خواتین میں پوسٹ پارٹم ڈپریشن کےعلاج کیلئے تیار گولی کی منظوری مل گئی

2023 کی چوتھی سہ ماہی میں زرزووائی کو لانچ اوردستیاب کیا جائے گا
0
45
america

امریکا میں ہیلتھ ریگولیٹرز کی جانب سے ہر سال پوسٹ پارٹم ڈپریشن (بچے کی پیدائش کے بعد ہونے والے ڈپریشن) کے علاج کے لیے پہلی گولی کی منظوری دے دی گئی ہے۔

باغی ٹی وی : ماں بننے والی خواتین میں ڈپریشن کی علامات کا خطرہ زیادہ ہوتا ہے بچے کی پیدائش کے بعد ماؤں میں ڈپریشن کے لیے پوسٹ پارٹم ڈپریشن کی اصطلاح کا استعمال کیا جاتا ہے جو ایک عام عارضہ ہے، صرف امریکا میں ہی ہر 7 میں سے ایک خاتون کو اس کا سامنا ہوتا ہے۔

امریکی فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن (ایف ڈی اے) نے کہا ہے کہ انہوں نے بائیوجن اور سیج تھراپیوٹکس کی تیار کردہ ”زرزووائی“ کو بچے کی پیدائش یا حمل سے متعلق خواتین میں شدید ڈپریشن کے علاج کے لیے منظورکیا ہے یہ گولی ہر سات میں سے ایک نئی ماں کے لیے لائف لائن ہے، کیونکہ اب تک امریکا میں پوسٹ پارٹم ڈپریشن کا علاج صرف ایک انجکشن سے کیا جاتا تھا س دوا کو Zurzuvae کے نام سے فروخت کیا جائے گا منہ کے ذریعے کھائے جانے والی اس دوا کو روزانہ ایک بار کھانا ہوگا جبکہ مجموعی طور پر اس کا کورس 14 دن کا ہوگا۔

چین میں 5.5 شدت کا زلزلہ.عمارتئں منہدم متعدد افراد زخمی

ایف ڈی اے کے مطابق پوسٹ پارٹم ڈپریشن ایک سنجیدہ اور ممکنہ طور پر جان لیوا مرض ہے، جس کے دوران خواتین کو اداسی، پچھتاوے اور اپنی شخصیت ناکارہ ہونے جیسے احساسات ہوتے ہیں جبکہ سنگین کیسز میں تو وہ خود کو نقصان پہنچانے کےبارے میں بھی سوچنے لگتی ہیں اس ڈپریشن کے باعث ماں اور بچے کے درمیان تعلق بھی متاثر ہوتا ہے جس سے بچے کی جسمانی اور جذباتی نشوونما پر منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں، مگر یہ دوا ان نقصانات سے بچانے میں مددگار ثابت ہوگی۔

ایف ڈی اے نے دوا کے حوالے سے ایک انتباہ بھی جاری کرتے ہوئے بتایا کہ اس دوا کو کھانے کے بعد کم از کم 12 گھنٹے تک ڈرائیونگ کرنے یا مشینری چلانے سے گریز کرنا بہتر ہوگااس دوا کو کھانے سے سر چکرانے، غنودگی طاری ہونے، ہیضے، تھکاوٹ، نزلہ زکام اور پیشاب کی نالی میں سوزش جیسے مضر اثرات کا سامنا بھی ہو سکتا ہے۔

نیو یارک ٹائمزکی ایک رپورٹ کے مطابق ”بریکسینولون“ نامی اس دوا کے لیے اسپتال میں 60 گھنٹے تک انفیوژن کی ضرورت ہوتی ہے اور اس کی قیمت 34 ہزار ڈالر ہے میساچوسٹس کے شہر کیمبرج میں واقع سیج تھراپیوٹکس اینڈ بائیوجن کا کہنا ہے کہ انہیں توقع ہے کہ زرزووائی رواں سال دستیاب ہو جائے گی۔

چئیرمین پی ٹی آئی کی گرفتاری پر امریکا کا بیان

سیج تھراپیوٹکس اینڈ بائیوجن نے ایک بیان میں کہا ہے کہ امریکی ڈرگ انفورسمنٹ ایڈمنسٹریشن کی جانب سے کنٹرولڈ شیڈولنگ کے بعد 2023 کی چوتھی سہ ماہی میں زرزووائی کو لانچ اوردستیاب کیا جائے گا۔

ایف ڈی اے کی جانب سے یہ منظوری کمپنی کے دو مطالعات کے بعد سامنے آئی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ جن خواتین نے یہ ادویات استعمال کیں ان میں چار سے چھ ہفتوں کے عرصے میں ڈپریشن کی علامات کم پائی گئیں، زرزووائی کے رپورٹ کردہ ضمنی اثرات میں غنودگی اور چکر آنا شامل ہیں تاہم 14 روز تک دن میں ایک بار لی جانے والی اس گولی کی قیمت کا اعلان ابھی تک اس کے مینوفیکچرر کی جانب سے نہیں کیا گیا ہے اس دوا کو 2 کمپنیوں Biogen اور Sage Therapeutics, Inc نے مل کر تیار کیا ہے جس کی منظوری کے لیے فروری میں ایف ڈی اے کو درخواست دی گئی تھی۔

اس سے قبل 2019 میں ایف ڈی اے نے پوسٹ پارٹم ڈپریشن کے علاج کے لیے Zulresso نامی دوا کی منظوری دی تھی یہ دوا ایک آئی وی ڈرپ کے ذریعے دی جاتی ہے اور اس کے لیے 60 گھنٹوں کا وقت درکار ہوتا ہے، جس وجہ سے بیشتر خواتین اسے استعمال کرنے سے گریز کرتی ہیں اس نئی دوا کے حوالے سے ہونے والے کلینیکل ٹرائل کے تیسرے مرحلے میں دریافت کیا گیا تھا کہ 14 دن تک روزانہ 50 ملی گرام گولی کھانے سے خواتین کی ڈپریشن کی علامات میں 50 فیصد یا اس سے زیادہ کمی آتی ہے۔

اے آئی ٹیکنالوجی،بل گیٹس نے لاکھوں اموات کی وجہ بننے والے نظام کی پیشگوئی کر …

Leave a reply