پہلے بھی تباہی ہوئی،تعمیرات کی اجازت دیکر غفلت کا مظاہرہ کیا گیا، آرمی چیف

0
36

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کانجو اور سوات کا دورہ کیا

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کانجو کینٹ ہیلی پیڈ پر میڈیا کے نمائندوں سے مختصر گفتگو کی ہے، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کا کہنا تھا کہ کالام میں پھنسے لوگوں کو نکال رہے ہیں کالام میں اب بحران کی صورتحال نہیں ہے،سیلاب زدگان کی مدد کیلئے اپیل پر اچھا رسپانس ہے، سیلاب کے نقصانات کا جائزہ لینا ابھی باقی ہے، این سی اوسی کی طرز پر ہیڈ کوارٹر بنارہے ہیں، امداد کا ڈیٹا اکٹھا کیا جائے گا،سندھ اور بلوچستان میں خیموں کی زیادہ ضرورت ہے،کالام میں کافی نقصان ہوا ہے،ہوٹل اور پل تباہ ہوئے ہیں

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کا مزید کہنا تھا کہ پل اور ہوٹل بہت تباہ ہوئے ہیں دو ہزار دس کے سیلاب میں بھی یہاں ایسی ہی تباہی ہوئی اور دوبارہ انہیں جگہوں پر تعمیرات کر نے کی اجازت دے کر غفلت کا مظاہرہ کیا گیا ذمے داران کے خلاف قانونی کاروائی ہونی چایے،اس وقت سب سے ضروری کالام روڈ کا کھولنا ہے، امید ہے 6سے 7 دنوں میں روڈ کو کھول دیں گے، کالام میں پھنسے لوگوں کو نکال رہے ہیں کالام میں اب بحران کی صورت حال نہیں ہے، سیلاب زدگان کی امداد کے لیے اپیل پر بہت اچھا رسپانس ہے، اس وقت مختلف فلاحی اداروں ،سیاسی جماعتوں اور افواج پاکستان نے اپنےریلیف سنٹر کھولے ہوئے ہیں،این سی او سی کی طرز پہ ہیڈ کوارٹر بنایا گیا ہے جہاں امداد کا ڈیٹا اکھٹا ہو گا، ہیڈ کوارٹر سے وزیر منصوبہ بندی امداد ادھر بھجوائیں گے جہاں ضرورت ہو گی، لوگوں کا ریسپانس بہت اچھا آرہا ہے، کئی کئی ٹن راشن اکٹھا ہو رہا ہے، راشن کا نہیں، خیموں کا مسئلہ ہو گا،بیرون ملک سے ٹینٹس منگوانے کی کوشس کر رہے ہیں،فوج کی طرف سے بھی خیمے فراہم کیے جارہے ہیں،سندھ اور بلوچستان میں خیموں کی زیادہ ضرورت ہے،

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کا مزید کہنا تھا کہ یو اے ای، ترکی اور چین سے امدادی سامان کی پروازیں آنا شروع ہو گئی ہیں، سعودی عرب اور قطر سے بھی پروازیں آنا شروع ہو جائیں گی؛ پیسے بھی آئیں گے، دوست ممالک نے پاکستان کو مصیبت میں کبھی اکیلا نہیں چھوڑا، انشا اللہ آئندہ بھی نہیں چھوڑیں گے،پاکستانیوں، خصوصا” بیرون ملک پاکستانیوں کا رسپانس بہت اچھا ہے، ہمیں متاثرین کو گھر بنا کر دینے پڑیں گے،ہم انشااللہ متاثرین کو پری فیب گھر بنا کر دیں گے، یہاں پر اتنا مسئلہ نہیں شیادہ مسئلہ سندھ میں ہے جہاں چار چار فٹ پانی کھڑا ہے،مسئلہ بلوچستان کا ہے جہاں پورے کے پورے گاوں صفحہ ہستی سے مٹ چکے،

سیلاب متاثرین کی مدد میں متحدہ عرب امارات کا مثالی کردار

وزیراعظم شہباز شریف نے چارسدہ میں سیلاب سے متاثرہ علاقوں کا دورہ کیا

متحدہ عرب امارات کے حکام کا آرمی چیف سے رابطہ،سیلاب زدگان کیلیے امداد بھجوانے کا اعلان

کمراٹ میں پھنسے سیاحوں کو پاک فوج کے ہیلی کاپٹر نے ریسکیو کر لیا ہے

سیلاب سے متاثرہ آخری آدمی کی بحالی تک چین سے نہیں بیٹھیں گے، آرمی چیف

پاک فوج نے فلڈ ریلیف ہیلپ لائن قائم کر دی،

Leave a reply