fbpx

پولیس نے مدرسہ طالبعلم سے بد فعلی کے ملزم مفتی عزیز الرحمن کیخلاف مقدمہ درج کر لیا

لاہور پولیس نے مدرسے کے لڑکے سے بد فعلی کے ملزم مفتی عزیز الرحمن کے خلاف مقدمہ درج کر دیا۔

باغی ٹی وی :گزشتہ روزسے لا ہور کے معروف مدرسے کے معروف مہتم نے مدرسے کے اندراپنے جوان طالب علم سے زبردست جنسی زیادتی کی زیادتی کی ویڈیو سوشل میڈیا پروائرل ہو رہی ہے اورجس میں ان الزامات کی حقیقت دکھائی گئی ہے-

دوسری جانب اس مدرسے کے اس مہتمم کے حوالے سے مختلف قیاس آرائیوں نے بھی حقیقت کی شکل اختیارکرلی ہے وائرل ویڈیو کے مطابق لاہورکے معروف مدرسہ جامعہ منظور الاسلام لاہور کے مہتتم اور ( جے یو آئی ف) کےمرکزی رہنما مفتی عزیز الرحمن نے بدفعلی کی تو بچے صابر کی شکایت پر اُلٹا اسی کو جُھوٹا کہا گیا- جس پر طالب علم نے ویڈیو پیغٍام میں کہا کہ میرے ساتھ زیادتی ہوئی ، میں خود کشی کر لوں گا

دوسری طرف اس حوالے سے دیوبندی مکتبہ فکرکے دینی بورڈ وفاق المدارس عربیہ کی طرف سے ایک مذمتی لیٹرجاری کیا گیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ یہ مذکورہ مفتی عزیزالرحمن نے انتہائی قبیح فعل کیا ہے اوراس کی وجہ سے ان سے دینی حلقوں کی بڑی بدنامی ہوئی ہے-

وئیڈیو وائرل ہونے کے بعد عوام اور دینی حلقوں کی جانب سے غم وغصے کا اظہار کیا جا رہا ہے یہاں تک کہ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹ پر مفتی عزیزالرحمن پر ٹرینڈ ٹاپ فہرست پر ہے جس میں لوگوں کی جانب سے اس واقعے کی مذمت کرتے ہوئے حکومت سے طالبعلم کو انصاف دینے اور مفتی کو سزا دینے کا مطالبہ کیا جارہا ہے-

لوگوں اور معروف شخصیات و دینی حلقوں کی جانب سے زور دینے پر لاہور پولیس نے مذکورہ ملزم کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے-

 

معروف مدرسے کے مہتمم مفتی کی طالب علم کے ساتھ زیادتی ۔ویڈیو وائرل

مولانا کی بچے سے زیادتی ، ویڈیو لیک ، اصل حقیقت کیا ہے ، سنیے مبشر لقمان کی زبانی

مذہبی رہنماوں کا ردعمل

طالب علم نے چائے پلائی اور پھر….مفتی عزیرالرحمان کی زیادتی کیس میں وضاحتی ویڈیو

طالب علم سے زیادتی کرنیوالے مفتی کو مدرسہ سے فارغ کر دیا گیا