محسن سپیڈ،مولانا محمد علی جوہر فلائی اوورز بھی مقررہ مدت سے پہلے مکمل

مولانا محمد علی جوہر فلائی اوورز کو 10ماہ کی بجائے 7ماہ سے بھی کم مدت میں مکمل کیا گیا،
0
109
moshin speed

تصویریں چھپوانے کا شوق نہیں،اللہ کی رضا کیلئے یہ سب کررہے ہیں:محسن نقوی

محسن سپیڈ، لاہور کا چوتھا میگا منصوبہ مولانا محمد علی جوہر(اکبر چوک) فلائی اوورز بھی مقررہ مدت سے پہلے مکمل،وزیر اعلیٰ پنجاب محسن نقوی نے آج مولانا محمد علی جوہر فلائی اوورز پراجیکٹ کا افتتاح کر دیا۔ مولانا محمد علی جوہر فلائی اوورز کو 10ماہ کی بجائے 7ماہ سے بھی کم مدت میں مکمل کر لیا گیا۔کنٹریکٹ کے مطابق منصوبے کی مدت تکمیل 10 ماہ مقررکی گئی۔رواں سال ہونے والی شدید بارشوں کے باوجود منصوبے کو مدت تکمیل سے پہلے ٹریفک کے لیے کھول دیا گیا ہے۔

مولانا محمد علی جوہر پر2.2کلو میٹر کے فلائی اوورز اور10 پروٹیکٹیڈ یو ٹرنز بنائے گئے ہیں۔صوبائی دارالحکومت میں عام ٹریفک کے لیے بننے والا یہ سب سے طویل فلائی اوورز ہیں۔ منصوبے کی تکمیل سے وحدت روڈ تا پیکو روڈ سگنل فری کوریڈور بن گیا ہے۔اکبر چوک، شوک چوک، جناح ہسپتال،ماڈل ٹاون لنک روڈ،کچاجیل روڈ،پیکو روڈ اور مادرملت سمیت 10 مقامات پر پروٹیکٹیڈ یوٹرن بنائے گئے ہیں۔قبل ازیں بیدیاں ا نڈرپاس، شاہدرہ فلائی اوورز اور کیولری انڈرپاس کو ریکارڈ مدت میں مکمل کر کے ٹریفک کیلئے کھولا جا چکا ہے۔

وزیراعلیٰ محسن نقوی نے افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یومیہ تقریباً اڑھائی لاکھ گاڑیوں کوآمدورفت میں آسانی ہوگی۔ کالج روڈ کی ری ماڈلنگ کے منصوبے کا آغاز کر دیا گیا ہے۔ منصوبے میں تبدیلی کرکے قیمتی درختوں کو بچایا گیا ہے اورایک درخت بھی نہیں کاٹا گیا بلکہ 285 درختوں کو محفوظ بنایا گیا ہے۔ منصوبے کے اطراف میں 300نئے درخت بھی لگائے گئے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ2.2کلومیٹر کا فلائی اوورز مبارک ہوکیونکہ یہ 2برج ہیں۔مولانا محمد علی جوہر فلائی اوورز تعمیر کرنے کیلئے7ماہ سے بھی کم عرصہ لگا ہے کیونکہ ڈیڑھ ماہ کورٹ سٹے آرڈررہا۔مولانا محمد علی جوہر فلائی اوورزکے ڈیزائن میں درخت کاٹنے پڑتے،درخت کاٹے بغیرنیا ڈیزائن تیارکرنے میں تقریباً15دن لگ گئے۔ایل ڈی اے کی ٹیم اورکنٹریکٹر نے دن رات محنت کی ہے۔مولانا محمد علی جوہر فلائی اوور زمشکل تھا کیونکہ آبادی کے درمیان تھا۔ مولانا محمد علی جوہر فلائی اوورز شہر کے 7سے 8بڑے علاقوں کیلئے سہولت مہیا کرے گا۔ مولانا محمد علی جوہر فلائی اوورزپیکو روڈ سے شروع ہوکر نہرتک سگنل فری کوریڈور ہے۔مولانا محمد علی جوہر فلائی اوور زمیں 10یوٹرنزاوردو برج ہیں۔کالج روڈ پر کام شروع ہوچکا ہے،آئندہ چنددنوں میں مکمل ہوجائے گا۔

