عمران خان، بشریٰ بی بی نے جان بوجھ کر غیر شرعی نکاح پڑھوایا،مفتی سعید کا بیان قلمبند

0
291
PTI

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹس اسلام آباد،چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان اور بشری بی بی کی غیر شرعی نکاح کے خلاف کیس پر سماعت ہوئی

غیر شرعی نکاح کیس کی سماعت سول جج قدرت اللہ نے کی،درخواست گزار خاور فرید مانیکا کی جانب سے وکیل راجہ رضوان عباسی عدالت پیش ہوئے،عدالتی حکم پر گواہان مفتی سعید، عون چوہدری اور محمد لطیف عدالت پیش ہوئے، عدالت نے گواہ مفتی سعید کا بیان قلمبند کرنا شروع کردیا، جج قدرت اللہ نے استفسار کیا کہ اردو میں بیان قلمبند کروائیں گے؟ مفتی سعید نے کہا کہ میں اردو میں ہی اپنا بیان عدالت میں قلمبند کرواؤں گا،میری عمر 62 سال ہے اور چھترپارک میں ندوت العلماء میں پڑھاتاہوں، سول جج قدرت اللہ نے کہا کہ بیان دینے سے پہلے حلف لینا پڑےگا، مفتی سعید نے بیان قلمبند کرنے سے قبل حلف اٹھایا،مفتی سعید نے حلف اٹھاتے ہوئے کہا کہ میں اللہ کی قسم کھا کر کہتا ہے جو کچھ عدالت میں بیان دوں گا سچ کہوں گا جھوٹ نہیں کہوں گا

مفتی سعید نے عدالت میں بیان ریکارڈ کرواتےہوئے کہاکہ چیئرمین پی ٹی آئی سے اچھے تعلقات تھے، پی ٹی آئی کور کمیٹی کا ممبر بھی تھا،یکم جنوری 2018 کو چیئرمین پی ٹی آئی نے رابطہ کیا ، مفتی سعید صفحہ سے پڑھ کر بیان قلمبند کروا رہے،عدالت نے استفسار کیا کہ دیکھ کر پڑھنے والے جھوٹ بولتے ہیں آپ نے عہد لیا ہوا زبانی بتائیں ،مفتی سعید نے کہا کہ مجھے چیئرمین پی ٹی آئی نے لاہور بلایا اور کہا نکاح پڑھانا ہے، لاہور ایک گھر میں پہنچے جہاں ایک خاتون بشریٰ بی بی کی بہن ظاہر کررہی تھی، انہوں نے یقین دہانی کرائی کہ شرعی تقاضے پورے ہیں ، اس یقین دہانی کی بعد نکاح پڑھایا ، نکاح کے بعد چیئرمین پی ٹی آئی اور بشریٰ بی بی بنی گالا رہنے لگے ، نکاح میں شریک لوگوں میں سے دوبارہ فروری میں رابطہ کیا ،سول جج قدرت اللہ نے مفتی سعید سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ کتنے نکاح اپ پڑھوا چکے ہیں؟مفتی سعید نے عدالت میں کہا کہ بےشمار نکاح پڑھائے، دوستوں کے بھی پڑھا دیتاہوں، جج قدرت اللہ نے کہا کہ اگر رضوان عباسی دوسری شادی کریں تو نکاح پڑھائیں گے؟جج قدرت اللہ کے جملے پر عدالت میں قہقہے گونج اٹھے، سول جج قدرت اللہ نے مفتی سعید سے استفسار کیا کہ عدت کے حوالے سے آپ نے بشریٰ بی بی سے خود کیوں نہیں پوچھا؟ مفتی سعید نے کہا کہ ہمارے ہاں خاتون سے ایسا کچھ پوچھا نہیں جاتا،بشریٰ بی بی، چیئرمین پی ٹی آئی کا نکاح میں نے پڑھا دیاتھا،فروری 2018 میں مجھ سے دوبارہ رابطہ کیا گیا،مجھے بتایا گیا کہ چیئرمین پی ٹی آئی، بشریٰ بی بی کا نکاح دوران عدت ہوا،عدالت نے استفسار کیا کہ کس نے رابطہ کیا دوبارہ نکاحِ پڑھانے کے حوالے سے؟ مفتی سعید نے کہا کہ مجھے یاد نہیں مجھ سے کس سے نکاح کے حوالے سے دوبارہ رابطہ کیاتھا،بشریٰ بی بی نے کہا خاورمانیکا سے میری طلاق ہو چکی ہے،بشریٰ بی بی کی سہیلیوں نے بھی بتایا کہ خاورمانیکا سے طلاق ہوچکی ہے،نومبر 2017 میں بشریٰ بی بی کو طلاق دی گئی تھی،مجھے بتایاگیاکہ جنوری 2018 کے پہلے دن نکاح ہوگیا تو چیئرمین پی ٹی آئی بڑے عہدے پر فائز ہو جائیں گے، مجھے بشریٰ بی بی کی کہی ہوئی بات چیئرمین پی ٹی آئی نے خود بتائی،میرے نزدیک یکم جنوری 2018 والا نکاح غیرشرعی اور نکاح کی تقریب غیرقانونی تھی،چیئرمین پی ٹی آئی، بشریٰ بی بی نے جان بوجھ کرغیرشرعی نکاح پڑھوایا،چیئرمین پی ٹی آئی، بشریٰ بی بی کو معلوم تھا کہ شرعی نکاح کے لوازمات پورے نہ تھے،

