خیبر پختونخواہ نے کراچی کا ریکارڈ توڑ دیا،سالانہ پونے چھ ارب کی بجلی چوری

0
60

خیبر پختونخواہ نے کراچی کا ریکارڈ توڑ دیا،سالانہ پونے چھ ارب کی بجلی چوری
خیبر پختونخواہ میں پچھلے سال پونے چھ ارب روپے کی بجلی چوری ہوئی ضلع بنوں 72 فیصد کے ساتھ سرفہرست اور مردان دوسرے نمبر پر رہا

خبر رساں ادارے دی نیوز میں شائع ہونے والی ایک رپورٹ کے مطابق ہری پور میں سب سے کم بجلی چوری ہوئی، پشاور الیکٹرک سپلائی کمپنی (پیسکو) نے گزشتہ مالی سال کے دوران پاور ڈویژن سے 15،305.3 ملین روپے کی بجلی وصول کی لیکن اپنے صارفین سے 9،607.7 ملین روپے وصول کیے۔ اس طرح گزشتہ مالی سال کے دوران قومی خزانے کو 37.2 فیصد کا نقصان ہوا۔ بجلی چوروں نے پیسکو کو تقریبا (12.93 ارب روپے) کا مجموعی نقصان پہنچایا ہے۔

پیسکو کے سی ای او محمد جبار خان پرامید ہیں کہ یوٹیلیٹی کمپنی اور صوبائی حکومت کی مشترکہ کوششوں سے موجودہ سال میں بجلی کی چوری کم ہو جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت پیسکو کی بجلی چوروں کے خلاف جاری مہم کی مکمل حمایت کر رہی ہے اور ہمیں صوبائی حکومت کی مکمل حمایت حاصل ہے۔ بجلی چوروں کو پکڑنے کے لیے خصوصی اینٹی چوری تھانے قائم کیے گئے ہیں۔خیبر پختونخواہ میں بجلی چوری، کنڈوں سے کی جاتی ہے، حکام کا کہنا ہے کہ اب کاروائی ہو گی اور کنڈا کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا

مجھے کیوں نکالا…..کس کس جماعت کو پی ڈی ایم سے نکال دیا گیا؟

سینیٹ اجلاس ،پہلے خطاب میں یوسف رضا گیلانی کا حکومت کا ساتھ دینے کا اعلان،مولانا، مریم پریشان

سینیٹ میں خفیہ کیمرے لگنے پر چیئرمین سینیٹ کا بڑا اعلان،ن لیگ کے مطالبے پر پی پی کا ہنگامہ

آپ ایوان کا ماحول ٹھیک کرائیں، زبان ہمارے پاس بھی ہے،سینیٹ میں گرما گرمی

بلاول میرا بھائی کہنے کے باوجود مریم بلاول سے ناراض ہو گئیں،وجہ کیا؟

ندیم بابر کو ہٹانا نہیں بلکہ عمران خان کے ساتھ جیل میں ڈالنا چاہئے، مریم اورنگزیب

وزراء کی سینیٹ سے غیر حاضری،چیئرمین سینیٹ برہم،اپوزیشن کے نعرے

دی نیوز میں شائع ہونے والی رپورٹ کے مطابق دستیاب سرکاری اعداد و شمار کے مطابق ، ضلع بنوں کے صارفین نے 645.5 ملین روپے بجلی استعمال کی ہے اور صرف 180.3 ملین روپے ادا کیے ہیں۔ پیسکو کو گذشتہ مالی سال کے دوران 72.1 فیصد کی اوسط کے ساتھ 465.2 ملین روپے کے نقصان کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

مردان کودو حصوصن میں تقسیم کیا گیا ، نرم علاقے کو 1235.2 روپے اور مشکل کو 77.0 ملین روپے کی بجلی ملی۔ پیسکو نے صرف 750 روپے اور 22.7 ملین بل وصول کیے ، جس کی وجہ سے سخت علاقے میں 70.6 فیصد اور نرم علاقے میں 39.3 فیصد نقصان ہوا۔ ضلع لکی ، کرک اور چارسدہ میں 64 فیصد بجلی چوری ہے۔ چارسدہ نے 784.8 ملین روپے کی بجلی وصول کی اور 282.3 ملین کی ادائیگی کی۔ پیسکو کو گزشتہ مالی سال کے دوران 502.5 ملین روپے کا نقصان ہوا۔

ضلع لکی نے 353.3 ملین روپے کی بجلی کے مقابلے میں صرف 125.8 روپے ادا کیے اور قومی خزانے کو 227.5 ملین روپے کا نقصان پہنچایا۔ اسی طرح ، کرک نے 2333.4 ملین روپے کی بجلی استعمال کی ہے لیکن اس نے 83.9 روپے کی رقم ادا کی اور 149.5 ملین روپے کا نقصان پہنچایا۔

بجلی چوری کیخلاف مہم، کتنے ہزارمقدمات،کتنی وصولی ہوئی؟ باغی ٹی وی کی خصوصی رپورٹ

Leave a reply