوں! آج تو کچھ لوگوں کو تھوڑی سی عقل آنی چاہیئے جو یہودی ایجنٹ یہودی ایجنٹ کی رٹ بغیر سوچے سمجھے لگائے پھرتے تھے۔ آج
اللہ پاک ہم سب کا حامی و ناصر ہو ہمارے ملک اور ہمارے لیڈر کا محافظ ہو۔آمین

پاکستان زندہ باد

@RajaArshad56

Leave a reply