شمالی کوریا نے ایٹمی حملہ کرنے کا قانون منظور کرلیا

0
32

عالمی سطح پر سخت پابندیوں کے باوجود شمالی کوریا نے ایٹمی حملہ کرنے کا قانون منظور کرلیا ہے۔

باغی ٹی وی: شمالی کوریا نے ایک نیا قانون پاس کیا ہے جس میں خود کو جوہری ہتھیاروں کی حامل ریاست قرار دیا گیا ہے جس میں رہنما کم جونگ ان کا کہنا ہے کہ یہ "ناقابل واپسی” ہے۔

امریکی بمبار طیارے کو دوران پرواز 6 سعودی لڑاکا طیاروں نے سیکیورٹی فراہم کی

شمالی کوریا کے سرکاری میڈیا نے جمعہ کو رپورٹ کیا کہ ملک کے سربراہ کم جونگ ان نے اس عزم کا اظہار کیا کہ نئے قانون سے جو ہری ہتھیاروں کی حامل ریاست کی حیثیت ناقابل واپسی ہو گی۔اور کہا کہ جوہری تخفیف پر کوئی بات چیت نہیں ہو سکتی کیونکہ انہوں نے اس قانون کی منظوری کو سراہا ہے-

نئے قانون میں پیانگ یانگ کے اپنے تحفظ کے لیے قبل از وقت جوہری حملوں کے استعمال کے حق کو بھی شامل کیا گیا ہے – ایک سابقہ ​​موقف کو اپ ڈیٹ کرتے ہوئے کم نے کہا تھا کہ وہ اپنے ہتھیاروں کو صرف اس وقت تک رکھے گا جب تک کہ دوسرے ممالک جوہری ہتھیاروں سے پاک نہیں ہو جاتے اور انہیں غیر جوہری ریاستوں کے خلاف پہلے سے استعمال نہیں کریں گے۔

جوہری ہتھیار ریاست کے وقاراور مطلق طاقت کی نمائندگی کرتے ہیں، کم نے کہا کہ انہوں نے ملک کی ربڑ اسٹیمپ پارلیمنٹ ، سپریم پیپلز اسمبلی کی طرف سے نئے قانون کو متفقہ ووٹ میں منظور کرنے کے فیصلے کا خیر مقدم کیا ہے۔

امریکا نے پاکستان کو ایف 16 طیاروں کے سامان اورآلات فروخت کرنےکی منظوری دیدی

کم نے کہا، "قومی جوہری طاقت کی پالیسی سے متعلق قوانین اور ضوابط کو اپنانا ایک قابل ذکر واقعہ ہے کیونکہ یہ ہمارا اعلان ہے کہ ہم نے قومی دفاع کے ایک ذریعہ کے طور پر جنگی ڈیٹرنس کو قانونی طور پر حاصل کیا ہے نئے قانون میں دیگر ممالک کے ساتھ جوہری ٹیکنالوجی کے اشتراک پر بھی پابندی ہے۔

یہ شمالی کوریا کی جانب سے اپنے جوہری ہتھیاروں اور میزائل پروگرام کی توسیع پر بڑھتے ہوئے علاقائی کشیدگی کے درمیان آیا ہے۔
کم نے حالیہ مہینوں میں امریکہ اور ایشیا میں اس کے اتحادیوں کے خلاف جوہری تنازعے کی بڑھتی ہوئی اشتعال انگیز دھمکیاں دی ہیں۔

اس کے ساتھ ہی امریکہ کو یہ تشویش بڑھ گئی ہے کہ شمالی کوریا برسوں میں اپنے پہلے زیر زمین جوہری تجربے کی تیاری کر رہا ہے۔
سیئول میں یونیورسٹی آف نارتھ کورین اسٹڈیز کے پروفیسر یانگ مو جن نے کہا کہ یہ قانون پیانگ یانگ کی چین اور روس کے ساتھ اپنے تعلقات کو مضبوط کرنے کی امیدوں کو ظاہر کرتا ہے جب کہ عالمی تناؤ میں اضافہ ہوا ہے-

واضح رہے کہ شمالی کوریا نے سخت پابندیوں کے بعد بھی 2006 سے 2017 کے درمیان 6 جوہری تجربات کیے ہیں جبکہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کی خلاف ورزی کرتے ہوئے فوجی صلاحیت کو آگے بڑھایا۔

امریکہ فی الفورتائیوان کی فوجی مدد کرنےسے بازآجائے:چین کی امریکہ کوسخت وارننگ

Leave a reply