سول جج قدرت اللہ نے مفتی سعید سے استفسار کیا کہ مجھے بتائیں عدت کی کیا اہمیت ہے اسلام میں ؟ مفتی سعید نے کہا کہ عدت عورت کو شوہرکے گھر پر گزارنی چاہیے تاکہ شوہر کو دوبارہ رجوع کرنے کا موقع مل جائے،عدت پوری کرنے کا مقصد دوران عدت اگر خاتون حاملہ ہو تو معلوم ہو جائے،سول جج قدرت اللہ نے استفسار کیا کہ اگر تین طلاق ہوں ہو تو شوہر کو رجوع کرنے کا موقع مل جائے؟ ایسا ہی ہے؟ مفتی سعید نے کہا کہ اگر شوہر طلاق کے بعد خاتون سے رجوع کرنا چاہے تو رجوع کرسکتا ہے،اہل تشیع میں رجوع کی بات ہے ہی نہیں، زبانی طلاق بھی نہیں ہوتی،سول جج قدرت اللہ نے کہا کہ چیئرمین پی ٹی آئی، بشریٰ بی بی کے دونوں نکاح آپ نے بڑھائے تھے؟ مفتی سعید نے کہا کہ میں نے چیئرمین پی ٹی آئی، بشریٰ بی بی کے دونوں نکاح پڑھائے ہیں،عدالت نے کہا کہ اگر جھوٹی گواہی عدالت میں دی جائےتو اس کی کیا دین میں حیثیت ہے؟مفتی سعید نے کہا کہ طلاق ثالثہ نہ لکھیں، طلاق ثالث لکھیں ورنہ لوگ ہنسیں گے،عدالت نے کہا کہ لوگ تو اور بھی بہت سی باتوں پر ہنس رہے ہیں، مفتی سعید کا مکمل بیان عدالت میں قلمبند ہوگیا

