fbpx

ایک اورتیز گام ٹرین حادثے کا شکار

ایک اورتیز گام ٹرین حادثے کا شکار

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق کراچی سے لاہور آنے والی تیزگام ایکسپریس حادثے کا شکار ہو گئی ہے،صفدرآباد اسٹیشن پر تیزگام کا انجن اور 2 بوگیاں پٹڑی سے اتر گئیں، جس سے تیزگام ایکسپریس کی ایمرجنسی بریک کے باعث متعدد مسافر زخمی ہو گئے ،

ایمرجنسی بریک کی وجہ سے مسافر خوف و ہراس میں مبتلا ہو گئے، ٹرین رکنے کے بعد مسافر فوری طور پر ٹرین سے اترے اور چھلانگیں لگانا شروع کر دیں، ٹرین رکنے سے زخمی ہونے والے مسافروں کو طبی امداد دی جا رہی ہے، انجن پٹڑی سے اترنے کی وجہ سے ایمرجنسی بریک لگائی گئی.

واضح رہے کہ اس سے قبل17 اکتوبر کو ریل کار کی دو بوگیاں سوہاوا ریلوے اسٹیشن کے قریب پٹری سے اتر گئی تھیں، جس کے بعد ٹرینوں کی آمد و رفت معطل بھی ہوگئی تھی۔

ٹرین حادثہ، تین بوگیوں میں کتنے مسافر سوارتھے؟ بکنگ کس نے کروائی؟ اہم خبر

ٹرین حادثہ، شیخ رشید نے کیا امداد کا اعلان

واضح رہے کہ رحیم یار خان میں افسوسناک واقعہ پیش آیا ،ٹرین کی بوگیوں میں‌ آتشزدگی سے 73 مسافر جاں بحق ہو گئے ،تیزگام ایکسپریس میں آگ بہاولپوراور رحیم یا ر خان کےدرمیان چنی گوٹھ کےمقام پر لگی ،تیز گام کراچی سےبراستہ لاہور راولپنڈی جار ہی تھی ،

وزیراعظم کی ٹرین حادثہ کے زخمیوں کو بہترین طبی امداد دینے کی ہدایت

ریلوے حکام کے مطابق تین بوگیوں میں 209 مسافر سوار تھے،آگ 2 اکانومی اورایک بزنس کلاس کے ڈبے میں لگی ، اکانومی بوگیوں میں مجموعی طور پر 156مسافر سوار تھے،بزنس بوگی میں 50 سے زائدافراد سوار تھے، بوگیوں کی بکنگ امیر حسین  کے نام سے ہوئی، امیرحسین نے حیدرآباد اسٹیشن سے بکنگ کرائی تھی ،