fbpx

امریکی بمبار طیارے کو دوران پرواز 6 سعودی لڑاکا طیاروں نے سیکیورٹی فراہم کی

سعودی وزارت دفاع نے امریکی بمبار طیارے کو سکیورٹی فراہم کرنے کی تصدیق کی

ریاض: سعودی عرب کی شاہی فضائیہ کے لڑاکا طیاروں نے امریکی بمبار طیارے کو اپنی حدود سے گزرنے میں دوران پرواز سکیورٹی فراہم کی،یہ پیش رفت خطے کی سلامتی اور استحکام کو فروغ دینے کے لیے دونوں فضائی افواج کے درمیان جوائنٹ ایکشن کا حصہ ہے۔

سعودی عرب نے عمرہ ویزے کی میعاد بڑھا دی

باغی ٹی وی : "العربیہ” کے مطابق سعودی عرب کی شاہی فضائیہ کے چھ F-15SA ٹائفون اور F-15C لڑاکا طیاروں نے امریکی فضائیہ کے بی۔52 (اسٹریٹیجک) بمبار طیارے کو مملکت کی فضائی حدود سے گزرتے ہوئے سکیورٹی فراہم کی اور دوران پرواز اس کے ارد گرد اپنا حصار قائم رکھا۔


سعودی وزارت دفاع نے امریکی بمبار طیارے کو سکیورٹی فراہم کرنے کی تصدیق کرتے ہوئے بیان میں کہا ہے کہ سعودی فضائی حدود سے گزرنے کے دوران سکیورٹی فراہم کرنے کا معاملہ خطے کی سلامتی اور استحکام کے فروغ کے لیے دونوں فضائی افواج کے درمیان جوائنٹ ایکشن سمجھوتے کا حصہ ہے۔

واضح رہے کہ مشرق وسطیٰ کی فضائی حدود سے گزرنے والا امریکی بی 52 بمبار طیارہ جوہری ہتھیار لے جانے کا حامل ہے مملکت کی میزبانی میں گذشتہ ماہ کے دوران سعودی مسلح افواج اور امریکی میرین کور نے لاجسٹک مشق "الغضب العارم” کی۔

مشقوں میں فوج کی موومنٹ، تعیناتی اور لاجسٹک آپریشنز کے بارے میں بہت سے مفروضوں اور مشقوں کا نفاذ کیا گیا اس کے علاوہ ان مشقوں میں مواصلات، طب، فیلڈ میڈیسن، اور جان بچانے والی جنگی مشقوں کے لیے تربیتی مفروضوں،آتشیں گولہ بارود اور سپلائی کے ساتھ شوٹنگ کے علاوہ انخلاء کی کارروائیوں کے تجربات کیے گئے۔

امریکا نے پاکستان کو ایف 16 طیاروں کے سامان اورآلات فروخت کرنےکی منظوری دیدی