پی ٹی آئی لیڈروں کے لاہور پریس کلب داخلے پر 3 دن کی پابندی کا اعلان

 لاہور پریس کلب کی گورننگ باڈی نے پی ٹی آئی سندھ کے رہنما ڈاکٹر مسرور سیال کی جانب سے کراچی پریس کلب کے صدر امتیاز فاران پر تشدد کے خلاف کراچی پریس کلب کی کال پرلاہور پریس کلب میں‌ بھی احتجاجا” تحریک انصاف کے لیڈروں پر 3 دن کیلئے داخلے کی پابندی عائد کردی ہے۔

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق لاہور پریس کلب کے صدر ارشد انصاری نے پنجاب کے دیگر پریس کلبز کے عہدیداروں سے بھی رابطے کئے ہیں جن کے بعد صوبے کے تمام کلبز میں پی ٹی آئی کے راہنما کل سے داخل نہیں ہوسکیں گے۔

لاہور پریس کلب کے عہدیداروں نے کہا ہے کہ فیاض چوہان سے فواد چودھری اور اب منصور سیال کے صحافیوں پر براہ راست حملوں سے ثابت ہوتا جارہا ہے کہ تحریک انصاف ملک میں فاشزم کی نئی تاریخ رقم کرنا چاہتی ہے اور عوام کی آواز بننے والی ہر قوت کو ڈرایا اور دھمکایا جانا معمول بن گیا ہے۔ آج کراچی پریس کلب میں شہر کے صحافیوں کا ایک ہنگامی اجلاس منعقد ہوا جس میں پی ٹی آئی کے لیڈروں پر پہلے مرحلے میں 3 دن داخلے کی پابندی عائد کر دی گئی۔ اس اجلاس میں کہا گیا کہ اگر 3 دن میں منصور سیال نے امتیاز فاران سے معافی نہ مانگی تو آئندہ کے لائحہ عمل کا اعلان کردیا جائے گا جو مزید سخت ہوسکتا ہے۔

واضح رہے کہ پی‌ ٹی آئی رہنما ڈاکٹر مسرور سیال کی جانب سے گزشتہ روز صدر کراچی پریس کلب امتیاز فاران پر ایک ٹی وی پروگرام کے دوران تشدد کا نشانہ بنایا گیا تھا جس پر پورے ملک کی صحافی برادری سراپا احتجاج ہے.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.