نگران وزیراعلیٰ نے کہا کہ آج ٹیم کے ہمراہ کچے کا دورہ کیاہے۔کچے کے علاقے ہمارے تین پولیس اہلکارشہید ہوئے ،ایک شہید کا جنازہ ادا کیا،شہداء کے اہل خانہ سے ملاقات کی۔کچے کے آپریشن میں پنجاب پولیس کی 2اے پی سی تباہ ہوئیں۔کچے کے علاقہ جہاں حملہ ہوا اس کے چاروں اطراف سندھ ہے،صرف ایک جزیرہ نماپنجاب کا ہے۔70سے 80ڈاکوؤں نے حملہ کیااورہمارے 19جوانوں تھے،جنہو ں نے کئی گھنٹے مقابلہ کر کے ڈاکوؤں کو مارااوربھگادیا۔

نگران وزیراعلیٰ پنجاب محسن نقوی کا مزید کہنا تھا کہ ہیلتھ،روڈ سیکٹراوردیگر سارے پراجیکٹس جو مکمل ہوئے اس کا کریڈٹ کسی ایک بندے کو نہیں بلکہ پوری ٹیم کو جاتا ہے۔ہر بندہ پراجیکٹس کی تکمیل کیلئے اپنا حصہ ڈال رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ اگر پراجیکٹس وقت پر مکمل ہورہے ہیں،تو کریڈٹ صرف مجھے نہیں بلکہ ساری ٹیم کو جاتا ہے۔ہمیں اخبار میں تصویریں چھپوانے کا شوق نہیں،اللہ کی رضا کیلئے یہ سب کررہے ہیں۔میر ایقین ہے کہ جب آپ محنت کرتے ہیں تو لوگوں کو محنت نظر آتی ہے۔ہم میں سے کسی کوکریڈٹ نہیں چاہیے،ہم میں سے کسی نے کوئی الیکشن نہیں لڑنا،نہ ووٹ مانگنا ہے۔ہم کو ذاتی تشہیرکی کوئی خواہش نہیں ہے،بس عوام کو ریلیف دینے کیلئے کوشاں ہیں۔آئندہ دنوں میں باقی جاری پراجیکٹس مکمل ہوجائیں گے۔ دسمبر کے اختتام تک ہسپتالوں کی اپ گریڈیشن مکمل ہوجائے گی۔رحیم یارخان کے دوردراز علاقے میں محکمہ صحت اورتعمیر ومواصلات زبردست کام کررہے ہیں۔40سے45سال جن ہسپتالوں کی اپ گریڈیشن نہیں ہوئی،دن رات محنت سے اپ گریڈ کرارہے ہیں۔جو لوگ یہاں بیٹھے ہیں یا اپنے دفاتر میں بیٹھ کر پراجیکٹس کیلئے کام کررہے ہیں سب کو مبارک دیتا ہوں۔صوبائی وزراء منصورقادر،اظفر علی ناصر،بلال افضل،چیئرمین پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ بورڈ،کمشنر لاہورڈویژن اوردیگر حکام بھی اس موقع پر موجود تھے

سائیکل کرائے پر دینے کے لیے مختلف پوائنٹ بنانے کے لیے اسیکم بنائی جائے

آلودگی پھیلانے والی فیکٹروں کو سیل کرنے کا حکم

 ہفتے میں 2روز گھر سے کام کرنے کی پالیسی پر عمل کرائیں

گھروں میں گاڑیاں دھونے والوں کے خلاف بھی کارروائی یقینی بنائی جائے

Leave a reply