پاک فوج کے ہیلی کاپٹرز کے ذریعے 4 ہزار 264 سیلاب میں محصور افراد کو نکالا جا چکا

0
30

پاک فوج کی سیلاب متاثرہ علاقوں میں امدادی کاوشیں جاری ہیں ،پاک آرمی ایوی ایشن ہیلی کاپٹرز نے محصور افراد کو نکالنے کے لیے 446 پروازیں بھریں گزشتہ 24 گھنٹے کے دوران 32 پروازیں، 163 افراد کو بچایا گیا ہیلی کاپٹرز سے 34 ٹن امدادی سامان سیلاب متاثرین تک پہنچایا گیا اب تک ہیلی کاپٹرز کے ذریعے 4 ہزار 264 سیلاب میں محصور افراد کو نکالا جا چکا ہے ریلیف کیمپس اور امدادی اشیاجمع کرنے کے پوائنٹس مکمل فعال ہیں ملک بھر میں 147 ریلیف کیمپس، 284 امدادی اشیا کلیکشن پوائنٹس قائم ہیں،

این ایف آر سی سی کے مطابق پاک بحریہ کی سیلاب متاثرہ علاقوں میں بچاؤ اور امدادی سرگرمیاں جاری ہیں پاک بحریہ نے 4 فلڈ ریلیف کوآرڈی نیشن سینٹرز، 6مرکزی کلیکشن پوائنٹس قائم کیے،پاک بحریہ نے دو خیمہ بستیاں قائم کیں، جہاں 4 ہزار 189 افراد رہائش پذیر ہیں، پاک بحریہ کے زیر انتظام قائم 50 میڈیکل کیمپس میں 33 ہزار 973 مریضوں کا علاج کیا گیا،مختلف اضلاع میں 1200 ٹن راشن، 2 ہزار 780 خیمے، 4 لاکھ 60 ہزار 577 لیٹر صاف پانی تقسیم کیا،پاکستان نیوی کی 23 ایمرجنسی ریسپانس ٹیمیں 10 اضلاع میں تعینات ہیں‌،ہنگامی ریسپانس ٹیمیں 45 موٹرائزڈ بوٹس، 2 ہوور کرافٹس سے لیس ہیں، پاک بحریہ کی ان ایمرجنسی ریسپانس ٹیموں نے 13 ہزار 63 محصور افراد کو بچایا،پاک بحریہ نے اندرون سندھ میں 2 ہیلی کاپٹر بھی تعینات کیے ہیں پاک بحریہ کے ہیلی کاپٹرز نے اب تک 47 پروازوں میں 465 افراد کو بچایا،ہیلی کاپٹرز کے ذریعے 3 ہزار 297 پیکٹس راشن، 300 کلو گرام ادویہ تقسیم کی گئیں،

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ سے قطر کے سفیر شیخ سعود عبدالرحمان الثانی کی ملاقات ہوئی ہے قطر کے سفیر نے وزیراعلیٰ سندھ سے بارشوں سے جانی نقصان پر گہرے دکھ کا اظہار کیا، اور کہا کہ اس مشکل گھڑی میں پاکستان بالخصوص سندھ کے ساتھ کھڑے ہیں،وزیراعلیٰ سندھ نے قطر کے سفیر شیخ سعود عبدالرحمان الثانی کو سیلاب کے باعث تباہی سےآگاہ کیا اور کہا کہ سیلاب سے15لاکھ گھراور تمام فصلیں پانی میں ڈوب گئی ہیں،سندھ کے 23 اضلاع میں 10.48 ملین لوگ متاثر ہوئے ہیں کیمپس میں 6 لاکھ متاثرین قیام کررہے ہیں ،قطری سفیرنے وزیراعلی سندھ کو خیموں کی کارگو سہولت دینے کی یقین دہانی کروائی اور کہا کہ متاثرین کی بحالی کیلئے سندھ حکومت کا ہر ممکن ساتھ دیں گے میں خود بھی بارش متاثرہ علاقوں کا دورہ کرنے جارہا ہوں

وزیر اطلاعات سندھ شرجیل میمن کا کہنا تھا کہ کراچی کے 6 اضلاع میں 41 ریلیف کیمپوں میں 17 ہزار 337 متاثرین کو ٹھہرایا گیا ہے کراچی کے 6اضلاع میں 41 کیمپوں میں متاثرین کو بنیادی اشیا فراہم کی جارہی ہیں کیمپوں میں کھانا، پانی ، ادویات اور دیگر سہولیات کی فراہمی جاری ہے بارش اور سیلاب سے متاثرین کو ریسکیو کرنا حکومت کی اولین ترجیح ہے کراچی کے ضلع شرقی میں قائم 15 کیمپوں میں 8ہزار 476متاثرین سیلا ب کو رکھا گیا ،ضلع غربی کے 6 کیمپوں میں 4ہزار 248متاثرین کو ٹھہرایا گیا ،کراچی کے ضلع وسطی میں 2 ریلیف کیمپ میں آنے والے متاثرین کو رکھا جائے گا،

دادو میں سیلاب کی صورتحال برقرار،میہڑ رنگ بند پر دباؤ ختم ہونا شروع ہو گیا،میہڑ رنگ بند میں پانی کی سطح 3 سے 5 انچ تک کمی ہوئی ہے خیرپورناتھن شاہ میں بھی پانی کی سطح میں بتدریج کمی ہوئی ہے خیرپور ناتھن شاہ انڈس ہائی وے سے ملحقہ علاقوں میں پانی 5 سے 6 انچ کمی ہوئی ہے کاچھو کے سیکڑوں دیہات کا زمینی رابط تحصیل ہیڈ کوارٹر جوہی سے منقطع ہو چکا ہے

بھان سعیدآباد کی دل نہر کو 20 فٹ چوڑا شگاف پڑ گیا،سیہون شریف،منچھر جھیل کے پانی کو مزید راستے دینے کیلئے دوسرا کٹ بھی لگا دیا گیا،منچھر جھیل کو ایل ایس بند مایئل 99 اور 100 کے درمیاں کٹ لگا دیا گیا ،دوسرے کٹ سے منچھر جھیل کا سیلابی پانی دریائے سندھ میں اخراج ہوگا منچھر جھیل کی سطح کی سطح میں خاطر خواہ کمی نہیں ہوئی،

متحدہ عرب امارات کے حکام کا آرمی چیف سے رابطہ،سیلاب زدگان کیلیے امداد بھجوانے کا اعلان

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے برطانوی ہائی کمشنر کرسچن ٹرنر کی ملاقات

سیلابی پانی کے بعد لوگ مشکلات کا شکار ہیں کھلے آسمان تلے مکین رہ رہے ہیں

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کانجو اور سوات کا دورہ کیا

وزیراعظم شہباز شریف نے چارسدہ میں سیلاب سے متاثرہ علاقوں کا دورہ کیا

پاک فضائیہ کی خیبر پختونخوا، سندھ، بلوچستان اور جنوبی پنجاب کے سیلاب سے شدید متاثرہ علاقوں میں امدادی کارروائیاں۔

Leave a reply