fbpx

یہاں پر آئین کی تو کسی کو پرواہ ہی نہیں، چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ

یہاں پر آئین کی تو کسی کو پرواہ ہی نہیں، چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ

سوشل میڈیا پر ٹویٹس کی وجہ سے ایف آئی اے نوٹسز کے خلاف کیس کی سماعت 24جون تک ملتوی کر دی گئی

اسلام آباد ہائیکورٹ نے درخواست گزار کو ہراساں کرنے سے روکنے کے حکم میں 24 جون تک توسیع کردی ،اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے درخواست گزار سے استفسار کیا کہ کیا یہ آپ کی ٹویٹ ہے ؟ درخواست گزار نے کہا کہ مجھے معلوم نہیں ایف آئی اے کو میری کس ٹویٹ پر اعتراض ہے ،عدالت نے کہا کہ آپ کو پتہ ہونا چاہیے جو کچھ پارلیمنٹ میں ہوا وہ آئین کے مطابق ہوا ہے آپ کو پتہ ہے آئین کیا ہے ؟ ریاست آئین پر چلتی ہے اگر کوئی چیز پارلیمنٹ میں ہو تو آپ کیسے اعتراض کر سکتے ہیں؟ اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ یہاں پر آئین کی تو کسی کو پرواہ ہی نہیں ہے ، ایف آئی اے حکام نے کہا کہ درخواست گزار نے ٹویٹس میں پورے ملک کو کہا کہ ریاست کے خلاف کھڑے ہو جائیں ،

اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ادارے اصل میں عوام کی وجہ سے ہیں عوام میں کچھ لوگ نا سمجھی سے یہ کر دیتے ہیں، ریاست کے اور بہت سے کام ہیں یہ ادارے ان ٹویٹس سے بہت اوپر ہیں کسی کی ٹویٹس یا کہنے پر بغاوت نہیں ہوتی فوج ملک کے لیے قربانیاں دے رہی ہے، میرے بارے میں کتنی تنقید ہورہی ہے تو کیا یہ میری آزادی کو متاثر کر سکتا ہے؟ مجھ پر کیا کیا الزام لگائے گئے پتہ نہیں فلیٹ بھی دلوا دئیے ،ہو سکتا ہے درخواست گزار نے بھی یہ کہا ہو ،ریاستی ادارے اپنے عمل اور کردار سے اپنا عزت و وقار بناتے ہیں ،اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس نے ایف آئی اے حکام سے استفسار کیا کہ ٹویٹس سے اداروں کو کیا فرق پڑتا ہے ؟سوشل میڈیا پر جتنا جھوٹ ہے کیا آپ سب کے پیچھے پڑ جائینگے ،اگر میرے بارے میں کچھ لکھنے سے میں خوفزدہ ہو گیا تو یہ میرے حلف کی خلاف ورزی ہو گی،ایک ناسمجھی کی ٹویٹ ہے اس پر جرم کیا بنتا ہے ؟ اگر سوشل میڈیا سے پبلک آفس ہولڈر خوفزدہ ہو جائیں تو یہ ان کے حلف کی بھی خلاف ورزی ہو گی، عدالت نے درخواست گزار کو شامل تفتیش ہونے کی ہدایت کر دی

صحافیوں کے خلاف کچھ ہوا تو سپریم کورٹ دیوار بن جائے گی، سپریم کورٹ

صحافیوں کا کام بھی صحافت کرنا ہے سیاست کرنا نہیں،سپریم کورٹ میں صحافیوں کا یوٹرن

پولیس جرائم کی نشاندہی کرنے والے صحافیوں کے خلاف مقدمے درج کرنے میں مصروف

بیوی، ساس اورسالی کی تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل کرنے کے الزام میں گرفتارملزم نے کی ضمانت کی درخواست دائر

سپریم کورٹ کا سوشل میڈیا اور یوٹیوب پر قابل اعتراض مواد کا نوٹس،ہمارے خاندانوں کو نہیں بخشا جاتا،جسٹس قاضی امین

‏ سوشل میڈیا پر وزیر اعظم کے خلاف غصے کا اظہار کرنے پر بزرگ شہری گرفتار