بشریٰ بی بی کے کہنے پر عمران خان نے ریحام خان کو طلاق دی تھی،عون چودھری
عون چوہدری کمرہ عدالت میں پہنچ گئے،عون چوہدری کا بیان عدالت میں قلمبند ہونا شروع ہو گیا.عون چودھری نے کہا کہ میں 45 سال کا ہوں، قوم گجر ہے، استحکام پاکستان پارٹی کا سیکرٹری ہوں،میں چیئرمین پی ٹی آئی کا سیاسی اور پرائیویٹ سیکرٹری تھا،میں چیئرمین پی ٹی آئی کے ساتھ نہایت قریب تھا،میں چیئرمین پی ٹی آئی کی آنکھیں اور کان تھا،میں چیئرمین پی ٹی آئی کے سیاسی اور زاتی معاملات بھی دیکھتاتھا،میں چیئرمین پی ٹی آئی کی فیملی کے معاملات بھی دیکھتاتھا،نومبر 2015 میں ریحام خان کے ساتھ چیئرمین پی ٹی آئی کی طلاق ہوئی،ریحام خان کو طلاق دینے کے حوالے سے چیئرمین پی ٹی آئی نے بشریٰ بی بی سے تجویز لی،بشریٰ بی بی کے کہنے پر چیئرمین پی ٹی آئی نے ریحام خان کو طلاق دی،چیئرمین پی ٹی آئی نے ریحام خان کو بذریعہ ای میل طلاق دی،ریحام خان بیرون ملک تھیں جب چیئرمین پی ٹی آئی نے طلاق دی،چیئرمین پی ٹی آئی کافی پریشان ان دنوں دکھائی دےرہےتھے،چیئرمین پی ٹی آئی اپنے ازدواجی تعلقات کے حوالے سے پریشان رہتےتھے،چیئرمین پی ٹی آئی اکثر کہتےتھے کہ بشریٰ بی بی کے پاس لے جاؤ تاکہ روحانی سکون حاصل ہو،میں بھی بشریٰ بی بی کے پاس لے کر جاتاتھا، چیئرمین پی ٹی آئی خود بھی جاتےتھے،31 دسمبر 2017 کو چیئرمین پی ٹی آئی نے مجھےکہا بشریٰ بی بی کو لاہور لے کر جاناہے،چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا بشریٰ بی بی کے ساتھ نکاح کے انتظامات کرو،میں حیران ہوگیا کیونکہ بشریٰ بی بی تو پہلے سے شادی شدہ ہیں،چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا بشریٰ بی بی کو طلاق ہو چکی،یکم جنوری 2018 کو میں، زلفی بخاری لاہور گئے،مفتی سعید نے ڈیفینس لاہور میں بشریٰ بی بی کا نکاح چیئرمین پی ٹی آئی کے ساتھ پڑھایا،میں چیئرمین پی ٹی آئی، بشریٰ بی بی کے نکاح کا گواہ ہوں،میرے سامنے مفتی سعید نے بشریٰ بی بی سے ہوچھا تو بشریٰ نے بتایا مجھے طلاق ہو چکی،بشریٰ بی بی نے کہا شرعی لوازمات پورے ہیں، نکاح پڑھا دیاجائے،میڈیا پر آگیا کہ چیئرمین پی ٹی آئی کی بشریٰ بی بی سے شادی ہو چکی،میڈیا پر معلوم ہوا کہ دوران عدت نکاح ہوا، ہم نے خاموشی اختیار کی،چیئرمین پی ٹی آئی ، بشریٰ بی بی کا فروری میں دوبارہ نکاح پڑھایا گیا،میڈیا پر شور مچا کہ دوران عدت چیئرمین پی ٹی آئی، بشریٰ بی بی کا نکاح ہوا،چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا خاموشی اختیار کریں، عدت پوری ہونے کے بعد دوبارہ نکاح کرلیں گے،بشریٰ بی بی نے مجھے بتایا عدت 14 سے 18 فروری کے درمیان پوری ہورہاتھی،دوسرا نکاح بنی گالا میں فروری 2018 میں زبانی پڑھایاگیا، میں موجود تھا،چیئرمین پی ٹی آئی، بشریٰ بی بی کے نکاح کی ریکارڈنگ بھی موجود ہے،میں اور زلفی بخاری دونوں دوسرے نکاح کے گواہ تھے،چیئرمین پی ٹی آئی بشریٰ سے شادی کرنا چاہتےتھے،چیئرمین پی ٹی آئی نے مجھے کہا بشریٰ سے نکاح ہوا تو وزیراعظم بن جاؤں گا،پہلا نکاح دوران عدت جان بوجھ کر چیئرمین پی ٹی آئی، بشریٰ بی بی نے کیا،چیئرمین پی ٹی آئی ، بشریٰ بی بی کا پہلا نکاح پیشگوئی کے زیر اثر تھا،بشریٰ بی بی ، چیئرمین پی ٹی آئی کا پہلا نکاح غیرشرعی، غیرقانونی اور فراڈ پر مبنی تھا، عون چوہدری نے اپنا بیان عدالت میں قلمبند کروادیا

