نگران وزیر تجارت کا سرکاری مراعات نہ لینے کا اعلان

وزیر تجارت گوہر اعجاز نے ملکی ایکسپورٹ کو 80 ارب ڈالر تک بڑھانے کا عزم کیا
0
44
gohar ejaz

نگران وزیر تجارت ڈاکٹر گوہر اعجاز نے سرکاری مراعات نہ لینے کا اعلان کردیا
نگران وزیر تجارت ڈاکٹر گوہر اعجاز کا کہنا تھا کہ آج پہلے ہی روز سے، میں نے رضاکارانہ طور پر قوم کی خدمت کرنے کا پختہ عہد کیا ہے, میں پورے دور میں کوئی تنخواہ، معاوضہ، سرکاری سہولت یا مراعات قبول نہیں کروں گا, میں ذاتی طور پر کسی بھی ایڈوائزری یا خدمت کے لیے اٹھنے والے اخراجات کو خود برداشت کرونگا,میرا مقصد بغیر کسی ذاتی مالی فائدے کے قوم کی ترقی اور خوشحالی ہے,

معروف صنعتکار اور فلاحی خدمت گار، گوہر اعجاز نے نگران وفاقی وزیر تجارت کے طور پر ذمہ داریاں سنبھال لیں۔گوہر اعجاز کو کامرس ڈویژن اور صنعت کے اہم کاموں اور ذمہ داریوں کے بارے میں ایک جامع بریفنگ دی گئی، وزیر تجارت گوہر اعجاز نے ملکی ایکسپورٹ کو 80 ارب ڈالر تک بڑھانے کا عزم کیا،

نگراں وفاقی وزیر ریلوے کپیٹین ریٹائر ڈ شاہداشرف تارڑ نے حلف لینے کے بعد وزارت ریلوے کا چارج سنبھال لیا ۔وزارت ریلوے کے سینئر افسران نے وفاقی وزیر کا استقبال کیا۔ وفاقی سیکرٹری ریلویز سید مظہر علی شاہ نے ریلوے کے انتظامی اور آپر یشنل معاملات پر یفنگ دی۔

معروف فنکار، فلم پروڈیوسر اور ہدایت کار، جمال شاہ نے عبوری حکومت میں حلف اٹھانے کے بعد عہدے کا چارج سنبھال لیا۔وفاقی وزیر برائے قومی ورثہ و ثقافت نے ذمہ داریاں سنبھالنے کے بعد قومی ورثہ و ثقافت کا دورہ کیا، وزارت میں سیکرٹری فارینہ مظہر اور قومی ورثہ و ثقافت ڈویژن کے دیگر افسران سے ملاقات کی وفاقی سیکرٹری نے جمال شاہ کو بریفنگ دی اور انہیں ہیریٹیج اینڈ کلچر ڈویژن کے کام کے بارے میں آگاہ کیا۔

احمد عرفان اسلم نے نگراں وفاقی وزیر برائے قانون و انصاف پاکستان کا چارج سنبھال لیا وزارت قانون کے حکام نے نئے تعینات ہونے والے وزیر قانون کا استقبال کیا۔

نگران وزیر خارجہ جلیل عباس جیلانی نے اپنے عہدہ کا چارج سنبھال لیا ،سابق سیکرٹری خارجہ جلیل عباس جیلانی سفارتکاری کا وسیع تجربہ رکھتے ہیں نگران وزیر خارجہ امریکہ، یورپی یونین، بیلجئم، لگزمبرگ اور آسٹریلیا میں سفیر رہ چکے

نگراں وفاقی وزیر توانائی محمد علی نے عہدے کا چارج سنبھال لیا۔ نگراں وفاقی وزیر کو پاور ڈویژن میں بریفنگ دی گئی،نگراں وفاقی وزیر کے لیے بریفنگ میں سیکریٹری پاور اور دیگر اعلیٰ افسر شریک تھے

پولیس افسر و اہلکاروں کو حبس بے جا میں رکھنے کے واقعے کا مقدمہ درج

جڑانوالہ واقعہ انتہائی افسوسناک ہے

 مسیحی قائدین کے پاس معافی مانگنے آئے ہیں،

نگران وزیر اعظم انوار الحق کاکڑ نے جڑانوالہ واقعہ کا نوٹس لیا ہے

توہین رسالت کی مجرمہ خاتون کو سزائے موت سنا دی گئی

نگران وزیراعظم سے نامزد نگران وزیراعلی بلوچستان کی ملاقات

Leave a reply