fbpx

عمران خان نے کل اداروں کے خلاف زہر اگلا ہے،وزیراعظم

عمران خان نے کل اداروں کے خلاف زہر اگلا ہے،وزیراعظم
باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق وزیراعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ ہماری حکومت کو ورثے میں انتظامی و معاشی مسائل ملے،

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم شہباز شریف کا کہنا تھاکہ ملک بھر میں لوڈشیڈنگ میں کمی ہوئی ہے،دھاندلی اور چوری کی حکومت نے بجلی کے منصوبوں کو نقصان پہنچایا،تحریک انصاف حکومت نے وقت پر تیل منگوایا نہ گیس نورعالم خان نے کہا کہ بجلی کی لوڈ شیڈنگ ہوتی رہی،میں اس معاملے کی تحقیقات کراونگا،مئی میں لوڈ شیڈنگ میں کمی ہوئی،گیس سستی مل رہی تھی مگر ماضی کی حکومت نے مہنگا تیل خریدا،عید کےبعد لوڈشیڈنگ میں واضع کمی ہوئی ہے،نالائق اور کرپٹ حکومت نے گرمیوں میں بجلی پلانٹ کا مرمتی کام کرایا،سابقہ حکومت جھرلو اور دھاندلی کی پیداوار تھی،سابق حکومت نے قرضے تو لیے مگر کوئی نیا کام نہیں کیا گیس کا انتظام بھی کررہے ہیں اور گیس کے جہاز بھی خرید رہےہیں،

وزیراعظم شہباز شریف کا مزید کہنا تھا کہ کل ایبٹ آباد میں تحریک انصاف کے چیئرمین نے بہت خطرناک باتیں کیں،عمران خان کی تقریر اداروں کے خلاف تھی،عمران خان نے براہ راست اداروں پر بات کی ہے،بتایا جائے دھمکی کو سازش کیسے قرار دیا جا سکتا ہے،خط میں دھمکی آمیز گفتگو تھی غداری کی بات کہاں سے آئی،سازش کا دور دور تک کوئی نام ونشان نہیں عمران خان نے کل اداروں کے خلاف زہر اگلا ہے،آپ حکومت میں تھے تو ادارے کے لاڈلے تھے،اداروں نے عمران خان کی حمایت کی اس کی مثال نہیں ملتی،آپ تو لاڈلے تھے آپ کو بچے کی طرح پالا گیا،مگر آپ نے کچھ نہیں سیکھا آپ کو اس ادارے نے بچے کی طرح دودھ پلایا،اگر ہمیں20فیصد بھی حمایت ملتی تو ملک کہاں سے کہاں پہنچ جاتا، کل پی ٹی آئی والوں نے خطرناک بات کی، سفیر نے نیشینل سیکورٹی میٹنگ میں کہا تھا کہ دھمکی آمیز گفتگو کی گئی تھی لیکن ہٹانے کے الفاظ یا سازش نہیں کی گئی، یہ الفاظ سفیر کے ہیں

وزیراعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ میں نے کبھی بھی زندگی میں ہار ماننا نہیں سیکھا۔ اداروں کو سیاست میں گھسیٹنے کی کوششوں کی بھرپور مذمت کرتے ہیں، اداروں کے خلاف پروپیگنڈے اور عوام کو دھڑوں میں تقسیم کرنے کی مذموم سازش بے نقاب ہو چکی ہے، ہر پاکستانی کا فرض ہے کہ وہ پاکستان اور اس کے اداروں کا اس فتنے کے خلاف بھرپور دفاع کریں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پیر کو پارلیمنٹ ہائوس میں مسلم لیگ (ن) کی پارلیمانی پارٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں مسلم لیگ (ن) کے تعلق رکھنے والے وفاقی وزراء اور ارکان قومی اسمبلی نے شرکت کی۔ وزیراعظم شہباز شریف نے پارلیمانی پارٹی کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اتحادیوں کے تعاون سے ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کر رہے ہیں، یہ اتحادی حکومت ہے، ماضی کو پیچھے چھوڑ کر پاکستان کے روشن مستقبل کے لئے مل کر کام کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں آپ سب کی پہنچ میں ہوں، آپ کسی بھی وقت مجھ سے براہ راست رابطہ کر سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ میری بطور خادم پاکستان پارلیمانی پارٹی سے پہلی ملاقات ہے۔ وزیراعظم شہباز شریف نے کہا کہ مصنوعی مینڈیٹ والی حکومت کو ان کے گھمنڈ اور غرور کی وجہ سے شکست ہوئی ہے۔ ہماری حکومت کو ورثے میں انتظامی و معاشی مسائل ، قرضے اور سیاست بچانے کے لئے لئے گئے غلط فیصلوں کے خطرناک معاشی مسائل ملے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میں نے کبھی بھی زندگی میں ہار ماننا نہیں سیکھا۔ وزیراعظم نے کہا کہ ملک میں اشتعال انگیز بیان اور جھوٹے پروپیگنڈے سے انتشار پھیلانے کی مذموم کوشش کی جارہی ہے۔ اداروں کو سیاست میں گھسیٹنے کی کوششوں کی بھرپور مذمت کرتے ہیں۔ آئین اور قانون کے تحت ان اشتعال انگیز کوششوں پر سخت کارروائی کی جائے گی۔ ہر پاکستانی کا فرض ہے کہ وہ پاکستان اور اس کے اداروں کا اس فتنے کے خلاف بھرپور دفاع کریں۔ اگر گزشتہ حکومت کو عوام کو صحیح معنوں میں درد ہوتا تو یہ آٹے، گھی ، چینی اور اشیاء ضروریہ پر کمیشن کھانے کی بجائے عوام کو ریلیف دیتی اور ان کی قیمتوں کو کم کرتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اداروں کے خلاف پروپیگنڈے اور عوام کو دھڑوں میں تقسیم کرنے کی مذموم سازش بے نقاب ہو چکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان چاہتا ہے کہ یہاں انارکی ہو لیکن ہم سب کو مل کر اس فتنے سے ملک کی حفاظت کرنی ہے۔ انہوں نے کہاکہ سعودیہ اور متحدہ عرب امارات دورے کے دوران میزبانوں نے موجودہ حکومت کی بین الاقوامی ساکھ کی تعریف کی۔انہوں نے کہاکہ یہ خدا کا شکر ہے کہ پچھلے تین سال کے مسلسل جھوٹے اور زہریلے پروپیگنڈے کے باوجود موجودہ حکومت کی ساکھ قائم و دائم ہے۔دوست ممالک میں موجودہ حکومت کی مضبوط ساکھ نواز شریف کی بے مثال قیادت کا منہ بولتا ثبوت ہے۔

صدر مملکت نے وزیراعظم کو خط کا "جواب” دے دیا

فارن فنڈنگ کیس،باہر سے پیسہ آیا ہے لیکن وہ ممنوعہ ذرائع سے نہیں آیا،پی ٹی آئی وکیل

فارن فنڈنگ کیس کا فیصلہ 30 روزمیں کرنے کا حکم اسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج

فارن فنڈنگ کیس، فیصلہ 30 روز میں کرنے کے فیصلے کیخلاف اپیل سماعت کیلئے مقرر

فارن فنڈنگ کیس میں بھی عمران خان کو اب سازش نظر آ گئی، اکبر ایس بابر