ڈینگی بخار یا بریک بون فیور کی علامات بچاو اور احتیاطی تدابیر

0
64

ڈینگی بخار یا بریک بون فیور کی علامات بچاو اور احتیاطی تدابیر
ڈینگی بخار اس وقت ایک وبائی بیماری کی شکل۔اختیار کر چکا ہے یہ بات عام ہے کہ ڈینگی مچھر کی افزائش صاف پانی میں ہوتی ہے لیکن آج کل گندگی کا ڈھیر اتنا زیادہ بڑھ گیا ہے کہ ہر جگہ مچھروں کی افزائش ہو رہی ہے پاکستان کے کئی شہروں اور علاقوں میں ڈینگی بخار کے مریضوں کی تعداد دن بدن بڑھ رہی ہے اور اموات واقع ہو رہی ہیں اور یہ عام بیماری مہلک بیماری میں تبدیل ہوتی ہوئی دکھائی دے رہی ہے ڈینگی بخار کو بریک بون فیور بھی کہتے ہیں کیونکہ اس بخار کے دارون ہڈیوں اور پٹھوں میں شدید درد ہوتا ہے اس سے جسم میں انفیکشن ہونا شروع ہو جاتا ہے اگر اسحے بروقت کنٹرول نہ کیا جائےتو یہ جان لیوا بھی ثابت ہو سکتا ہے اس بخار کا ٹیسٹ کروانا بہت ضروری ہوتا ہے ڈینگی مچھر کے کاٹنے کے بعد اس کی علامات ٣ سے چار دن میں ظاہر ہونے لگتی ہیں وہ علامات درج ذیل ہیں
جسم میں ہڈیوں اور پٹھوں میں شدید درد ہونا کمزوری محسوس ہونا
جسم میں پانی کی کمی ہونا مستقل بخار رہنا جسم کے اعضاء کا صحیح کام نہ کرنا چکر اُلغی اور متلی آنا
ڈینگی بخار سے بچنے کے لیے چند احتیاطی تدابیر درج ذیل ہیں
گھروں میں پردوں کے پیچھے صفائی نہیں ہوتی اور اندھیرء والی جگہوں پر ویسے بھی مچھروں کی افزائش زیادہ ہوتی ہے ایسے میں مچھروں کے کاٹنے سے ڈینگی تو نہیں میرکا ضرور ہو سکتا ہے لہذا پردوں کے پچھلے والے حصوں اور گھر کے ہر کونے کی صفائی ضرور کریں
گھر کی کھڑکیوں اور دروازوں پر جالیاں لگائیں تیز رنگوں کی بیڈ شیٹس بچھانے کی بجائے ہلکے رنگوں کی بیڈ شیٹس بچھائیں
جو لوگ کھلی جگہوں پر سوتے ہیں وہ مچھر دانی استعمال کریں اسر لیمن گراس کو بھی کوئلے پر رکھ کر دہکائیں اس کی خوشبو سے بھی مچھر نہیں آتے اور صاف پانی کو ڈھک کر رکھیں غیر ضروری سامان کاٹھ کبار گھر سے نکال دیں کیونکہ ایسی جگہوں پر مچھر کی افزائش زیادہ ہوتی ہے

چند اہم اور آسان گھریلو طبی ٹپس


گھر میں صبح اور مغرب کے وقت لوبان یا ہربل کے بیج کی دھونی دیں
لیمن گراس آئل کسی بھی دوسرے آئل میں مکس کر کے جلد پر لگائیں یا ہیزل آئل کسی بھی آئل میں مکس کر کے جلد پر لگائیں
ڈینگی کے لیے مندرجہ ذیل نسخہ بہت ہی کار آمد ہے
پپیتے کے پتے لے کر انھیں کُچل کر جوس نکال پی لیں یہ خون میں پلیٹلیٹس کو تیزی سے بڑھاتا ہے یہ دن میں دو مرتبہ پی لیں

Leave a reply