بشری نے بچوں سے نہ ملنےدیا، کیا شرط رکھی؟ خان کیسے انگلیوں پر ناچا؟

ہوشیار،بشری بی بی،عمران خان ،شرمناک خبرآ گئی ،مونس مال لے کر فرار

بشریٰ بی بی، بزدار، حریم شاہ گینگ بے نقاب،مبشر لقمان کو کیسے پھنسایا؟ تہلکہ خیز انکشاف

تحریک انصاف میں پھوٹ پڑ گئی، فرح گوگی کی کرپشن کی فیکٹریاں بحال

عمران خان، تمہارے لئے میں اکیلا ہی کافی ہوں، مبشر لقمان

عمران ریاض کو واقعی خطرہ ہے ؟ عارف علوی شہباز شریف پر بم گرانے والے ہیں

واضح رہے کہ تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کا تیسرا نکاح پڑھانے والے مفتی سعید نے کہا تھا کہ اگر بشریٰ بی بی نے عدت میں نکاح پر توبہ نہیں کی تو تجدید ایمان کرنی چاہیے،مفتی محمد سعید خان نے عمران خان کے بشریٰ بی بی سے نکاح کے بارے میں کہا کہ ان کے عمران خان سے دو نکاح ہوئے تھے کیونکہ ان کا پہلا نکاح عدت کے دوران ہوا اور اس نکاح کو نکاح فاسد کہا جاتا ہےعدت مکمل ہونے کے بعد عمران خان کا بشریٰ بی بی سے دوسرا نکاح ہوا، مجھے عون چوہدری کے ذریعے علم ہوا کہ عمران خان کا بشریٰ بی بی سے نکاح عدت کے دوران ہوا جس پر میں نے ان کو کہا کہ نکاح دوبارہ ہوگا

 اسلامی شرعی احکامات کا مذاق اڑانے پر عمران نیازی کے خلاف راولپنڈی میں ریلی نکالی

ویڈیو آ نہیں رہی، ویڈیو آ چکی ہے،کپتان کا حجرہ، مرشد کی خوشگوار گھڑیاں

خاور مانیکا انٹرویو اور شاہ زیب خانزادہ کا کردار،مبشر لقمان نے اندرونی کہانی کھول دی

ریحام خان جب تک عمران خان کی بیوی تھی تو قوم کی ماں تھیں

خاور مانیکا کے انٹرویو پر نواز شریف کا ردعمل

واضح رہے کہ سابق وزیراعظم عمران خان کی اہلیہ بشریٰ بی بی کے سابق شوہر خاور فرید مانیکا عمران خان اور بشری بی بی پر پھٹ پڑے، خاور مانیکا رہائی کے بعد اہم انکشافات سامنے لے آئے، بشریٰ بی بی کے کرتوت عیاں کر دیئے تو وہیں ریاست مدینہ کا نام لے کر پاکستان میں حکومت کرنیوالے عمران خان کا کچہ چٹھہ بھی کھول دیا،

جیو ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے خاور مانیکا کا کہنا تھاکہ عمران خان میری مرضی کے بغیر میرے گھر آتا تھا، پنکی کی اس سے ملاقاتوں پر میں ناراض تھا، ایک بار عمران میرے گھر آیا تو میں نے نوکر کی مدد سے اسے گھر سے نکلوا دیا، عمران خان کے اسلام آباد میں دھرنوں کے دوران بشریٰ کی بہن مریم وٹو نے بشریٰ کی ملاقات عمران خان سے کرائی، ہماری شادی 28 سال چلی، ہماری بہت خوش گوار زندگی تھی لیکن عمران نے پیری مریدی کی آڑ میں ہمارا ہنستا بستا گھر برباد کر دیا اسلام آباد میں عمران خان اور بشریٰ بی بی کی ملاقاتیں شروع ہو گئیں. میری والدہ کہتی تھیں کہ عمران خان اچھا آدمی نہیں، اسے گھر میں نہ آنے دیا کرو، رات کے وقت دونوں کی فون پر لمبی لمبی باتیں ہونے لگیں،

Leave a reply