fbpx

غیر قانونی تارکین وطن کی امریکہ میں داخل ہونے کی کوشش ناکام

امریکی نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف مائیگریشن کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ حراست میں لیے جانے والے تارکین وطن کی اکثریت کا تعلق ہونڈوراس، کیوبا، گوئٹے مالا، نکاراگوا، ایل سلواڈور، کولمبیا، وینزویلا، پیرو، ایکواڈور اور ہیٹی سے ہے۔

غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق میکسیکو نے امریکہ کی سرحد تک پہنچنے کے لیے گزشتہ چار دنوں میں غیر قانونی طور پر ملک میں داخل ہونے والے چھ ہزار غیر قانونی تارکین وطن کے گرفتار کیے جانے کی اطلاع دی ہے۔

نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف مائیگریشن کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ حراست میں لیے جانے والے تارکین وطن کی اکثریت کا تعلق ہونڈوراس، کیوبا، گوئٹے مالا، نکاراگوا، ایل سلواڈور، کولمبیا، وینزویلا، پیرو، ایکواڈور اور ہیٹی سے ہے۔

جاری کردہ اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ گزشتہ چار دنوں میں حراست میں لیے گئے چھ ہزار تارکین وطن میں سے دو سو ایسے بچے تھے جن کے ساتھ ان کا کوئی رشتہ دار موجود نہ تھا اور بھوک کی وجہ سے ان کی حالت بہت خراب تھی۔

غیر قانونی تارکین وطن کی تعداد میں حال ہی میں ایک بار پھر اضافہ ہوا ہے اور اس بات پر زور دیا گیا کہ انسانی سمگلروں نے تارکین وطن کو امریکہ لے جانے کا وعدہ کر کے دھوکہ دیا۔

یاد رہے، انسانی اسمگلنگ کا گھناؤنا کاروبار لاطینی امریکا میں منظم انداز میں کیا جاتا ہے۔

تعلق جموں و کشمیر سے ہے۔

حکومتی دباؤ مسترد:امریکا میں سابق پاکستانی سفیر ڈٹ گئے:عمران خان کے موقف کی تائید…