فیمنزم صرف برابری ہے میں میرا جسم میری مرضی نعرے پر متفق نہیں سونیا حسین

پاکستان کی نامور اداکارہ سونیا حسین نے کہا کہ میں ہر سال 8 مارچ کو منعقد ہونے والے ایونٹ عورت مارچ اور اس میں لگائے نعروں کے حق میں نہیں

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سونیا حسین نے گزشتہ روز اے آر وائے کے میزبان وسیم بادامی کے ایک شو معصومانہ کھیل میں شرکت کی جس میں انٹر ویو کے دوران اداکارہ نے کہا کہ یں ہر سال 8 مارچ کو منعقد ہونے والے ایونٹ عورت مارچ اور اس میں لگائے نعروں کے حق میں نہیں

پروگرام کے میزبان نے اداکارہ سے پوچھا کہ آپ نے کہا تھا میرے پاس تم ہو میں عائزہ خان کا کردار پہلے آپ کوآفر کیا گیا تھا کیا یہ سچ ہے؟

اس پر اداکارہ نے کہا کہ کہ ویسے جو پروجیکٹ میں نے نہیں کیا تو اس پر بات کرنا اچھا نہیں لگتا اور ہمایوں سعید اور ندیم بیگ نے ایسے کسی کے پوچھنے پررینڈملی میرا نام لیا تھا انہوں نے کہا عائزہ نے مہوش کا کردار بخوبی نبھایا ہے

وسیم بادامی کے آئٹم سانگ کے بارے میں پوچھے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے سونیا نے کہا کہ اداکارہ کا کہنا تھا کہ لوگ آئٹم سانگز فلموں میں دیکھنا چاہتے ہیں اور اس میں کوئی مسئلہ نہیں لیکن اگر ان سے پوچھا جائے تو وہ خود شاید کبھی کسی آئٹم سانگ نہیں کریں گی انہوں نے کہا کہ عورت کو زیادہ سیکشولائز نہیں کرنا چاہیئے اد کے علاوہ بھی خواتین بہت کچھ کر سکتی ہیں

وسیم بادامی نے ایواراڈ سسٹم کے بارے میں سوال پوچھا کہ وہ جینوئن ہے یا فراڈ ہی ہے بڑا زبردست ہے میرٹ پر ملتے ہیں ؟

اس کا جواب انہوں نے دینے سے معذرت کی لیکن انہوں نے کہا کہ ساری دنیا میں ایوارڈ سسٹم ایک جیسا ہی ہے

انٹرویو کے دوران اداکارہ سے وسیم بادامی نے یہ سوال کیا کہ انہوں نے کہا تھا کہ وہ فیمنسٹ ہیں تو اس کا مطلب بھی بتائیں؟

اس پر سونیا حسین کا کہنا تھا کہ فیمنزم کو لوگ عموماً غلط سمجھتے ہیں لوگ سمجھتے ہیں کہ میں فیمنسٹ ہیں تو مردوں سے نفرت کرتی ہوں گی لیکن ایسا نہیں ہے فیمنزم صرف برابری ہےعورت اور مرد دونوں کے حقوق پر بات کرنی ہے

علی ظفر کے خلاف ٹویٹس کرنے پر خاتون بلاگر و سوشل میڈیا ایکٹیوسٹ نے معذرت کر لی


8 مارچ کو عورت مارچ کے دوران کئی فیمنسٹ خواتین اپنی روٹی خود بناؤ اور اپنا کھانا خود گرم کرو جیسے سلوگن لےکر سامنے آئی تھیں اس حوالے سے سونیا حسین نے کہا کہ اگر عورت گھر میں کھانا بنا سکتی ہے تو مرد بھی بنا سکتا ہے لیکن یہ روٹی والا جو نعرہ بنایا گیا تھا میں اس کے حق میں بالکل نہیں

اداکارہ نے بتایا کہ میں عورت مارچ میں لگائے نعروں سے میں بالکل اتفاق نہیں کرتی میرا خیال ہے کہ جب آپ کسی چیز کو لےکر حد سے بڑھ جائیں تو پھر ایسا ہی کرتے ہیں

اس موقع پر وسیم بادامی نے عورت مارچ میں لگائے ایک نعرے میرا جسم میری مرضی کے بارے میں بھی سوال کیا جو سوشل میڈیا پر کافی مقبول ہوا تھا

اس پر سونیا حسین نے کہا کہ میں اس بات سے بھی اتفاق نہیں کرتی زندگی میں کچھ باتیں اہم ہوتی ہیں اور وہ صرف خواتین کے لیے نہیں مردوں کے لیے بھی یقیناً اہم ہوں گی

بھارتی گلوکار سونو نگم بھی میرے پاس تم ہوکے سحر سے بچ نہیں پائے


انٹرویو کے دوران وسیم بادامی نے سوال کیا کہ ہراسانی شوبز انڈسٹری کی تلخ حقیقت ہے یا اس کو کچھ زیادہ بڑھا چڑھا کر بتایا جارہا ہے؟

اس پر ان کا کہنا تھا کہ میں نے کبھی جنسی ہراسانی کا سامنا نہیں کیا لیکن ہوسکتا ہے کہ کچھ لڑکیوں کو اس کا سامنا کرنا پڑا ہو

سونیا حسین اس وقت ٹچ بٹن نامی فلم میں کام کررہی ہیں اس فلم میں ان کے ہمراہ فرحان سعید، فیروز خان اور ایمان علی نے اہم کردار نبھائے فلم عیدا لفطر کے موقع پر ریلیز کی جائے گی

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.