جج صاحب،میں آج عدالت میں یہ چیز لے کر آیا ہوں،عدالت نے شہباز شریف کو دیا کھرا جواب

0
53

جج صاحب،میں آج عدالت میں یہ چیز لے کر آیا ہوں،عدالت نے شہباز شریف کو دیا کھرا جواب

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق شریف خاندان کے خلاف منی لانڈرنگ کیس،شہباز شریف احتساب عدالت پہنچ گئے

منی لانڈرنگ کیس میں شہبازشریف کی بیٹی جویریہ علی کی حاضری سے استثنٰی کی درخواست منظور کر لی گئی،عدالت نے نصرت شہباز اور رابعہ عمران کو دوبارہ پیش ہونے کا حکم دے دیا،

شہباز شریف نے عدالت میں کہا کہ میں ہوش وحواس میں رہ کر پنجاب کی عوام کی خدمت کرتا رہا ہوں ،میں نے اپنے خاندان کے افراد کا نقصان کیا،میں اپنے متعلق ہائی کورٹ کا حکم لایا ہوں ،میرے بچوں کو کاروباری نقصان ہوا ہے، میری فیملی پر یہ سیاسی مقدمہ بنایا گیا ہے،

جس پر عدالت نے کہا کہ فوجداری مقدمات میں ابھی اس کی ضرورت نہیں،تمام بیانات کے بعد بیان ریکارڈ ہو گا جب آپ کچھ بھی کہہ سکتے ہیں،جس پر شہباز شریف نے عدالت کو جواب دیا کہ جو آپ حکم کریں گے، عدالت نے شہباز شریف کو کہا کہ حکم نہیں قانون کی بات ہے،

عدالت نے شہباز شریف اور اہلخانہ کےخلاف ریفرنس پر کارروائی 29 ستمبر تک ملتوی کر دی،اپوزیشن لیڈر قومی اسمبلی شہباز شریف احتساب عدالت سے روانہ ہو گئے

منی لانڈرنگ کیس میں شہباز شریف کا مؤقف ہے کہ نیب نے بد نیتی کی بنیاد پر آمدن سے زائد اثاثوں کا کیس بنایا ہے اور موجودہ حکومت کے سیاسی اثر و رسوخ کی وجہ سے نیب نے انکوائری شروع کی ہے۔ انکوائری میں نیب کی جانب سے لگائے گئے الزامات عمومی نوعیت کے ہیں۔

پانچ کمپنیوں میں 19 کروڑ کی منتقلی،حمزہ شہباز نیب کو مطمئن نہ کر سکے

شہباز شریف کو لائف ٹائم ایوارڈ برائے کرپشن دیا جائے: شہباز گل

حمزہ شہباز کے پروڈکشن آرڈر کے خلاف درخواست دائر

شہبازشریف فیملی کیخلاف منی لانڈرنگ ریفرنس،نیب کی خصوصی پراسیکیوشن ٹیم تشکیل

شہباز صاحب،جو آپ نے خدمت کی اس کا صلہ اللہ سے مانگیں،آپکا موقف سنیں گے،عدالت

شہباز شریف بیٹی کے ہمراہ عدالت میں پیش، حمزہ شہباز جیل میں ہوئے بیمار

نیب کا مؤقف ہے کہ شریف فیملی کی منی لانڈرنگ اور بے نامی کمپنیاں’ پچپن کے‘ نامی دفتر سے چلتی تھیں۔ نیب کے مطابق 2008 سے 2018 تک شہباز شریف خاندان کے چار ارکین کے اثاثوں میں چار سو پچاس فیصد جبکہ صرف سلمان شہباز کے اثاثوں میں نو سو فیصد اضافہ ہوا۔ 2009 میں شریف فیملی کے اثاثے اڑسٹھ کروڑ، تینتیس لاکھ سینتیس ہزار تھی جبکہ 2018 تک اثاثوں کی مالیت تین ارب اڑسٹھ کروڑ پندرہ ہزار روپے تک پہنچ چکی تھی۔

دستاویزات کے مطابق 2008 میں سلمان شہباز کے کل اثاثوں کی مالیت اٹھائیس کروڑ چوبیس لاکھ روپے تھی جو نو سو فیصد اضافے کے بعد 2018میں دو ارب چونتیس کروڑ چھیانوے لاکھ روپے ہو گئے ہیں۔ حمزہ شہباز کے اثاثوں میں دس سال کے دوران تقریباً سو فیصد اضافہ ہوا۔

قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہبازشریف فیملی منی لانڈرنگ ریفرنس میں نیب کی خصوصی پراسیکیوشن ٹیم تشکیل دے دی گئی ہے، نیب لاہورنے منی لانڈرنگ ریفرنس کے لیے 2رکنی خصوصی ٹیم تشکیل دی۔ٹیم اسپیشل پراسیکیوٹر نیب بیرسٹر عثمان جی راشد کی سربراہی میں تشکیل دی گئی جبکہ نیب پراسیکیوٹرعاصم ممتازپراسیکیوشن ٹیم کاحصہ ہوں گے۔  پراسیکیوشن ٹیم شہبازشریف فیملی کے خلاف منی لانڈرنگ ریفرنس میں پیش ہوگی

Leave a reply